مقبول خبریں
پاکستان پریس کلب برطانیہ یارکشائیر ریجن کا سہیل وڑائچ کے اعزاز میں استقبالیہ
پاکستان اور بھارت میں واقعی برابری کہاں ؟ ایک طرف محبت دوسری طرف نفرت
پاکستانی نژاد پیشہ ورانہ ماہرین اور طلبہ جہاں بھی ہوں اقدار کی پاسداری کریں: نفیس زکریا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
حلقہ ِ ارباب ِ ذوق کے ادبی پروگرام میں پاکستانیوں اور کشمیری کونسلرز کی بڑی تعداد میں شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
قومی برطانوی انتخابات میں کشمیر دوست امیدواران کو ووٹ دینے بارے آگاہی میٹنگ
سہمے ہوئے لوگوںسے بھی خائف ہے زمانہ
پکچرگیلری
Advertisement
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
برمنگھم:یورپی پارلیمنٹ میں برطانوی ممبران کی کاوشوں سے مسئلہ کشمیر روشناس ہوا مگر برطانیہ کے یورپ سے اخراج پر مسئلہ کشمیر پر لابی کیلئے دیگر27ممالک پر توجہ دینی ہو گی اور یورپ میں بسنے والے کشمیریوں کو بھی اپنا کردار منظم ہو کر ادا کرنا پڑے گا،یورپی یونین میں بھی جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کا دائرہ کار بڑھایا جا رہا ہے اور مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کو یورپ کے ہر ایوان میں اٹھانے اور یورپی پارلیمنٹ کے برطانوی ارکان کی صلاحیتوں سے بھی استفادہ لیا جائے گا،تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل مقبوضہ کشمیر کی قیادت اور آزاد کشمیر کی منتخب حکومت کی مشاورت اور معاونت سے عالمی سطح پر تحریکی سرگرمیاں جاری رکھے گی،یورپی پارلیمنٹ میں دس سال بعد ہونے والی سماعت واجد خان ایم ای پی کا تاریخی کارنامہ ہے جس پر پوری کشمیری قوم انکی مشکور ہے،برطانوی کشمیریوں اور مقبوضہ کشمیر کے حریت لیڈروں کی واجد خان ایم ای پی سے برمنگم میں خصوصی نشست،مستقبل کا لائحہ عمل طے کیا گیا جبکہ حکومت پاکستان کی طرف سے کشمیریوں کے حق میں چلائی جانیوالی مہم کا خیر مقدم کیا،یورپی پارلیمنٹ میں فارن آفیسرز اور انسانی حقوق کمیٹی کے ممبر واجد خان ایم ای پی نے آزاد کشمیر سے آئے ہوئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں عبدالحمید لون اور اعجاز احمد رحمانی کے اعزاز میں عشائیے کا اہتمام کیا جس میں عالمی سطح پرکام کرنے والے کشمیری رہنمائوں نذیر احمد قریشی،راجہ نجابت حسین،محمد اعظم،ہیری بوٹا،عبدالوہاب قادری اور عرفان طاہر تے یورپی پارلیمنٹ میں2019میں مسئلہ کشمیر پر لابی اور بریگزیٹ کی وجہ سے مسئلہ کشمیر پر پڑنے والے اثرات پر تفصیلی گفتگو کی گئی،واجد خان ایم ای پی نے کہا کہ انہوں نے اپنے مختصر دور میں جہاں تحریک حق خود ارادیت کے چیئرمین راجہ نجابت حسین کی دعوت پر آزاد کشمیر کا تفصیلی دورہ کیا بلکہ پاکستان میں تین بار جا کر وہاں کی بھی سیاسی اور سفارتی قیادت سے مکمل مشاورت کی اور حریت کانفرنس کے نمائندوں،مہاجرین اور آزاد کشمیر کے تمام سیاسی لیڈروں سے ملاقاتیں کر کے مسئلہ کشمیر کو اسکے حقیقی تناظر میں سمجھا اور جنیوا،نیو یارک جا کر اپنی پارلیمانی کمیٹی کے چیئرمین کو تیار کیا کہ ہم ایک غیر جانبدار ادارے کی حیثیت سے برصغیر میں پائیدار امن کیلئے اپنا کردار ادا کریں تاکہ بھارت اور پاکستان نہ صرف آپس کی لڑائیوں سے بچ سکیں بلکہ ڈیڑھ کروڑ کشمیری عوام کو بھی انکے حقوق مل سکیں اور خصوصاً مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی مسلسل خلاف ورزیوں کو بند کروایا جا سکے اور ہماری کاوشوں سے فروری کے تیسرے ہفتے میں ایک ایسی غیر جانبدار سماعت ہو گی جس میں پوری ریاست کے عوام کے انسانی حقوق کا احاطہ کر کے اقوام متحدہ کی انسانی کونسل کے کمشنر اور برطانوی پارلیمنٹ میں آل پارٹیز کشمیر گروپ کی رپورٹ کی طرح ایک مفصل رپورٹ مرتب کی جائے گی تاکہ یورپی یونین کے28ممالک کی حکومتوں کو سفارشات پیش کر کے اس مسئلے کے دائمی حل کی طرف پیش رفت کی جا سکے،انہوں نے اس موقع پر جہاں تحریکی عہدیداروں کی کاوشوں اور رابطوں کوخراج تحسین پیش کیا،حریت لیڈر شپ کی مسلسل جدو جہد اور مقبوضہ کشمیر کے عوام کو یقین دلایا کہ یورپ کے ہر ایوان میں آپ کی آواز پہنچانے کیلئے برطانیہ بھر میں کشمیر دوست ارکان اپنا کردار ادا کر رہے ہیں اور کشمیریوں کواپنے تمام حقوق ملنے تک ان کی جدو جہد میں معاونت جاری رکھیں گے،اس موقع پر حریت کانفرنس رہنمائوں اور تحریکی عہدیداروں نے ماجد خان کی کاوشوں اور حالیہ کامیابی پر مبارکباد پیش کی اور شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اگلا سال ہم نے خصوصی طور پریورپی کشمیریوں اور کشمیر دوست ارکان پارلیمنٹ کو ہمنوا بنانے کا پروگرام ترتیب دیا ہے جس پر ہم مقبوضہ کشمیر میں مشترکہ مزاحمتی قیادت سے بھی مشاورت اور معاونت جاری رکھیں گے اور برطانیہ بھر میں بھی مشترکہ مقاصد کیلئے ہر تنظیم سے بھرپور تعاون کریں گے،اس موقع پر تحریک کے چیئرمین راجہ نجابت حسین5جنوری سے شروع ہونیوالی تحریکی سرگرمیوں سے بھی واجد خان سے مشاورت کی۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر