مقبول خبریں
موومنٹ فار دی رائٹس اوورسیز پاکستانیز کے زیر اہتمام ڈوئل نیشنل کو عزت دو بارے تقریب کا اہتمام
پاکستان مادر وطن ہے اسکی حفاظت ہمارا فرض اولین ہے: ڈی جی آئی ایس پی آر آصف غفور
دورے پرحکومت پاکستان،حکومت آزاد کشمیر اور راجہ نجابت کی معاونت کے مشکور ہیں:کرس لیزے
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
یورپ میں مسئلہ کشمیر کو مزید تیزی سے اجاگر کیا جائے گا: تحریک حق خودارادیت
زمین پر دیوار چین
پکچرگیلری
Advertisement
سکھ تنظیموں کی جانب سے گوردواروں میں بھارتی حکام کے داخلے پر پابندی
لندن: سکھ تنظیموں کی جانب سے دنیا بھر میں واقع گوردواروں میں بھارتی حکومتی عہدیداران کے داخلے پر پابندی کے بعد سے بھارتی حکومت کو شدید پریشانی کا سامنا ہے۔ایک رپورٹ کے مطابق سکھ تنظیموں کا موقف ہے کہ سکھوں کے مفاد کے خلاف اور انتہا پسند ہندو گروپوں کے نظریات کی ترویج کے لیے گوردواروں کے استعمال کی اجازت نہیں دی جائے گی۔برطانیہ کی سکھ فیڈریشن نے بھارتی حکومتی عہدیداران کے گوردواروں میں داخلے پر پابندی کی تجویز دی، جس کے بعد تقریباً 100 گوردواروں نے تصدیق کی کہ بھارتی حکام کی گوردواروں کے اندر سرگرمیوں پر پابندی عائد کی جا چکی ہے۔سکھ تنظیموں کا کہنا ہے کہ بھارتی حکام کو گوردواروں میں آنے کی اجازت ہے لیکن وہ اس پلیٹ فارم کو نریندر مودی حکومت یا ہندو انتہا پسندوں کے نظریات کے پرچار کے لیے استعمال نہیں کر سکتے۔ واضح رہے کہ کینیڈا کے گوردوارے پہلے ہی بھارتی حکام کے داخلے پر پابندی لگا چکے ہیں۔دوسری جانب یورپ کے 100 گوردواروں میں بھارتی حکام کے داخلے پر پابندی عائد کی جا سکتی ہے اور اگر اس تعداد میں کینیڈا، امریکا، آسٹریلیا، نیوزی لینڈ اور دیگر جگہوں کو بھی شامل کیا جائے تو بھارتی حکام کو دنیا بھر کے 300 سے زائد گوردواروں میں داخلے پر پابندی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔