مقبول خبریں
صاحبزادہ عا مر جہانگیر کی روہنگیا میں طبیعت خراب، صحت یابی کیلئے دعا کی اپیل
سانحہ قصور:سمائل ایڈ کے زیر اہتمام افضل خان ایم پی اور ناز شاہ ایم پی کے زیر صدارت تقریب
محسن باری گروپ کو برطانیہ کی تنظیم پر مسلط کر کے بھٹو ازم کو نقصان پہنچا:پی پی پی برطانیہ
پارٹی نے وزیر اعظم بنایا تو تمام منصوبوں کی خود نگرانی کروں گا: شہباز شریف
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی فائرنگ،2زخمی،احتجاج،مظاہرے،انٹر نیٹ بھی معطل
کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی پامالیوں کو رکوانے کے سلسلہ میں پروگرام کا انعقاد
برطانیہ کے ساحلی شہر سائوتھ ہیمپٹن میں ملی نغموں کی گونج، ڈپٹی میئر کی خصوصی شرکت
برطانیہ کے کسی بھی پہلے ڈپٹی مئیر کا دورہ سپین،شاندار استقبال کیا گیا
نورِعین رخسانہ نور
پکچرگیلری
Advertisement
تحفظ ناموس رسالت ایمان کا حصہ، اس کیلئے قربانی سے دریغ نہیں کرینگے: سید رضا علی العابدی
مانچسٹر:تحفظ ناموس رسالت ہمارے ایمان کا حصہ ہے اس کیلئے ہم کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے،قیام پاکستان کا عمل اسلام کے نام پر ہوا اور وہاں پر اسلامی تعلیمات کے مطابق زندگی گزارنے،عدل و انصاف کی علمبرداری کا محور صرف اسلامی طرز سے ہونا چاہئے،مرضی کے مطابق قانون سازی جس میں ذاتی مفادات کا تحفظ ہو نا قابل قبول ہے،پاکستان کے علمائے کرام کی ذمہ داری ہے کہ وہ تحفظ ناموس رسالت کے لئے اتحاد و اتفاق کا عملی مظاہرہ کریں،ان خیالات کا اظہار صوفی روحانی سوسائٹی برطانیہ کے چیئرمین سید رضا علی العابدی نے سوسائٹی کی جانب سے منعقدہ ایک تقریب کے موقع پر کیا،انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی قدروں اور تعلیمات کا حقیقی درس عوام الناس تک پہنچانا ہماری ذمہ داری ہے،اس کیلئے جبر نہیں بلکہ پیار و محبت،نرمی اوررواداری کا ہونا ضروری ہے،انہوں نے مزید کہاکہ پاکستان کی دھرتی کو نقصان پہنچانے کیلئے دشمن طاقتیں طرح طرح کے حربے استعمال کرتی رہتی ہیں،لیکن ان کو یاد رکھنا چاہئے کہ پاکستان تا قیامت قائم رہنے کیلئے معرض وجود میں آیا تمام گھنائونی سازشیں ناکام ہوں گی،علامہ ظہور احمد سیفی نے کہاکہ دین اسلام مکمل ضابطہ حیات ہے اور ختم نبوت پر یقین رکھتے ہیں،ازل سے دین اسلام کو نقصان پہنچانے کیلئے یذیدی قوتیں سرگرم عمل ہیں لیکن آج تک انہیں منہ کی کھانی پڑی اور آئندہ بھی ایسا ہی ہو گا اسلام کی مثبت تصویر کشی عالم اقوام تک پہنچانے کے لئے ہم سب کو اپنا کردار ادا کرنا ہو گا،دنیا بھر میں جاری دہشت گردی میں ملوث عناصر کا اسلام سے کوئی واسطہ نہیں بلکہ وہ انسانیت کے زمرے میں بھی نہیں آتے،اس روحانی محفل میں صوفی توصیف احمد،چوہدری اسرار افضل،لیاقت عرف مانی،شوکت علی،سالیٹر ندیم ملک،چوہدری محمد فاروق،مقبول ملک،سید طلعت حسین،شعیب اعوان و دیگر افراد نے بھرپور شرکت کی،لنگر شریف کا معقول انتظام بھی کیا گیا۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر