مقبول خبریں
یورپی پارلیمنٹ کی انسانی حقوق کمیٹی کا مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر ہیئرنگ کا فیصلہ
بیسٹ وے گروپ کے سربراہ سرانور پرویز کی جانب سے کمیونٹی رہنمائوں کے اعزاز میں استقبالیہ
نبوت بھی اﷲ کی عطا ہے اور صحابیت بھی، نبوت بھی ختم ہے اور صحابیت بھی: ڈاکٹر خالد محمود
ملک دشمن عناصر دہشتگردی کے ذریعے پاکستان میں الیکشن سبوتاژ کرنا چاہتے ہیں:عمران خان
مقبوضہ کشمیر :بھارتی فوج نے نوجوان کا سر تن سے جدا کر دیا ،احتجاج،جھڑپیں
شیر خدا نے نبی پاک کی آواز پر لبیک کہہ کر اسلام سے محبت اور وفا کی عمدہ مثال قائم کی
پیپلزپارٹی ہی آئندہ انتخابات میں چاروں صوبوں میں اکثریت حاصل کریگی:میاں سلیم
مسئلہ کشمیر پرقوم کا نکتہ نظر اور قربانیاں رنگ لا رہی ہیں:جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت
نیا موسم تمہارا منتظر ہے۔۔۔۔۔۔۔۔
پکچرگیلری
Advertisement
پر نس ہیری کی شادی 19 مئی کو ونڈسر کاسل میں ہوگی ،بکنگھم پیلس کےشاہی خاندان کا اعلان
لندن :پرنس ہیری کی شادی 19 مئی کو ونڈسر کاسل میں ہوگی بکنگھم پیلس کے شاہی خاندان نے شادی کی تاریخ کا اعلان کر دیا ہے دنیا بھر کے شہزادے اور شہزادیوں کی شرکت متوقع ہے ،شاہی خاندان کے چشم و چراغ کی شادی کی اس تقریب میں برطانوی عوام کی گہری دلچسپی ہے برطانیہ کے متوقع بادشاہ پرنس ہیری کی شادی 2018 کی سب سے بڑی تقریب ہوگی جسے ملکی اور غیر ملکی سطح پر کوریج ملے گی ،پرنس ہیری کی رومانوی داستان کی بھنک تک کسی کو بھی نہیں لگی کہ کس طرح شہزادہ کینیڈین نژاد ہالی ووڈ کی اداکارہ مینگن کے عشق میں مبتلا ہوا میڈیا میں شاہی خاندان کے بارے میں شہزادی ڈیانا کی موت کے بعد رپورٹنگ کے لئے ایک ضابطہ اخلاق وضح کیا تھا اور زاتی اور نجی زندگی کو زیر بحث نہ لانے کے بارے میں پابندی عائد کی گئی تھی اسی لئے شاہی خاندان کے رومانس کی داستانیں اب میڈیا میں تواتر سے نشر نہیں ہوتیں وگرنہ جب شہزادہ چارلس اور شہزادی ڈیانا 1980 کی دہائی میں ایک دوسرے کی محبت میں گرفتار ہوئے تو اس جوڑے کے عشق کی داستانیں نہ صرف مغربی میڈیا بلکہ پاکستان کی اخبارات میں جاسوسی ناولوں کی طرز پر کہانیوں کی طرح قسط وار شاہح ہوتیں تھیں جس سے پڑھنے والے نہ محظوظ ہوتے تھے بلکہ تجسس اور حسرت سے اگلی قسط کا انتظار کرتے تھے شاہی خاندان ابھی تک کسی حدتک اس پرانی تہذیب اور روایات کا علمبردار ہے جس میں رشتہ ناطہ جوڑ نے توڑنے اور نبھانے میں کچھ تکلف اور احتیاط ہوتی ہے پتہ نہیں وہ زمانہ کہاں اب اس جدید دور میں تحلیل ہوگیا جب دو محبت کرنے والے ایک دوسرے کو چوری چوری دیکھ کر شرما جاتے تھے بات کرنے میں تھوڑے نروس ہوتے تھے اپنی محبت کا اظہار کرنے میں سالہاسال لگاتے تھے پھر کبھی خط، کبھی پھول اور کبھی کبوتر آڑا کر اپنی محبت کا اظہار کرتے تھے پھر والدین کی رضامندی حاصل کرتے تھے اج کل بس یہ سارا کچھ ناپید ہے جھٹ منگنی جھٹ بیاہ اور پھر طلاق علیحیدگی -کاش کہ وہ زمانہ واپس آ جائے وہ رسمیں وہ وقت لوٹ آئے تاکہ والدین سکھی ہوسکیں شہزادہ ہیری اور مینگن کے لئے نیک خواہشات کے اس مختصر سے پیغام میں عرض ہے کہ لیڈی ڈیانا کا جب بھی چہرہ سامنے آتا ہے تو یقین نہیں آتا کہ دنیا کی یہ خوبصورت شہزادی مرچکی یے وہ نہ صرف خوبصورت تھی بلکہ وہ دکھی انسانیت کے لئے بھی کام کرتی تھی اور اس کی یہی ادا اس کے حسن کو اور خوبصورت بناتی ہے جسے مر کر بھی آج یاد کیا جاتا ہے