مقبول خبریں
یورپین اسلامک سینٹر کے منتظم اعلیٰ سکالر مولانا محمد اقبال کے والد محترم کی وفات پر اظہار تعزیت
اوورسیز پاکستانیوں کیلئے پنجاب میں سرمایہ کاری کے منافع بخش مواقع ہیں،افضال بھٹی
پاک برٹش انٹر نیشنل ٹرسٹ کے چیئرمین چوہدری سرفراز کی جانب سے عشائیہ کی تقریب
وزیراعلیٰ شہباز شریف سے وفد کے ہمراہ وانگ زیوتاؤ کی ملاقات،مختلف امور پر تبادلہ خیال
مقبوضہ کشمیر :بھارتی فوج کے ہاتھوں ایک اور نوجوان شہید،مظاہرے،جھڑپیں
لوٹن ٹائون ہال میں ادبی بیٹھک، لارڈ قربان نے صدارت کی معروف شعرا کرام کی شرکت
برطانیہ کے ساحلی شہر سائوتھ ہیمپٹن میں ملی نغموں کی گونج، ڈپٹی میئر کی خصوصی شرکت
پاکستان کی سیاسی صورتحال، یورپین یونین جمہوریت کے ساتھ کھڑی ہے : ڈاکٹر سجاد کریم
مودی کی سبکی
پکچرگیلری
Advertisement
بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی روہنگیا مسلمانوں کے زخموں پر مزید نمک چھڑکنے لگے
نئی دہلی/ نیپیدو: مسلم دشمنی میں اندھے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی مسلمانوں پر ظلم ڈھانے والی حکومت کی پشت پناہی کرنے میانمار پہنچے، جہاں انہوں نے نوبیل انعام یافتہ آنگ سان سوچی کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس میں روہنگیا مسلمانوں پر تشدد کو فورسز پر حملوں کا ردعمل قرار دیا۔ادھر روہنگیا مسلمانوں کا بے سروسامانی کی حالت میں زمینی، دریائی اور سمندری راستے سے بنگلا دیش پہنچنے کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ 25 اگست سے اب تک 3 لاکھ بے بس لوگ بنگلا دیش پہنچ چکے ہیں۔ کئی خلیج بنگال کی بے رحم موجوں کا نشانہ بن گئے۔ بنگلا دیش پہنچنے والے روہنگیا مسلمانوں نے بتایا کہ بدھ کی صبح تین کشتیاں سمندر میں ڈوب گئیں جس میں 100 افراد سوار تھے۔ ان میں سے 6 لاشیں بہہ کر سمندر کنارے آ چکی ہیں جن میں بچے بھی شامل ہیں۔ دوسری جانب میانمار کی فوج سرحدوں پر بارودی مواد نصب کر رہی ہے تا کہ روہنگیا مسلمان واپس نہ آ سکیں۔ بنگلا دیش نے سرحد پر بارودی سرنگیں نصب کرنے پر احتجاج کیا ہے۔