مقبول خبریں
موومنٹ فار دی رائٹس اوورسیز پاکستانیز کے زیر اہتمام ڈوئل نیشنل کو عزت دو بارے تقریب کا اہتمام
پاکستان مادر وطن ہے اسکی حفاظت ہمارا فرض اولین ہے: ڈی جی آئی ایس پی آر آصف غفور
دورے پرحکومت پاکستان،حکومت آزاد کشمیر اور راجہ نجابت کی معاونت کے مشکور ہیں:کرس لیزے
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
یورپ میں مسئلہ کشمیر کو مزید تیزی سے اجاگر کیا جائے گا: تحریک حق خودارادیت
زمین پر دیوار چین
پکچرگیلری
Advertisement
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
سلائو: پیرس فرانس میں آکاس انٹرنیشنل کا پہلا کامیاب یورپین فیملی فنگشن جس میں پروگرام مینجمنٹ کمیٹی کے ارکان اور برطانیہ کے مختلف شہروں جن میں Reading, Woking, Birmingham, Sheffield اور Ireland سے وفود اور حکومتِ آزادکشمیر کی نمائندگی کی غرض سے مہمانِ خصوصی وزیر حکومتِ آزاد کشمیر جناب چوہدری محمد سعید صاحب تاریخ اور وقتِ مقررہ سے پہلے ہی پیرس پہنچ چکے تھے ۔ وقتِ مقررہ پر رجسٹریشن شروع ہونے کے ساتھ ہی تمام لوگوں کو ایک دوسرے کے ساتھ ملنے جلنے اور Social Networking کے لیے کافی وقت دیا گیا ۔ خواتین کی نشست ایک الگ حال میں رکھی گہی تا کہ وہ پوری آزادی سے خوش گپیوں میں مصروف رہیں اور اپنی نئ سہیلیوں کی لسٹ میں خاطر خواہ آضافہ فرماسکیں اسطرح تمام لوگوں کے پہنچنے پر le Diplomate کے خوش ذائقہ کھانوں اور مشروبات سے حاضرین کی تواضح کی گئ ۔ اختتامِ طعام کے بعد پروگرام کا باقاعدہ آغاز مینجمنٹ کمیٹی کے چیرمین جناب قاضی نثار احمد قریشی صاحب کی تلاوتِ قران مجید فرقانِ حمید اور اس کے ترجمے سے ہوا ۔اس کے بعد آکاس انٹرنیشنل کے کنوینیر کونسلر راجہ محمد الیاس ایڈووکیٹ نے فراہضِ نظامت ادا کرتے ہوے تمام حاضرین کا شکریہ ادا کیا اور پاکستان کے قومی ترانے کے احترام میں کھڑے ہونے کی گزارش کی جس پر تمام حاضرین نے کھڑے ہو کر نہ صرف قومی ترانہ سنا بلکہ سب نے مل کر باجماعت پڑ تے ہوے ایک روح پرور ماحول قاہم کر دیا ۔ جس کے بعد سٹیج سیکرٹری نے مختصراؐ تنظیم کے اغراض و مقاصد جن میں مسلہ کشمیر کے منصفانہ حل کے لیے حقِ خودآرادیت کی بنیاد پر موثر لابی، کشمیر میں غریب، یتیم، بیوگان اور نادار لوگوں کے لیے الفلاح فاونڈیشن ٹرسٹ میرپور کے زیر انتظام طبعی سہولیات کا مہیا کیا جانا اور مستحق ذھین بچوں کے لیے دو ھزار روپیہ ماہانہ سکالر شپ سکیم کے اجراء کا تزکرہ اور یورپ میں بسنے والے لوگوں کے سماجی مساہل پر ہمدردانہ غوروفکر کا تذکرہ کیا ۔ اس کے بعد برطانیہ سے تشریف لاے ہوے پروگرام کواڈینیٹر جباب چوہدری صابر حسین صاحب مینجنگ ڈاہیریکٹر شیراز ھومز کو دعوتِ خطاب دی گئ تو انہون نے کہا کہ یورپ میں بسنے والے ہم تمام لوگ اس اعتبار سے انتہائ خوش نصیب ہیں کہ قدرت نے ہم میں سے ہر ایک پر یہ کرم و فضل کر رکھا ہے کہ ہمیں ذاتی طور پر کوہی مالی پریشانی نہیں ہے اور ہمیں اس بات کا بھی خیال رکھنا چاہیے کہ وطنِ عزیز میں ہمارے بہن بھای عزیز و عقارب رشتہ دار یا تعلق داروں اور حاجت مندوں کی کس طرح معاونت کر سکتے ہیں اور یہی فرمانِ خداوندی ہے اسی لیے ہم تنظیم کے اس پیغام کو یورپ بھر میں پہنچانے کا آرادہ رکھتے ہیں ان کی اس بات سے مکمل اتفاک کرتے ہوے دیگر تمام برطانوی وفود جن میں جناب راجہ سخاوت خان صاحب جناب نذیر احمد ڈار صاحب، جناب چوہدری محمد رشید صاحب اور جناب رشید احمد قریشی صاحب، کراچی سے تشریف لاے ہوے جناب عامر بخاری صاحب اور دیگر مقررین نے اپنا اپنا وقت جناب مہمانِ خصوصی کے لیے مختص کر دیا ۔ جس پر مہمانِ خصوصی جناب سعید صاحب کو دعوتِ خطاب دی گئ تو سب سے پہلے انہون نے تمام حاظرین کا شکریہ اداکیا کہ وہ کافی دہر سے پروگرام میں شامل ہیں اور پھر انہون نے تارکین کے جذبہ حبالوطنی کو سراہتے ہوے انہی بھر پور خراجِ تحسین پیش کیا ۔ اور کہا کہ حکومتِِ آزادکشمیر ان کے لیے ہر ممکنہ سہولیات مہیا کیے جانے کا مصمم آرادہ رکھتی ہے اور میں ذاتی طور پر بھی ہر قسم کے چیریٹی کے کاموں میں ہر وقت معاونت کے لیے حاظر ہوں انہون نے کہا کہ مغرب میں Honesty کو Honor سمجھا جاتا ہے اور ہم جس معاشرے میں رہ رہے ہیں وہاں دیانت داری کو طعنہ سمجھا جاتا ہے جس کی مثال دیتے ہوے انہوں نے بتایا کہ ایک انتہائ قابلِ اعتماد آدارہ جو گذشتہ کہی سالوں سے رضاکارانہ طور پر مصروف عمل ہے اور مستحق لوگوں کی بے لوث خدمت کر رہا ہے( الفلاح فاونڈیشن) کو ایم ڈی اے کی تاریخ میں فلاحی کامو ں کے لیے مختص زمین سب سے مہنگے داموں یعنی سولہ لاکھ فی کنال کے حساب سے دی گہی ہے اسطرح دس کنال کی کل قیمت ایک کروڑ ساٹھ لاکھ بنتی ہے اس کے باوجود منفی سوچ کے حامل لوگ طرح طرح کا پروپیگنڈہ کر رہے ہیں اور رفاعی کاموں میں ہرممکنہ رکاوٹ اور دشواریاں پیدا کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم آذان دیتے رہیں گے اور لوگ حقاہق سے آگاہ ہوتے رہیں گے مہمانِ خصوصی نے میرپور میں بہتر کام کرنے والے کہی آداروں اور ڈاکٹر جمیل میر اور کہی دوسرے مخیر حضرات کی نیک خواہشات کا تذکرہ بھی کیا اور مشورہ دیا کہ الگ الگ کام کرنے کی بجاے سب لوگوں کو مل کر کسی مناسب مرکزی جگہ پر ایک انتہائ معیاری ھسپتال قاہم کرنے کا سوچنا چاہیے ہم انشااللہ العزیز پوری پوری معاونت کریں گے ۔انہوں نے دیگر متعدد معاملات پر بڑی تفصیل سے بات کی اور لوگوں کا پوری دلچسپی سے سننے پر دوبارہ شکریہ ادا کیا ۔ جس کے بعد سوال و جواب کی نشست کے اختتام سے پہلے محترمہ. روحی بانو صاحبہ نے محترمہ غزالہ کیانی، محترمہ عذرا قیصر، مہتاب بانو، صبحیہ نواب شاہ، غذالہ افتخار اور پروگرام میں شامل دیگر لوکل خواتین کی جانب سے برطانیہ سے تشریف لاے ہوے تمام خواتین و حضرات کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ فرانس میں یہ اپنی نوعیت کا پہلا پروگرام جس میں مختلف مکتبہ فکر کے لوگوں کا ایک خوبصورت گلدستہ جو فلواقعہ ہی تعمیری، فلاحی اور اصلاحی کاموں میں مصروف عمل ہے سے مل جل کر دلی خوشی ہوی ہے اور ہماری یہ خواہش رہے گی کہ آپ لوگ پیرس میں پھر تشریف لاہیں تاکہ ہم اس سے بھی بڑھ چڑھ کر انتظامات کر سکیں جس پر آکاس انٹرنیشنل کے کنوینیر کونسلر راجہ محمد الیاس نے اہل فرانس کے خلوص اور جذبے کی داد دی اور انہیں برطانوی وفود کی جانب سے انگلینڈ آنے کی دعوت کے ساتھ ایک بار پھر تمام حاضرین کے تعاون اور بالخصوص پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا سے تعلق رکھنے والے لوگوں جن میں مقصود خان، محترمہ نینا خان، یونس خان،بابر مغل،رضوان گوندل اور سلطان صاحب شامل تھے کا خصوصی طور پر شکریہ ادا کیا ۔ دوسری نشست میں منی مشاعرے اور فنِ گاہیکی کے مظاہرے کا اہتمام تھا جس میں جناب رشید احمد دیوانہ صاحب نے اپنی نوجواں عمری کی شاعری سے لوگوں کے دل موہ لیے اور آزاں بعد جناب استاد نعیم الدین سلہیریا صآحب کے چھوٹے بھاہی قمر الدین سلہیریا صاحب نے اپنے فنِ گاہیکی سے سامعین کو محظوظ فرمایا ۔ اسطرع آکاس انٹرنیشنل کا یہ پہلا یادگار کامیاب یوریپین فیملی فنگشن رات گہے اپنے اختتام کو پہنچا ۔ شب بخیر یار زندہ صحبت باقی ۔سن دو ھزار انیس کے دوسرے فیملی فنگشن کی جگہ اور تاریخ کا تعین ہوتے ہی انشااللہ العزیز اعلان کر دیا جائے گا ۔ اللہ حافظ ۔