مقبول خبریں
کشمیر سالیڈیرٹی کیلئے یکم فروری سے 11فروری تک تقریبات منعقد کرائی جائیں گی
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
وزیر اعظم عمران خان اوورسیز کو تمام سہولیات دینے کے لئے پر عزم ہیں:چوہدری محمد سرور
مانچسٹر:برطانیہ آکر اور پاکستانی کمیونٹی سے مل کر ہمیشہ خوشی ہوتی ہے ۔جب بھی کوئ حکومت برسرِ اقتدار آتی ہے تو بیرون ملک بسنے والے ہم وطنوں کے مسائل حل کرنے کا نعرہ لگاتی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے ممبر یورپین پارلیمنٹ ڈاکٹر سجاد حیدر کریم،مسرت چوہدری چیف ایگزیکٹو لعل قلعہ گروپ،ڈاکٹر محمد طارق چوہان کی جانب سے لعل قلعہ ریسٹورانٹ ہال میں رکھی گئی استقبالیہ تقریب کے دوران کیا۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ اوورسیز پاکستانیوں کی زمینوں پر قبضہ کیا جاتا اور ہمارے عدالتی نظام میں خرابیاں ہونے کی وجہ سیے انہیں فی الفور انصاف نہیں ملتا ۔ عدالت سے رجوع کر کے کیس کو التوا میں ڈالا جاتا ہے اس بارے قانون میں ترامیم کی ضرورت ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ اورسیز کمیشن فعال ہو چکا ہے ۔ جج صاحبان نے بھی حکم صادر فرمایا ہے کہ ایسے کیسز کو چھ ماہ کے اندر نمٹایا جائے۔ ان کا کہنا تھا کہ برطانیہ کے ساتھ پاکستان کے دوستانہ اور اچھے تعلقات ہیں یورپین یونین سے نکلنے کی صورت میں بھی برطانیہ کے ساتھ تجارتی تعلقات مزید مستحکم ہوں گے ۔ ان کا کہنا تھا کہ ہماری خارجہ پالیسی مضبوط ہونے کی وجہ سے یورپین یونین سے تعلقات پر اثر نہیں پڑے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ میں مانتا ہوں کہ ہماری حکومت پہلے سو دنوں اوورسیز کی توقعات پر پورا نہیں اتر سکی لیکن وزیر اعظم عمران خان اوورسیز کو تمام سہولیات دینے کے لیے پر عزم ہیں جلد اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ کرتار پور بارڈر کھول کر حکومت پاکستان نے بھارت کو خیر سگالی کا پیغام دیا ہے اور اس سے تجارت کو فروغ ملنے کے ساتھ روزگار میں اضافہ ہو گا اس کا موازنہ کشمیر کے بارڈر سے نہ کیا جائے۔ڈاکٹرسجاد حیدر کریم کا کہنا تھا کہ یورپین یونین سے برطانیہ کے انخلاء سے پاکستان ایک مضبوط وکیل سے مرحوم ہو جائے گا ۔ان کا مذید کہنا تھا کہ جی ایس پی پلس کے معاہدے کی وجہ سے یورپین یونین پاکستان سے درآمدات میں اضافہ نہیں ہوا لیکن جرمنی اور آسٹریا نے پاکستان سے درآمدات میں تیس فیصد اضافہ کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ میں پچھلے پندرہ سالوں سے یورپین پارلیمنٹ کا ممبر ہوں برطانیہ نے یورپین پارلیمنٹ میں ہمیشہ پاکستان کے مفادات کا دفاع کیا برطانیہ کے انخلاء کے بعد خلا پیدا ہو گا اسے پورا کرنے کے لیے یورپین اور پاکستانی کاروباری حضرات ٹیکسٹائل سے ہٹ کر دوسری صنعتوں میں برآمدات اور درآمدات کو بڑھائیں۔ تلاوت قرآن پاک کا شرف ڈاکٹر یونس پرواز کو حاصل ہوا۔ لعل قلعہ گروپ کے چیف ایگزیکٹو مسرت چوہدری نے مہمانوں کا دلی شکریہ ادا کیا جنہوں نے انتہائی مختصر وقت کے نوٹس پر دعوت کو قبول کیا اور شامل ہوئے ۔ انہوں نے گورنر چوہدری محمد سرور سے اوورسیز کے مسائل کو ترجیح بنیادوں پر حل کرنے کی درخواست بھی کی۔ تقریب میں انیل مسرت ،صاحبزادہ جہانگیر، سید باسط شاہ مشوانی، راجہ نعیم نواز، رانا عبدالستار، بیرسٹر عامر، عدیل سلیم، شہزاد چوہدری، سیاسی سماجی اور کاروباری شخصیات نے شرکت کی۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر