مقبول خبریں
جموں وکشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل خواتین کے عالمی دن کے حوالے سے تقریبات منعقد کریگی
برطانیہ میں اپنی صلاحیتیں منوانے کے جتنے مواقع ہیں کسی اور ملک میں نہیں: رحمان چشتی و دیگر
پاکستان میں فٹبال کے فروغ کیلئے انٹرنیشنل سوکا فیڈریشن کا قیام، ٹرنک والا فیملی کو خراج تحسین
وزارتِ عظمیٰ کے بعد نواز شریف مسلم لیگ ن کی صدارت سے بھی فارغ
بھارتی ریاستی دہشتگردی کیخلاف مقبوضہ کشمیر میں ہڑتال، تعلیمی ادارے بند
کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی پامالیوں کو رکوانے کے سلسلہ میں پروگرام کا انعقاد
اوورسیز پاکستانیز ویلفیر کونسل کے زیراہتمام یوم یکجہتی کشمیر پر کار ریلی کا انعقاد
راجہ نجابت اور ان کی ٹیم کامسئلہ کشمیرپر متحرک کردار قابل ستائش ہے: سٹوورٹ اینڈریو
عمران خان مارگریٹ اور میں
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جبرکیخلاف مکمل ہڑتال، زبردست احتجاجی مظاہرے
سرینگر:مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جبرکیخلاف مکمل ہڑتال رہی،آزادی کے ہزاروں متوالے تمام ترپابندیاں توڑتے ہوئے سڑکوں پرآگئے اورزبردست احتجاجی مظاہرے کئے ،غاصب فورسزنے طاقت کاوحشیانہ استعمال کرتے ہوئے مزید35افرادزخمی کردئیے ۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق ضلع پلوامہ میں بھارتی فوج کے ہاتھوں3بے گناہ نوجوانوں وسیم شاہ،نصیراحمداورگلزاراحمدمیرکی شہادت کیخلاف مختلف علاقوں میں مکمل ہڑتال کی گئی،تمام دکانیں،بازاراورکاروباری وتجارتی مراکزبندجبکہ سڑکوں پرٹریفک معطل رہی،ہزاروں افرادنے احتجاجی مظاہرے کئے اورریلیاں نکالیں،جن میں طلبہ،وکلا،بچوں اورخواتین نے بھی بھرپور شرکت کی،اس دوران فضائیں بھارتی قبضہ کیخلاف اورآزادی کے حق میں فلک شگاف نعروں سے گونجتی رہیں،بھارتی فورسزنے مظاہرین کومنتشرکرنے کیلئے بے دریغ آنسوگیس شیلنگ اورپیلٹ گن فائرنگ کی،جواب میں مظاہرین نے پتھراؤکیااورشدیدجھڑپیں کئی گھنٹے جاری رہیں تاہم فورسزکے تشدد سے 35سے زائدافرادزخمی ہوگئے جبکہ متعددکوگرفتاربھی کرلیاگیا۔دوسری جانب مقبوضہ وادی میں مزید2خواتین کی چٹیاکاٹنے کے واقعات سامنے آئے ،سرینگرکے علاقہ لال بازاربٹہ شاہ محلہ میں نامعلوم افرادنے گھرمیں گھس کرخاتون کی چٹیاکاٹی اورپھرزیورات لوٹ کرفرارہوگئے ،ادھرضلع بارہمولہ کے علاقہ بونیارمیں حفیظہ بیگم کی چٹیاکاٹ دی گئی،ان واقعات کیخلاف بھی احتجاجی مظاہرے ہوئے جن کیساتھ بھی وحشیانہ طاقت سے نمٹاگیا۔ خیال رہے کہ مقبوضہ ریاست میں گزشتہ ایک ماہ کے دوران چٹیاکاٹنے کے 100سے زائد واقعات پیش آچکے ہیں۔مزیدبرآں سیدعلی گیلانی،میرواعظ عمرفاروق اورمحمدیاسین ملک پرمشتمل مشترکہ مزاحمتی قیادت نے قابض فورسزکے ہاتھوں نہتے شہریوں کی شہادتوں کی شدیدمذمت کی۔بیان میں انکاکہناتھاکہ پوری کشمیری قوم پر یہ ذمہ داری ہے کہ شہدا مشن کو ہر صورت میں جاری وساری رکھا جائے ۔علاوہ ازیں لبریشن فرنٹ کے چیئرمین یاسین ملک سمیت8رہنماؤں کوکئی روزکی بلاجوازحراست کے بعدضمانت پررہاکردیاگیا۔