مقبول خبریں
امیگریشن قوانین میں نرمی سے برطانوی معیشت اور سیاحوں کو فائدہ ہو گا: افضل خان
نواز شریف کیخلاف عوام نے فیصلہ رد کر کے ثابت کیا وہی اصلی لیڈر ہیں:ن لیگ برطانیہ
تارک وطن بزرگوں نے محنت کا جو بیج بویا تھا آج اسکے ثمرات آنا شروع ہوگئے ہیں
وزیر اعظم گھر درست ضرور کریں، لیکن پاکستان کو تماشا نہ بنائیں: چودھری نثار
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی فائرنگ، مزید 2 نوجوان شہید
کونسلر وحید اکبر کا آزاد کشمیر کے جسٹس شیراز کیانی کے ا عزاز میں عشائیے کا اہتمام
برطانیہ کے ساحلی شہر سائوتھ ہیمپٹن میں ملی نغموں کی گونج، ڈپٹی میئر کی خصوصی شرکت
برما میں مسلمانوں کا قتل عام انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے:وہیپ اینڈریو
کرپٹ خان
پکچرگیلری
Advertisement
بھارتی فوج کے جعلی مقابلے،3 نوجوان شہید، جہادی ترانے پڑھتے 12بچے گرفتار
سرینگر/ ممبئی:مقبوضہ کشمیر میں آپریشن کے دوران بھارتی فوج نے ریاستی دہشت گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے مزید 3 بے گناہ اور نہتے نوجوانوں کو جعلی مقابلے میں شہید کردیا۔اننت ناگ میں جہادی ترانے پڑھتے 12بچوں کو مسجد سے گرفتار کر لیا گیا۔بھارتی فوج کا مورال قائم رکھنے کیلئے ہندو تنظیم وشوا ہندو پریشد اوربجرنگ دل نے 10ہزار کارکن مقبوضہ کشمیربھیجنے کا اعلان کردیا ۔ اطلاعات کے مطابق قابض فورسز نے ضلع پلوامہ میں ترال کے علاقے ستورہ کا محاصرہ کر کے گھر گھر تلاشی اور سرچ آپریشن کے دوران 3بے گناہ اورنہتے نوجوانوں کو گرفتار کر کے جعلی مقابلے میں شہید کر دیا ۔جس کے بعد بھارتی جارحیت کے خلاف لوگ سڑکوں پرنکل آئے اور وادی آزادی کے نعروں سے گونج اٹھی ۔بھارتی میڈیا نے دعویٰ کیاہے کہ خفیہ اطلاع پر فوج نے علاقے کا آپریشن کیاتو مجاہدین سے فائرنگ کا تبادلہ ہوگیااس دوران 3عسکریت پسند گولیوں کا نشانہ بنے ۔ادھر ضلع اننت ناگ میں بھارتی پولیس نے جامع مسجد میں آزادی کے ترانے پڑھتے حریت رہنما مختار احمد وازہ کے 12 سالہ بیٹے ریان مختار سمیت 12 بچوں کو گرفتار کرلیا۔ بھارتی پولیس نے جوتوں سمیت گھس کر مسجد کی بے حرمتی کی ۔اس موقع پر پولیس نے مسجد میں توڑ پھوڑ بھی کی۔ مسجد کی بے حرمتی اور بچوں کی گرفتاری پر وادی میں ہڑتال کی گئی جس کے نتیجے میں کاروباری مراکز، تعلیمی ادارے بند رہے ۔ کئی علاقوں میں بھارتی فورسز، پولیس اور مظاہرین کے درمیان جھڑپیں ہوئیں جس کے نتیجے میں کئی افراد زخمی ہوگئے ۔دریں اثنا حریت لیڈر سید علی گیلانی نے بھارت کے اس بیان کی سخت مذمت کی ہے کہ جموں و کشمیر کے عوام بھارت کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں۔ حریت رہنما نے کہا کہ 95 فیصد کشمیری عوام بھارت سے آزادی چاہتے ہیں، بھارت کشمیر سے اپنی فوجیں نکالے اور انہیں اپنی تقدیر کا فیصلہ کرنے دے ۔ ماس موومنٹ کی چیئرپرسن فریدہ بہن جی نے کہا کہ کشمیری نوجوانوں کی بیش بہا قربانیوں کو ہرگزرائیگاں نہیں جانے دیا جائے گا اور انکے مشن کو ہرقیمت پر پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے گا۔