مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمیر سنٹر میں عیدکے حوالہ سے پوٹھواری محفل شعر خوانی اور سیف الملوک کا انعقاد
معروف قلمکار اورصحافی عارف محمود کسانہ کی بچوں کیلئے ’’ سبق آموز کہانیاں2‘‘مارکیٹ میں آگئی
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پلیک گیٹ ہا ئی سکول بلیک برن میں تعینات ٹیچر کیتھرین نے روزے رکھنے شروع کر دیے
رنگ خوشبو سے جو ٹکرائیں تو منظر مہکے!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
محبوبہ مفتی کی حکومت ختم، صدر رام ناتھ کووند نے گورنر راج نافذ کر دیا
سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بی جے پی کی علیحدگی کے بعد محبوبہ مفتی کی حکومت ختم، صدر رام ناتھ کووند نے گورنر راج نافذ کر دیا، رکن اسمبلی اسد الدین اویسی کا کہنا ہے مودی اور مفتی نے وادی جنت نظیر کو جہنم میں تبدیل کر دیا ہے۔مقبوضہ کشمیر میں بی جے پی اور پی ڈی پی کی مخلوط حکومت کی ہنڈیا پھوٹ گئی، ریاستی اسمبلی میں بی جے پی کی علیحدگی کے بعد پی ڈی پی کی رہنما محبوبہ مفتی نے استعفیٰ دے دیا جس پر صدر رام ناتھ کووند نے گورنر راج نافذ کر دیا۔ گورنر این این وہرہ چوتھی بار ریاست میں حکومتی امور سر انجام دیں گے، اس سے پہلے مقبوضہ کشمیر میں دو ہزار آٹھ، دو ہزار پندرہ اور سولہ میں بھی گورنر راج نافذ کیا گیا تھا۔ادھر بھارتی پارلیمنٹ کے ایوان زیریں لوک سبھا کے رکن اسد الدین اویسی بی جے پی پر برس پڑے، کہتے ہیں،،مودی سرکار کب تک اپنی ناکامیاں چھپائے گی۔ذرائع کا کہنا ہے گورنر راج چھ ماہ تک نافذ رہ سکتا ہے،جسکے بعد صدر راج نافذ ہو سکتا ہے لیکن اسکے لئے اسمبلی کی منظوری درکار ہے۔