مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
پاکستان پریس کلب یوکے کے سالانہ انتخابات اور تقریب حلف برداری
چیئرمین پی آئی ایچ آرچوہدری عبدالعزیز کوسوک ایوارڈ فار کمیونٹی سروسز سے نواز گیا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
لوٹن ٹائون ہال میں ادبی بیٹھک، لارڈ قربان نے صدارت کی معروف شعرا کرام کی شرکت
لوٹن :تنظیم بزم ادب لوٹن کی جانب سے گذشتہ دنوں لوٹن کے ٹاون ہال میں ادبی مجلس منعقد کی گئی۔محفل کے دوران صدارت بزم ادب لوٹن کے چیئرمین لارڈ قربان حسین چوہدری نے کی جبکہ تقریب کے مہمان خصوصی معروف شاعر، ادیب، صحافی اور مرثیہ خواں سید صفدرہمدانی تھے۔ پروگرام کا آغاز تلاوت سے ہوا جس کی سعات راجہ عجائب خان نے کی۔ انھوں نے اپنی خوبصورت میں نعت بھی پیش کی۔ اس موقع پر تنظیم کے وائس چیئرمین سید حسین شہید سرور نے نظامت کے فرائض انجام دیئے۔ سید عابد گیلانی اور سید کاظم رضا نے ان کی معاونت کی۔جن شعراء نے اپنا کلام سنایا، ان میں سید صفدر ھمدانی، پاکستان سے ڈاکٹرنگہت افتخار، پی ٹی وی کی سابقہ نیوزکاسٹرماہ پارہ صفدر، برطانیہ کے شاعر احسان شاہد، ڈاکٹر عدیم مرتضیٰ ، ڈاکٹر صفدر سعید اور کوٹلی کے شاعر طارق اسجد قریشی قابل ذکر ہیں۔اردو کے بارے میں شرکاء نے مختلف آراء پیش کیں۔ اظہارخیال کرنے والی شخصیات میں کونسلر راجہ اسلم خان، کونسلر طاہرملک، راجہ اکبرداد خان، عمیر امجد راٹھورقابل تذکر ہیں۔ خواجہ زاہد بٹ نے اپنی سریلی آواز میں گیت سنائے۔میرپور سے پروفیسر ڈاکٹر راجہ عارف خان نے بھی اردو کی ترقی کے حوالے سے اپنی رائے دی۔ ان کے علاوہ، شہزاد علی چوہدری، سید عابد کاظمی، نورٹی وی کی اینکرپرسن مس سمیرا، خواجہ عبدالباسط بٹ، جہانگیرچوہدری، شبیرملک، شریف چوہدری، خواجہ عقیل بٹ، نے اپنے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے اردو ادب کے فروغ کے حوالے سے ادبی محفل کے انعقاد کو سراہا۔مہمانوں کو سید حسین شہید سرور کی جانب سے اردو کی ترویج اور ترقی کے لیے شیلڈز پیش کی گئیں۔ مہمانوں کے لیے پرتکف عشائیے کا بھی اہتمام کیاگیا۔