مقبول خبریں
یورپین اسلامک سینٹر کے منتظم اعلیٰ سکالر مولانا محمد اقبال کے والد محترم کی وفات پر اظہار تعزیت
صدرریاست آزاد جموں و کشمیر سردار مسعود خان کا برطانوی پارلیمنٹ کا دورہ
پاک برٹش انٹر نیشنل ٹرسٹ کے چیئرمین چوہدری سرفراز کی جانب سے عشائیہ کی تقریب
میاں صاحب نظریے کو سمجھتے نہیں، وقت کے ساتھ مؤقف بدلنا نظریہ نہیں ہوتا:بلاول
مقبوضہ کشمیر :بھارتی فوج کے ہاتھوں ایک اور نوجوان شہید،مظاہرے،جھڑپیں
لوٹن ٹائون ہال میں ادبی بیٹھک، لارڈ قربان نے صدارت کی معروف شعرا کرام کی شرکت
برطانیہ کے ساحلی شہر سائوتھ ہیمپٹن میں ملی نغموں کی گونج، ڈپٹی میئر کی خصوصی شرکت
پاکستان کی سیاسی صورتحال، یورپین یونین جمہوریت کے ساتھ کھڑی ہے : ڈاکٹر سجاد کریم
مودی کی سبکی
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ کا پاک بھارت مذاکرات کی بحالی کا مطالبہ
سرینگر: سابق وزیر اعلیٰ مقبوضہ کشمیر فاروق عبد اللہ نے پاک بھارت مذاکرات کی بحالی سمیت مسئلہ کشمیر پر تیسرے فریق کی ثالثی کا مطالبہ کر دیا ہے۔ میڈیا سے گفتگو میں فاروق عبداللہ کا کہنا تھا کہ تعلقات بحالی کی ذمہ داری نریندر مودی کے بجائے منموہن سنگھ اور ملائم سنگھ جیسی شخصیات کو سونپی جائے۔ادھر فاروق عبد اللہ کے بیان پر بھارت میں شدید رد عمل سامنے آیا ہے۔ بی جے پی کے ترجمان نرسیما راؤ نے کہا کہ فاروق عبداللہ حریت پسندوں اور پاکستان کی زبان بول رہے ہیں۔ انہوں نے کشمیر پر ثالثی کو پاکستان کے سامنے گھٹنے ٹیکنے کے مترادف قرار دیا جبکہ کانگریس نے بھی کشمیر پر کسی تیسری قوت کی ثالثی کو مسترد کر دیا۔