مقبول خبریں
روٹری کلب کے راہنما ڈاکٹر سہیل قریشی کے اعزاز میں سماجی کمیونٹی شخصیت چوہدری محمود کا استقبالیہ
پاکستان سے آئے وکلا کے اعزاز میں ورلڈ وائیڈ سالیسٹرز کے ڈائیریکٹر محمد اشفاق کا استقبالیہ
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
سابق صدر پی ٹی آئی یارکشائر اینڈ ہمبر ریجن طاہر ایوب خواجہ کا اپنی رہائش گاہ پر محفل کا انعقاد
بے نظیر بھٹو: چراغ بجھ گیا لیکن روشنی زندہ ہے
پکچرگیلری
Advertisement
نانا پاٹیکر نے جنسی طور پر ہراساں کیا، بولی وڈ اداکارہ تنوشری دتہ کا الزام
ممبئی: بولی وڈ اداکارہ تنوشری دتہ نے معروف اداکار نانا پاٹیکر پر انہیں ایک شوٹنگ کے دوران جنسی طور پر ہراساں کرنے کا الزام عائد کردیا۔ ایک شو کے دوران تنوشری دتہ نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ 2008 میں ایک فلم کی شوٹنگ کے دوران ان کے ساتھ برا سلوک کیا گیا تھا۔ اداکارہ تنو شری دتہ نے بھارتی میڈیا کو ایک انٹرویو دیتے ہوئے بتایا کہ وہ 2008 میں ایک فلم کی شوٹنگ پر موجود تھیں جس میں نانا پاٹیکر بھی شامل تھے۔انہوں نے بتایا، ’میں نام لے کر بتانا چاہتی ہوں کہ نانا پاٹیکر فلم کی شوٹنگ کے پہلے ہی دن میرے ساتھ غلط طرح سے پیش آئے تھے، یہاں تک کہ میرے سولو گانے کی شوٹنگ کے وقت بھی انہوں نے ساتھ ڈانس کرنے کی شرط رکھی‘۔تنوشری دتہ نے انٹرویو کے دوران بتایا کہ نانا پاٹیکر نے زور زبردستی کرکے ان کے ساتھ ڈانس کیا جس کی شکایت انہوں نے فلم کے پروڈیوسر اور ڈائریکٹر سے بھی کی لیکن دونوں نے کان نہیں دھرے۔ اداکارہ کا یہ بھی کہنا تھا کہ نانا پاٹیکر دیگر اداکاراؤں کو بھی ہراساں کر چکے ہیں اور ان کے ساتھ غیر اخلاقی طریقے سے بھی پیش آچکے ہیں۔تنوشری دتہ کا کہنا تھا کہ نانا پاٹیکر کی حقیقت سے ہر کوئی واقف ہے لیکن کسی کی اتنی ہمت نہیں کہ وہ ان کی سچائی سب کے سامنے لائے، وہ جب بھی کسی نئی اداکارہ کو دیکھ لیتے ہیں تو پھر اخلاقیات کے دائرے کو بھول جاتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ می ٹو مہم کبھی بالی وڈ نہیں پہنچ سکتی، کیونکہ یہاں اداکاراؤں کو جنسی طور پر ہراساں کیا جاتا ہے۔