مقبول خبریں
جموں وکشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل خواتین کے عالمی دن کے حوالے سے تقریبات منعقد کریگی
برطانیہ میں اپنی صلاحیتیں منوانے کے جتنے مواقع ہیں کسی اور ملک میں نہیں: رحمان چشتی و دیگر
پاکستان میں فٹبال کے فروغ کیلئے انٹرنیشنل سوکا فیڈریشن کا قیام، ٹرنک والا فیملی کو خراج تحسین
وزارتِ عظمیٰ کے بعد نواز شریف مسلم لیگ ن کی صدارت سے بھی فارغ
بھارتی ریاستی دہشتگردی کیخلاف مقبوضہ کشمیر میں ہڑتال، تعلیمی ادارے بند
کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی پامالیوں کو رکوانے کے سلسلہ میں پروگرام کا انعقاد
اوورسیز پاکستانیز ویلفیر کونسل کے زیراہتمام یوم یکجہتی کشمیر پر کار ریلی کا انعقاد
راجہ نجابت اور ان کی ٹیم کامسئلہ کشمیرپر متحرک کردار قابل ستائش ہے: سٹوورٹ اینڈریو
عمران خان مارگریٹ اور میں
پکچرگیلری
Advertisement
جو بھی ریفرنس فائل ہو گا، ہم اس کا دفاع کریں گے:وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی
کوئٹہ: وزیر اعظم پاکستان نے صوبائی دارالحکومت میں گورنر بلوچستان اور وزیر اعلیٰ بلوچستان کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج کی میٹنگز میں تین معاملات پر غور کیا گیا، سب سے پہلے صوبے میں امن و امان کی صورتحال پر غور کیا گیا اور اس کی بہتری کیلئے ہر ممکن اقدام اٹھانے کا فیصلہ کیا گیا۔وزیر اعظم نے بتایا کہ دوسرے نمبر پر صوبے میں جاری ترقیاتی منصوبوں پر پیشرفت کا جائزہ لیا گیا اور سابق وزیر اعظم نواز شریف کی حکومت کے شروع کردہ ہر منصوبے کو جاری رکھنے اور مزید پھیلانے کے معاملے پر غور کیا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ ہر ضلع میں گیس کی فراہمی کو یقینی بنانا اور صوبے کے پانی کے مسائل کو حل کرنا اولین ترجیح ہے۔ کچی کینال کا منصوبہ چند روز میں مکمل ہو جائے گا اور صوبے کی ستر ہزار ایکڑ زمین اس سے سیراب ہو گی، چھوٹے ڈیم بھی زیرتعمیر ہیں جو انشاء اللہ جلد مکمل ہو جائیں گے، ٹیوب ویلز کو سولر توانائی پر لائیں گے، ہیلتھ کارڈ سکیم کو ہر ضلع تک پھیلایا جا ئے گا۔وزیر اعظم نے بتایا کہ آج کی میٹنگز میں تیسرے نمبر پر سی پیک کے منصوبوں پر پیشرفت کا جائزہ لیا گیا، یہ منصوبے بھی تیزی سے تکمیل کی جانب بڑھ رہے ہیں اور انشاء اللہ بہت جلد بلوچستان ملک کا امیرترین صوبہ بن جائے گا۔وزیر اعظم نے صحافیوں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ جو بھی ریفرنس فائل ہو گا، ہم اس کا دفاع کریں گے، اپنا دفاع کرنا ہر ادارے کا حق ہے، صوبوں کو جتنے فنڈز دیئے اس کی کوئی مثال نہیں ملتی، صوبوں کو مکمل رائلٹی ملتی ہے، صوبے آج کسی طرح بھی طرح نقصان میں نہیں ہیں، گیس کے حوالے سے سارے صوبے مثبت جا رہے ہیں۔ وزیر اعظم نے مزید کہا کہ سیاسی جماعتوں میں بات چیت کا سلسلہ جاری رہتا ہے، زرداری صاحب نے موقع کا فائدہ اٹھا کر بیان دیا، انہیں ڈائیلاگ میں شامل ہونا چاہئے۔