مقبول خبریں
پاکستانی و کشمیری برطانوی شہریوں کا تمام شعبہ جات میں نمایاں مقام باعث فخر ہے:افضل خان
عمران خان خود اپنی پارٹی کیلئے باعثِ شرمندگی ہے : ڈاکٹر اشرف ،ملک ریاض،شاکرقریشی
پاکستان میں فٹبال کے فروغ کیلئے انٹرنیشنل سوکا فیڈریشن کا قیام، ٹرنک والا فیملی کو خراج تحسین
وزارتِ عظمیٰ کے بعد نواز شریف مسلم لیگ ن کی صدارت سے بھی فارغ
بھارتی ریاستی دہشتگردی کیخلاف مقبوضہ کشمیر میں ہڑتال، تعلیمی ادارے بند
کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی پامالیوں کو رکوانے کے سلسلہ میں پروگرام کا انعقاد
اوورسیز پاکستانیز ویلفیر کونسل کے زیراہتمام یوم یکجہتی کشمیر پر کار ریلی کا انعقاد
راجہ نجابت اور ان کی ٹیم کامسئلہ کشمیرپر متحرک کردار قابل ستائش ہے: سٹوورٹ اینڈریو
عمران خان مارگریٹ اور میں
پکچرگیلری
Advertisement
کشمیری قوم مزید ظلم و ستم برداشت نہیں کرے گی :سردار امجد اشرف
اولڈہم:وادی نیلم کشمیر سے گزشتہ دنوں پاکستان کے سیکورٹی اداروں کی طرف سے چند افراد کو بلا جواز اٹھا کر لے جانا باعث تشویش ہے ایسا کرنے سے ریاست کے باشندوں کی شخصی آزادی پر کاری ضرب ہے اس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے کشمیری قوم حق خود ارادیت کیلئے عَلم بلند کرتی رہے گی اور ہمیں اقوام متحدہ اور عالمی طاقتوں سے توقع ہے کہ وہ ایسا کرنے میں عملی اقدامات اٹھائیں گی ہماری منزل کشمیر کی مکمل آزادی و خود مختاری تک جاری رہے گی،ان خیالات کا اظہار جمعوں و کشمیر نیشنل عوامی پارٹی برطانیہ یونٹ کی آرگنائزنگ کمیٹی کے رکن سردار امجد اشرف نے وادی نیلم سے غائب افراد بارے میڈیا کو دیئے گئے اپنے ایک خصوصی بیان میں کیا،انہوں نے مزید کہا کہ چونکہ انکا تعلق اسی ڈویژن سے ہے علاقہ بھر میں کشیدگی پائی جاتی ہے اور طرح طرح کی چہ مگوئیاں ہو رہی ہیں کہ آخر ان افراد کو کس جرم میں اٹھایا گیا ہے،خاندان کے افراد سخت کرب میں مبتلا ہیں اس بارے فی الفور اپنے خاندان کے پاس واپس پہنچایا جائے ہم بیرون ممالک بسنے والے کشمیری اگر اس معاملے کو جلد حل نہ کیا گیا تو عالمی سطح پر بھرپور احتجاج کریں گے کشمیری قوم مزید ظلم و ستم برداشت نہیں کرے گی ہمیں آزادی سے سکون کی زندگی بسر کرنے دی جائے وگرنہ حالات کی خرابی کیلئے تیار رہیں اس موقع پر جموں و کشمیر نیشنل عوامی پارٹی اولڈہم یونٹ کے سابق صدر نثار احمد خان ،پیر اعجاز شاہ ’’غازی چکوٹھی ‘‘ محمد ساروش خان،واجد ایوب،سلیم یاس و دیگر جماعتی کارکنان بھی انکے ہمراہ موجود تھے۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر