مقبول خبریں
اولڈہم کے مقامی ہوٹل ہال میں باغیچہ سجانے کی تقسیم انعامات کی تقریب
پاکستان اور بھارت میں واقعی برابری کہاں ؟ ایک طرف محبت دوسری طرف نفرت
پاکستانی نژاد پیشہ ورانہ ماہرین اور طلبہ جہاں بھی ہوں اقدار کی پاسداری کریں: نفیس زکریا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
حلقہ ِ ارباب ِ ذوق کے ادبی پروگرام میں پاکستانیوں اور کشمیری کونسلرز کی بڑی تعداد میں شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
قومی برطانوی انتخابات میں کشمیر دوست امیدواران کو ووٹ دینے بارے آگاہی میٹنگ
سہمے ہوئے لوگوںسے بھی خائف ہے زمانہ
پکچرگیلری
Advertisement
ختمِ نبوت ترمیم، حکومت کا تمام جماعتوں سے مشاورت کا دعویٰ جھوٹ: عمران خان
اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ سابق وزیرِ اعظم نواز شریف کی منی ٹریل صرف ایک قطری خط ہے۔ لیکن سب جانتے ہیں کہ قطری اور اس کا خط سب فراڈ ہے۔ پاناما معاملے کی انکوائری کرنے والی جے آئی ٹی نے قطری شہزادے کو بلایا لیکن وہ نہیں آیا اور سیکیورٹی کا بہانہ بنا دیا لیکن اب پورٹ قاسم ڈیل کرنے کیلئے آ گیا، اس سے یہ واضح ہو گیا ہے کہ حمد بن جاسم کو پاکستان آنے میں کوئی مسئلہ نہیں تھا۔اسلام آباد میں تحریک لبیک یا رسول اللہ کے دھرنے اور فیض آباد آپریشن پر بات کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ہمارے کارکن بھی ختم نبوت کے معاملے پر احتجاج کرنا چاہتے تھے۔ اگر فوج سمجھوتہ نہ کراتی تو ملک میں بہت بڑا انتشار پیدا ہو جانا تھا۔ اگر فوج نہ آتی تو زیادہ نقصان ہوتا۔ معاہدہ ہونے پر شکرانے کے نفل ادا کیے۔ ان کا کہنا تھا کہ حلف نامے میں ترمیم کی گئی تو کہا گیا کہ اس میں تمام جماعتیں شریک تھیں، جو بہت بڑا جھوٹ تھا۔ اگر کمیٹی میں مشاورت ہوئی تو اس کے منٹس دکھا دیں۔ انہوں نے سوال اٹھایا کہ کیا انٹرنیشنل لابی کو خوش کرنے کیلئے حلف نامے میں ترمیم کی گئی؟ انہوں نے مطالبہ کیا کہ حلف نامے میں تبدیلی کا ذمہ دار کون ہے؟ ترامیم کے پیچھے ملوث افراد کے نام جلدی سامنے لائے جائیں۔اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ملک میں حکومت نام کی کوئی چیز نظر نہیں آ رہی۔ وزیرِ اعظم شاہد خاقان عباسی اور ساری مسلم لیگ (ن) نواز شریف سے جواب مانگنے کے بجائے انھیں بچانے میں لگی ہے۔ اسمبلی میں ہاتھ کھڑا کر کے مجرم کو پارٹی صدر بنا دیا گیا۔ یہی نہیں بلکہ نواز شریف کو پروٹوکول دیا جاتا ہے۔