مقبول خبریں
امیگریشن قوانین میں نرمی سے برطانوی معیشت اور سیاحوں کو فائدہ ہو گا: افضل خان
نواز شریف کیخلاف عوام نے فیصلہ رد کر کے ثابت کیا وہی اصلی لیڈر ہیں:ن لیگ برطانیہ
تارک وطن بزرگوں نے محنت کا جو بیج بویا تھا آج اسکے ثمرات آنا شروع ہوگئے ہیں
وزیر اعظم گھر درست ضرور کریں، لیکن پاکستان کو تماشا نہ بنائیں: چودھری نثار
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی فائرنگ، مزید 2 نوجوان شہید
کونسلر وحید اکبر کا آزاد کشمیر کے جسٹس شیراز کیانی کے ا عزاز میں عشائیے کا اہتمام
برطانیہ کے ساحلی شہر سائوتھ ہیمپٹن میں ملی نغموں کی گونج، ڈپٹی میئر کی خصوصی شرکت
برما میں مسلمانوں کا قتل عام انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے:وہیپ اینڈریو
کرپٹ خان
پکچرگیلری
Advertisement
تحریک حق خودارادیت یورپ کے چیئرمین راجہ نجابت کی جانب سے مشاورتی اجلاس کا انعقاد
لندن :مسئلہ کشمیر کو عالمی فورموں پر اٹھانے کیلئے بیرون ملک مقیم کشمیری مختلف پارلیمنٹ میںقائم گرڈ اور بین الاقوامی سطح پر متحرک کشمیری تنظیمیں مشترکہ مقاصد کیلئے متفقہ لائحہ عمل کے تحت کام کریں گی برطانیہ بھر کے علاوہ یورپ اور آزادکشمیر و پاکستان میں مقیم کشمیریوں اور حکومت آزادکشمیر کو بھی اس جدوجہد میں شامل کیاجائے تحریک آزادی کشمیر میںنازک دور میںداخل ہوچکی ہے اس تقاضا ہے کہ جدید بنیادوں پر سرگرمیاں منظم کی جائیں اور ہرشعبے میں باصلاحیت کشمیریوں کو انکے تجربے سے فائدہ اٹھایا جائے مسئلہ کشمیر کے حل اور مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے علاوہ حکومت آزادکشمیر اور حکومت پاکستان کو بھی ان کی ذمہ داریوں سے آگاہ کرکے کوششیں تیز کی جائیں ستر سال میں کشمیری قوم نے لاکھوںشہیدوں کی قربانیاں دی ہیں جنہیں کسی بھی حالات میں ضائع نہیں ہونے دیاجائے گا مقبوضہ کشمیر اور آزادکشمیر سے تعلق رکھنے والی شخصیات اور تنظیمیں مل جل کر کام کریں گی کیونکہ ریاستی عوام کی آزادی تحریک پوری ریاست کے عوام کا حق خودارادیت ہے جسے اقوام متحدہ پاکستان اور بھارت کے علاوہ پوری عالمی برادری نے تسلیم کیا ہواہے جس پر عملدرآمد کرانے کیلئے ہمیںاپنی صفوںمیں اتحاد پیدا کرنا ہوگا اگلے چند روز میں مختلف مقامات پر مشاورتی اجلاس منعقد کرکے تمام کشمیری تنظیموں اور ہم خیال سیاسی و سماجی اور مذہبی رہنمائوںسے صلاح مشورہ کیاجائیگا اور برطانیہ میں چلنے والی تحریک کو بھی مربوط بنیادوں پرچلانے کا لائحہ عمل طے کیاجائے گا جبکہ دوست ارکان پارلیمنٹ عام عوام اور کشمیریوں کے ہمدردوں کو نا اتفاقی نظر نہ آئے جس سے بھارت کی غاصب قوتیں ناجائز فائدہ اٹھارہی ہیں اس مشاورتی اجلاس کا انعقاد جموں و کشمیر کا حق خودارادیت یورپ کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے کیا تھا جس میںبرطانوی ہائوس آف لارڈزکے تاحیات ان کی لارڈ قربان حسین ،چیئرمین آل پارٹیز کشمیر پارلیمنٹری گروپ آزادکشمیر اسمبلی میں مقبوضہ کشمیر سی تعلق رکھنے والی خاتون ممبر نسیمہ وانی اور اقوام متحدہ میں رجسٹرڈ واحد کشمیری تنظیم جموں و کشمیر کونسل برائے انسانی حقوق کے سیکرٹری جنرل سید نذیر گیلانی ایڈووکیٹ کا اظہار کیا بلکہ 13 جولائی یوم شہدائے کشمیر کے قومی دن کی مناسبت سے منعقدہ اس تقریب میں مستقبل کی منصوبہ بندی کو ان شہیدوں کی یاد میں ایک نئی روشنی کی کرن قرار دیا مقبوضہ کشمیر سے تعلق رکھنے والے حریت کانفرنس کے رہنما اشتیاق احمد ، ڈاکٹر عنایت اللہ اندرابی، پروفیسر شاہد اقبال ، ظفراحمد قریشی ، ڈاکٹر ؟؟ جاویداور وجیحہ شرجیل کے علاوہ روضان خان اور مدثر شاہ نے بھی شرکت کی جموں و کشمیر تحریک حق خودارادیت یورپ کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے اجلاس کو بتایا کہ ان کی تنظیم اور اسکے معاونین جہاں برطانوی سیاستدانوں سے مل کر مسئلہ کشمیر کو یہاں کے ایوانوں میں اٹھاتے رہے ہیں اور 2010 ء کے انتخابات سے لیکر مسلسل تین بار برطانوی پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر پر بحثیں ہوئیں اور کشمیر پارلیمنٹری گروپ میں کشمیری اور پاکستانی نژاد ارکان پارلیمنٹ کے علاوہ ہمارے عہمخیال کشمیر دوست ارکان نے جس انداز میں ہماری نمائندگی کا حق ادا کیا اس پر پوری کشمیری قوم ان کی شکرگزار ہے جبکہ ہائی ویکمب کے ممبر پارلیمنٹ سٹیوبیکر، بریڈ فورڈ ایسٹ کے سابق ممبر پارلیمنٹ بورڈ وارڈ اور بری نارتھ کے سابق ممبر پارلیمنٹ ڈیوڈنٹال کا نام کشمیریوں کی تحریک آزادی میںسنہری حروف سے لکھاجائے گا اسی طر کشمیر گروپ کی قائم مقام چیئرپرسن ڈیبی ابراہیم انسانق حقوق کے حوالے سے جو پروگرام لیکرکام کرنا چاہتی ہیں وہ بھی قابل ستائش ہے اور ہم توقع کرتے ہیں کہ پوری پارلیمنٹ میں فرینڈ آف کشمیر گروپ کی چیئرپرسن اینتھیا میکنٹائر اور انکے ساتھی بھی برطانوی پارلیمنٹ کی طرح جلد بحث کروائیں گی،انہوں نے لارڈ قربان حسین اور سید نذیر گیلانی سے اپیل کی کہ وہ برطانیہ اور اقوام متحدہ میں کشمیریوں کی قیادت کریں اور برطانیہ اور یورپ میں کشمیری تنظیموں اور سیاسی و سماجی رہنمائوں کو قریب لانے میں ہماری معاونت کریں تاکہ ریاستی عوام کی تحریک کو ہم عالمی سطح پر سفارتی امداد مہیا کر سکیں جبکہ نسیم وانی آزاد کشمیر اسمبلی میں واپس جا کر ہماری نمائندگی کریں اور اشتیاق حمید حریت کانفرنس کو بھی بیرون ملک کشمیریوں کی سرگرمیوں سے مربوط کرنے کیلئے آمادہ کریں اس موقع پر سید عنایت اللہ اندرابی نے کہا کہ کشمیری قوم پچھلے ستر سال میں جن حالات سے گزر کر آج اس مقام پر پہنچی ہے اس کا تقاضا ہے کہ ہم ایک منظم پروگرام کے تحت کام کریں جس کیلئے وہ اپنی تمام صلاحیتیں ساتھیوں کو مہیا کرنے کیلئے تیار ہیں،پروفیسر شاہد اقبال نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر سے تعلق رکھنے والا ہر خاندان جن حالات سے گزر رہا ہے اس کی کوئی مثال نہیں ملتی لہٰذا ہمیں تحریکی سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر زیادہ توجہ دینی ہو گی،ظفر احمد قریشی نے کہا کہ ہمیں اب صرف چند پروگراموں کیلئے نہیں بلکہ اگلے تین سال کیلئے سٹریجڈی بنا کر کام کرنا ہو گا اور ہر مکتب فکر کو ساتھ رکھ کر کام کرنا ہو گا،کشمیریوں نوجوانوں میں ہر صلاحیت موجود ہے اور آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والے برٹش کشمیریوں کی پوزیشن اور صلاحیتوں سے بھی ہمیں ہر سطح پر استفادہ حاصل کرنا ہو گا اس موقع پر تمام حاضرین نے متفقہ طور پر فیصلہ کیا کہ13جولائی کے شہیدوں اور حالیہ تحریک میں قربانیوں سے عبارت کشمیریوں کی تحریک کا تقاضا ہے کہ ہم سب مشترکہ طور پر جدو جہد آزادی کو سفارتی محاذ پر منظم کریں ،اس سلسلے میں راجہ نجابت حسین تمام با اثر کشمیریوں اور تنظیموں سے رابطہ کر کے مستقبل کے پروگراموں کا انعقاد کریں گے،اس موقع پر شہیدوں کو ایصال ثواب کیلئے بھی دعا کی گئی اور برٹش کشمیریوں سے اپیل کی گئی کہ وہ برطانیہ بھر میں کشمیر پر ہونے والی ہر تقریب میں شامل ہو کر یکجہتی کا مظاہرہ کریں۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر