مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
نواز شریف کے دوبارہ پارٹی صدر بننے کی راہ ہموار، شق 203 سینیٹ سے بھی منظور
اسلام آباد: سینیٹ اجلاس سے چئیرمین اور ڈپٹی چئیرمین غائب، انتخابی اصلاحات بل 2017ء کثرت رائے سے منظور، اہم ترین شق 203 میں اعتزاز احسن کی ترمیم صرف ایک ووٹ سے مسترد، نااہلی کے باجود نواز شریف کے دوبارہ پارٹی صدر بننے کی راہ ہموار ہو گئی۔پریذائیڈنگ افسر مظفر حسین شاہ کی سربراہی میں سینیٹ اجلاس دوبارہ شروع ہوا تو شق 203 پر ووٹنگ ہوئی۔ اعتزاز احسن نے ترمیم پیش کرتے ہوئے کہا کہ چاہتے ہیں کہ عدالتی سزا یافتہ اور شہریت چھوڑنے والا شخص پارٹی سربراہ بھی نہ بن سکے۔ ترمیم پر ووٹنگ کرائی گئی تو اس کے حق میں 37 اور مخالفت میں 38 ووٹ آئے۔ یوں حکومت صرف ایک ووٹ سے شق 203 منظور کرانے میں کامیاب ہو گئی۔ایم کیو ایم نے نواز شریف کو دوبارہ پارٹی صدر بنانے کیلیے ن لیگ کی حمایت کی جس پر راجہ ظفر الحق اور زاہد حامد نے ایم کیو ایم اراکین کا نشستوں پر جا کر شکریہ ادا کیا۔ اس سے پہلے اراکین کے گوشواروں سے متعلق شق ساٹھ پر دوسری بار ووٹنگ ہوئی تو چئیرمین سینیٹ رضا ربانی ایوان سے چلے گئے۔ رضا ربانی نے کہا کہ انہوں نے اپنے اختیارات ایوان کو دیئے، ایوان نے ان کے فیصلے کے خلاف ووٹ دیا۔ اب اخلاقی طور پر بل کی منظوری تک ان کا اجلاس کی صدرات کرنا درست نہیں ہے۔