مقبول خبریں
مانچسٹر ایرینا میں خود کش حملہ میں جاں بحق ہونیوالوں کی یا دمیں دعائیہ تقریب منعقد کی جائیگی
اسلامک ریلیف رنگ و نسل اور مذہب سے بالاتر ہوکرمشن کی جانب گامزن ہے:مقررین
مسجد دارالمنور گمکول شریف راچڈیل میں شب برات پر روحانی محفل کا انعقاد
بھارتی فوج کی ورکنگ باؤنڈری پرفائرنگ، خاتون اور 3 بچے شہید،10 زخمی
نئی دہلی: انتہا پسندوں نے کشمیری خواتین پر لاٹھیاں اور ڈنڈے برسا دیئے
پیپلزپارٹی نوٹنگھم کے سابق صدر چوہدری علی شان پی پی پی برطانیہ کے نائب صدر منتخب
پیپلزپارٹی ہی آئندہ انتخابات میں چاروں صوبوں میں اکثریت حاصل کریگی:میاں سلیم
قائد تحریک امان اللہ خان کی دوسری برسی، جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے رہنمائوں کا خراج عقیدت
اولڈ مین کی لالٹین
پکچرگیلری
Advertisement
ہولوکاسٹ میموریل ڈے پر سوک سینٹر (Bury ) میں تمام مذاہب کی کیمیونٹیز کی بھرپور شرکت
راچڈیل :راچڈیل کونسل اور راچڈیل میں بسنے والے تمام مذاہب کی کیمیونٹیز نے ہولوکاسٹ میموریل ڈے پر سوک سینٹر (Bury ) میں بھرپور شرکت کی۔ ہولوکاسٹ ( Holocaust ) کیا ہے؟ہولوکاسٹ کی اصطلاح دراصل یونانی لفظ (Holokauston) سے ماخوذ ہے۔جس کا مطلب مکمل جلا دینا یا راہ خدا میں جان قربان کر دینا۔دوسری جنگ عظیم میں ایک کروڑ دس لاکھ بے گناہ انسانوں کو زندہ جلا دیا گیا یا ان کو قتل کا دیا گیا۔یہودی کہتے ہیں کہ ان میں سے ساٹھ لاکھ انسان صرف یہودی تھے۔اس سارے ظلم کی داستان کا واحد ذمہ دار دنیا کا عظیم ظالم ڈکٹیٹر ایڈولف ہٹلر تھا۔ایڈولف ہٹلر 20 اپریل 1888ء آسٹریا میں پیدا ہوا۔ 1913ء میں جرمنی چلا گیا اور پہلی جنگ عظیم میں جرمنی کیطرف سے عام سپاہی کے طور پر جنگ میں حصّہ لیا۔1919ء میں سیاسی پارٹی ورکر کا رکن بنا۔یہی پارٹی 1920ء میں نیشنل سوشلسٹ جرمنی ورکر پارٹی کہلائی۔1921ء میں وہ پارٹی کا چئیرمن منتخب ہوا۔1930ءکے جنرل الیکشن میں یہ نازی پارٹی بن گئی۔1933ء کے انتخاب میں نازی پارٹی اکثریت تو حاصلِ نہ کر سکی لیکن اس وقت کے صدر نے نازی پارٹی کو حکومت بنانے کی دعوت دی تو ایڈولف ہٹلر جرمنی کا وزیراعظم منتخب ہو گیا۔ ہولوکاسٹ ڈے کے موقع پر راچڈل کے میئرکونسلر آئن ڈوک ورتھ و مسز میئر ،ممبر پارلیمنٹ لیبر پارٹی لیز میکنیز ،کونسل لیڈر آف راچڈیل کونسلر ایلن بریت،کونسلر سلطان علی،کونسلر کیتھلین نیکسن،جان ہیکس،صائقہ ناز،چیف ایگزیکٹو کونسل آف مساجد راچڈیل دبر میاں،مذہبی اسکالر مولانا محمد عرفان چشتی،چوہدری خالد محمود،سجاد میاں،یہودی و کرسچن اور مسلم کمیونٹیز نے بڑی تعداد میں شرکت کی،جن میں بچوں،خواتین و مردوں کی کثیر تعداد موجود تھی۔جن مقررین نے خطاب کیا ان میں میئر راچڈل کونسلر آئن ڈوک ورتھ ،لیڈر آف کونسل،کونسلر سلطان علی،صائقہ ناز،کونسلر کیتھلین نیکسن،جان ہکس،بچے اور بچیاں بھی شامل تھے۔تمام مقررین نے اس ظلم کی پرزور مذمت کی جو اس وقت کے ظالم حکمران اور اس کے اتحادیوں نے بے گناہ سو لاکھ سے زائد انسانوں کو زندہ جلادیا۔اس کے علاوہ دنیا کے مختلف ممالک میں انسانوں پر کئے جانے والے مظالم کی بھی پرزور مذمت کی،جن میں بوسنیا،ارمینیا،یوکرائن،روانڈا،کمبوڈیا،میانمار،کشمیر و فلسطین بھی شامل تھے۔روھنگین برما کے مسلمانوں کی امداد کےلیے راچڈیل کونسل آف مساجد و ممبر پارلیمنٹ راچڈیل ٹونی لائیڈ کے وفد سمیت کوکس بازار بنگلہ دیش میں جا کر وہاں امدادی سامان تقسیم کرنے پر سجاد میاں نے تفصیلات سے آگاہ کیا اور وھاں پر آٹھ لاکھ کے قریب روھنگین مہاجرین کی ضروریات زندگی پر مکمل آگاہی فراہم کی۔ ہولوکاسٹ میموریل ڈے پر شمعیں روشن کی گئیں اور ایک منٹ کی خاموشی بھی اختیار کی گی۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر