مقبول خبریں
کونسلر شکیل احمد تیسری بار لیبر پارٹی کی طرف سے مئی 2020ء کے لئے امیدوار نامزد
کشمیر کی حیثیت میں یکطرفہ بھارتی تبدیلی جنوبی ایشیا میں خطرناک بگاڑکا باعث ہوگی
پاک سر زمین پارٹی کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری محمد رضا کی زیر صدارت عہدیداران و کارکنان کا اجلاس
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
حلقہ ِ ارباب ِ ذوق کے ادبی پروگرام میں پاکستانیوں اور کشمیری کونسلرز کی بڑی تعداد میں شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
پروفیٹک گفٹس ویڈنگ اینڈ ایونٹس آرگنائزر کے زیر اہتمام ایشین ویڈنگ اینڈ پلانرز ایونٹ کا انعقاد
میرے تمام خواب نظاروں سے جل گئے
پکچرگیلری
Advertisement
محبوبہ مفتی کی حکومت ختم، صدر رام ناتھ کووند نے گورنر راج نافذ کر دیا
سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بی جے پی کی علیحدگی کے بعد محبوبہ مفتی کی حکومت ختم، صدر رام ناتھ کووند نے گورنر راج نافذ کر دیا، رکن اسمبلی اسد الدین اویسی کا کہنا ہے مودی اور مفتی نے وادی جنت نظیر کو جہنم میں تبدیل کر دیا ہے۔مقبوضہ کشمیر میں بی جے پی اور پی ڈی پی کی مخلوط حکومت کی ہنڈیا پھوٹ گئی، ریاستی اسمبلی میں بی جے پی کی علیحدگی کے بعد پی ڈی پی کی رہنما محبوبہ مفتی نے استعفیٰ دے دیا جس پر صدر رام ناتھ کووند نے گورنر راج نافذ کر دیا۔ گورنر این این وہرہ چوتھی بار ریاست میں حکومتی امور سر انجام دیں گے، اس سے پہلے مقبوضہ کشمیر میں دو ہزار آٹھ، دو ہزار پندرہ اور سولہ میں بھی گورنر راج نافذ کیا گیا تھا۔ادھر بھارتی پارلیمنٹ کے ایوان زیریں لوک سبھا کے رکن اسد الدین اویسی بی جے پی پر برس پڑے، کہتے ہیں،،مودی سرکار کب تک اپنی ناکامیاں چھپائے گی۔ذرائع کا کہنا ہے گورنر راج چھ ماہ تک نافذ رہ سکتا ہے،جسکے بعد صدر راج نافذ ہو سکتا ہے لیکن اسکے لئے اسمبلی کی منظوری درکار ہے۔