مقبول خبریں
کشمیر میں مظالم کیخلاف اقدامات نہ اٹھائے تو تباہی کی ذمہ داری بین الاقوامی کمیونٹی پر ہو گی:نعیم الحق
ڈیبی ابراھم کی قیادت میں ممبران پارلیمنٹ اور کمیونٹی رہنماؤں کی لارڈ طارق احمد سے ملاقات
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز اورسیمینارز منعقد کریگی : راجہ نجابت
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کی وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر اور شاہ غلام قادر سے ملاقات
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
جموں کشمیرتحریک حق خود ارادیت کاسردارمسعود کے دورہ برطانیہ و یورپ کےموقع پرتقریبات کااہتمام
سوچنے کے موسم میں سوچنا ضروری ہے!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
کرپٹ ٹولہ اپنے آپ کو بچانے کیلئے اداروں کو نشانہ بنا رہا ہے: عمران خان
اٹک: چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہر ملک میں دو قسم کی سیاست ہوتی ہے، کچھ لوگ سیاست میں خود کو فائدہ پہنچانے کیلئے آتے ہیں، جنہوں نے انسانیت کیلئے کام کیا، ان کے مزاروں پر آج بھی رش ہے، نئے پاکستان میں فارن پالیسی پاکستان کے مفاد کیلئے بنے گی، غربت کے خاتمے کیلئے پالیسیاں بنائیں گے، پاکستان کیلئے سیاست کرنے والے لوگ اوپر آئیں گے، اقتدار ملا تو قوم کا سوچنے والے وزیر بنیں گے۔عمران خان کا کہنا تھا کہ ہم نے پاکستان کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنا ہے، ہم نے پاکستان کو کبھی کسی کے سامنے جھکنے نہیں دینا، جو قرض دیتا ہے، وہ آزادی لے لیتا ہے، مقروض ملک آزاد فیصلے نہیں کر سکتا، اقتدار سے پہلے نواز شریف کیا کرتے تھے، زرداری بمبینو سینما میں ٹکٹ بلیک کرتے تھے، زرداری کے پاس اتنا پیسہ کہاں سے آیا؟ عمران خان بولے، نوجوانو! زرداری کے پاس آپ کا پیسہ ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ تبدیلی آ نہیں رہی، آ گئی ہے، اب لوگوں کو کرپشن اور غربت میں تعلق سمجھ آ گیا ہے، عوام احتساب نہیں کرتے، ووٹ ڈالتے ہیں، ملک میں احتساب جج کرتے ہیں۔چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ نئے پاکستان میں عوام باشعور ہوں گے، عوام اپنا پیسہ چوری نہیں ہونے دیں گے، مجرم کو 40 گاڑیوں کا پروٹوکول دیا جاتا ہے، مجرم ٹیکس کے پیسوں سے پنجاب ہاؤس میں ٹھہرا ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ قرض عوام پر ٹیکس لگا کر واپس کئے جاتے ہیں، ٹیکسز سے ملک میں غربت بڑھتی ہے، چھوٹا سا طبقہ امیر ہوتا جا رہا ہے، کرپٹ خاندان کو بچانے کیلئے اداروں پر حملے کئے جا رہے ہیں، ملک کو کمزور کرنے کی کوشش ہوئی تو سڑکوں پر ہونگے، اللہ نے پاکستان کو بے شمار وسائل سے نوازا ہے، پاکستان تیزی سے ترقی کر سکتا ہے، اللہ نے موقع دیا تو یہ کر کے دکھاؤں گا۔عمران خان نے اس عزم کا اظہار کیا کہ حکومت ملی تو نوجوانوں کو اچھی تعلیم اور روزگار دیں گے، ملک میں گورننس سسٹم کو بہتر کریں گے، اداروں کو بہتر کریں گے تو سرمایہ کاری آئے گی، بیرون ملک پاکستانیوں کے پاس بے شمار پیسہ ہے، سی پیک سے فائدہ گورننس کو ٹھیک کر کے اٹھایا جا سکتا ہے۔