مقبول خبریں
پاکستان کے نظریاتی استحکام کیلئے مسلم لیگ کو منظم کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے:فدا حسین کیانی
گوادر چیمبر آف کامرس کے نومنتخب صدر گوادر رئیل اسٹیٹ کیلئے اثاثہ ثابت ہونگے: ذیشان چوہدری
کشمیری آزادی کی جنگ لڑ رہےہیں ،یہ انکا پیدائشی حق ہے:چوہدری جاوید ،چوہدری یعقوب
نواز شریف کے دوبارہ پارٹی صدر بننے کی راہ ہموار، شق 203 سینیٹ سے بھی منظور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی فائرنگ، مزید 2 نوجوان شہید
کونسلر وحید اکبر کا آزاد کشمیر کے جسٹس شیراز کیانی کے ا عزاز میں عشائیے کا اہتمام
برطانیہ کے ساحلی شہر سائوتھ ہیمپٹن میں ملی نغموں کی گونج، ڈپٹی میئر کی خصوصی شرکت
ڈاکٹر سجاد کریم کی قیادت میں یورپی پارلیمنٹ کے وفد کا جارحیا پہنچنے پرپرتپاک استقبال
کرپٹ خان
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان کے ستر سالہ جشن آزادی کی تقریب، پاک برطانیہ امن و محبت کیلئے فاختائیں اڑائی گئیں
شفیلڈ پاکستان مسلم سنٹر شفیلڈ کی جانب سے پاکستان کی آزادی کے 70 سال پورے ہونے کی خوشی میں منعقد کی گئی سلسلہ وار تقریبات میں شفیلڈ کی برطانوی پاکستانی کمیونٹی کے ارکان کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی۔ پاکستان مسلم سنٹر کار پارک میں منعقد ہونے والی تقریب میں سبز اور سفید رنگ کے کپڑوں میں ملبوس دو ہزار سے زائد افراد نے حصہ لیا۔ پورا ہفتہ جاری رہنے والی تقریبات میں بیڈمنٹن اور کرکٹ سمیت کھیلوں کے متعدد ٹورنامنٹ شامل تھے۔ محافل مشاعرہ کا اہتمام بھی کیا گیا جبکہ تقریبات کا اختتام دو بڑی تقریبات کے ساتھ ہوا۔ تقریبات میں نہ صرف لوگوں کی بہت بڑی تعداد نے حصہ لیا بلکہ برطانیہ کی تاریخ میں پہلی بار شفیلڈ کی برطانوی پاکستانی کمیونٹی کو پرچم کشائی کی تقریب میں حصہ لینے کا موقع بھی ملا۔ مقامی وقت کے مطابق صبح آٹھ بجے اور پاکستانی وقت کے مطابق رات بارہ بجے شفیلڈ کی کمیونٹی نے برطانیہ اور پاکستان کے قومی ترانوں کی دھنوں کے ساتھ برطانوی اور پاکستانی پرچم لہرائے۔ دلوں کو گرمانے والی اس تقریب میں آتش بازی کے مظاہرے نے رات کے اندھیرے میں آسمان کو روشن کر دیا جسے دیکھنے کے لئے کئی مایہ ناز شخصیات موجود تھیں جن میں ڈپٹی لیفٹیننٹ، کرنل نک ولیمز، سوک میئر اور میئریس، کونسل جارج ڈرکس اور مسز پالین ڈرکس، رودرہیم کی میئر، کونسلر ایو روز کینان، ان کے شوہر پیٹ کینان اور کئی دیگر نمائندے شامل تھے۔ اوپن ایئر میں کئی لوگوں کے سامنے بچوں نے تقسیم اور آزادی کے واقعات پر مبنی پرفارمنس پیش کی۔ بی بی سی کی دستاویزی فلم "میرا خاندان،تقسیم اور میں" میں حصہ لینے والے اسد علی سید بھی ان لاتعداد لوگوں میں شامل تھے جن کے سامنے برطانوی پاکستانیوں کی تیسری اور چوتھی نسل کے بچوں نے یہ پرفارمنس پیش کی۔ پاکستان مسلم سنٹر کے سیکرٹری حفیس رحمان نے کہا کہ سبز اور سفید کپڑوں میں ملبوس پاکستانی پرچم لہراتے برطانوی پاکستانی بچوں کو دیکھ کر تحریک پاکستان کی یاد تازہ ہو گئی ہے اور آج پی ایم سی کے سٹیج پر دکھائی دینے والا یہ سبز سمندر پاکستان کے مثبت مستقبل کا رخ ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ہمارے لئے اعزاز کی بات ہے کہ پاکستان مسلم سنٹر زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد کو اپنی ترقی، اپنے آبائو اجداد کے وطن کی ترقی اور اپنے موجودہ وطن برطانیہ کی ترقی میں اپنا کردار ادا کرنے کے لئے ایک پلیٹ فارم مہیا کر رہا ہے۔ چودہ اگست کو پی ایم سی کار پارک میں یہ تقریبات اپنے عروج پر رہیں جب کھانوں، کپڑوں اور دیگر معلوماتی سٹالز کی بدولت یہ ایک فیملی فن ڈے بن گیا۔ عین مرکز میں بچوں کے لئے باکسنگ رنگ لگایا گیا جبکہ فیس پینٹنگ اور کئی دوسری سرگرمیوں کا اہتمام بھی کیا گیا۔ مہمانوں کا استقبال حلوہ پوری کے ساتھ کیا گیا جس سے سب لوگ خوب لطف اندوز ہوئے۔ پاکستان مسلم سنٹر کے چیئرمین محمد علی نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ قیام پاکستان کے وقت سے یوم آزادی کی تقریبات پاکستان مسلم سنٹر کی سرگرمیوں کا لازمی جزو رہی ہیں اور یہ بات ہمارے لئے فخر کا باعث ہے کہ ایک ہفتہ جاری رہنے والی ان تقریبات میں تین ہزار سے زائد لوگوں نے حصہ لیا اور انہیں شاندار انداز میں کامیاب بنایا۔ ان کا کہنا تھا کہ انٹرنیشنل ٹی وی اینکرز مجھ سے پوچھتے ہیں کہ آیا یہ تقریبات انگلینڈ میں ہی ہو رہی ہیں۔ زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد کی ہزاروں کی تعداد میں شرکت ہمارے سنٹر کے مشن کی تکمیل کے مترادف ہے۔ ان تقریبات کی ایک خاص بات یہ تھی کہ شفیلڈ کے لارڈ میئر، کونسلر ڈینیس فاکس اور سنٹر کے چیئرمین محمد علی نے دونوں ملکوں کے درمیان دوستی، امن اور محبت کی علامت کے طور پر دو فاختائیں اڑائیں۔ ایک مقامی شہری سٹیفن زیکلیوکز کا کہنا تھا کہ کمیونٹی اسی کا نام ہے اور مجھے خوشی ہے کہ محمد علی اور پی ایم سی نے شفیلڈ کی کمیونٹیز کو یکجا کیا۔ تقریبات کے سلسلے میں جمع ہونے والے ہجوم کے ساتھ بین الاقوامی آرٹسٹ اکی خان کے ڈھول کی تھاپ اور لارڈ میئر کی موجودگی نے اس طرح سماں باندھ دیا کہ راہگیر یہ سمجھ بیٹھے کہ یہ چودہ اگست کی نہیں بلکہ شفیلڈ ٹرام لائن فیسٹول کی تقریبات ہیں۔