مقبول خبریں
پاکستانی و کشمیری برطانوی شہریوں کا تمام شعبہ جات میں نمایاں مقام باعث فخر ہے:افضل خان
عمران خان خود اپنی پارٹی کیلئے باعثِ شرمندگی ہے : ڈاکٹر اشرف ،ملک ریاض،شاکرقریشی
پاکستان میں فٹبال کے فروغ کیلئے انٹرنیشنل سوکا فیڈریشن کا قیام، ٹرنک والا فیملی کو خراج تحسین
وزارتِ عظمیٰ کے بعد نواز شریف مسلم لیگ ن کی صدارت سے بھی فارغ
بھارتی ریاستی دہشتگردی کیخلاف مقبوضہ کشمیر میں ہڑتال، تعلیمی ادارے بند
کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی پامالیوں کو رکوانے کے سلسلہ میں پروگرام کا انعقاد
اوورسیز پاکستانیز ویلفیر کونسل کے زیراہتمام یوم یکجہتی کشمیر پر کار ریلی کا انعقاد
راجہ نجابت اور ان کی ٹیم کامسئلہ کشمیرپر متحرک کردار قابل ستائش ہے: سٹوورٹ اینڈریو
عمران خان مارگریٹ اور میں
پکچرگیلری
Advertisement
نواز شریف کے دوبارہ پارٹی صدر بننے کی راہ ہموار، شق 203 سینیٹ سے بھی منظور
اسلام آباد: سینیٹ اجلاس سے چئیرمین اور ڈپٹی چئیرمین غائب، انتخابی اصلاحات بل 2017ء کثرت رائے سے منظور، اہم ترین شق 203 میں اعتزاز احسن کی ترمیم صرف ایک ووٹ سے مسترد، نااہلی کے باجود نواز شریف کے دوبارہ پارٹی صدر بننے کی راہ ہموار ہو گئی۔پریذائیڈنگ افسر مظفر حسین شاہ کی سربراہی میں سینیٹ اجلاس دوبارہ شروع ہوا تو شق 203 پر ووٹنگ ہوئی۔ اعتزاز احسن نے ترمیم پیش کرتے ہوئے کہا کہ چاہتے ہیں کہ عدالتی سزا یافتہ اور شہریت چھوڑنے والا شخص پارٹی سربراہ بھی نہ بن سکے۔ ترمیم پر ووٹنگ کرائی گئی تو اس کے حق میں 37 اور مخالفت میں 38 ووٹ آئے۔ یوں حکومت صرف ایک ووٹ سے شق 203 منظور کرانے میں کامیاب ہو گئی۔ایم کیو ایم نے نواز شریف کو دوبارہ پارٹی صدر بنانے کیلیے ن لیگ کی حمایت کی جس پر راجہ ظفر الحق اور زاہد حامد نے ایم کیو ایم اراکین کا نشستوں پر جا کر شکریہ ادا کیا۔ اس سے پہلے اراکین کے گوشواروں سے متعلق شق ساٹھ پر دوسری بار ووٹنگ ہوئی تو چئیرمین سینیٹ رضا ربانی ایوان سے چلے گئے۔ رضا ربانی نے کہا کہ انہوں نے اپنے اختیارات ایوان کو دیئے، ایوان نے ان کے فیصلے کے خلاف ووٹ دیا۔ اب اخلاقی طور پر بل کی منظوری تک ان کا اجلاس کی صدرات کرنا درست نہیں ہے۔