مقبول خبریں
راجہ طاہر مسعود کو ملکہ برطانیہ کی طرف سے کمیونٹی کی خدمات پر برٹش ایمپائر میڈل سے نوازا گیا
برطانیہ میں پاکستانی ہائی کمشنر کی جانب سے پاکستانی کمیونٹی کیلئے عید الفطر اوپن ہائوس کا اہتمام
مسلم ہینڈز انٹرنیشنل کی جانب سے شامی تارکین وطن کیلئے خوراک کا کانوائے روانہ کر نے کی تقریب
چیئرمین تحریک انصاف عمران خان بھی کروڑوں روپے کے اثاثوں کے مالک
محبوبہ مفتی کی حکومت ختم، صدر رام ناتھ کووند نے گورنر راج نافذ کر دیا
شیر خدا نے نبی پاک کی آواز پر لبیک کہہ کر اسلام سے محبت اور وفا کی عمدہ مثال قائم کی
پیپلزپارٹی ہی آئندہ انتخابات میں چاروں صوبوں میں اکثریت حاصل کریگی:میاں سلیم
پاکستان کشمیر ویلفیئر ایسوسی ایشن کے ڈائریکٹر پروفیسر فیاض رشید و دیگر کا عید ملن پارٹی کا اہتمام
وصال و ہجر کا قصہ بہت پرانا ہے
پکچرگیلری
Advertisement
خالد محمود خالق سے ’’ ڈی آئی جی ‘‘مظفر آباد ہیڈ کوارٹرز آزاد کشمیر پولیس کی ملاقات
بریڈ فورڈ:صدر آزاد کشمیر کے سابقہ میڈیا ایڈوائزر،اینڈ ٹریول بریڈ فورڈ کے خالد محمود خالق سے ’’ ڈی آئی جی ‘‘مظفر آباد ہیڈ کوارٹرز آزاد کشمیر پولیس ملاقات کی،سردار گلفراز خان نے زم ٹریول بریڈ فورڈ کا دورہ کیا اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جس طرح کمیونٹی کی خدمت کر ر ہے ہیں انہوں نے یہاں پر اور آزاد کشمیر میں بھی آپ مبارک باد کے مستحق ہیں اور ہمیں اس پر فخر اور ناز ہے صرف یہی نہیں بلکہ آزاد کشمیر میں گورنمنٹ سرکاری ملازموں سے رابطے میں رہنا اور لوگوں کے مسائل حل کروانا میں سب سے خدمت اول ترجیح ہے آپ کی سیاسی و سماجی،دینی حلقوں میں قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں اور آپکی بڑی عزت کی جاتی ہے اس لئے میں آپ کے پاس چل کر آیا ہوں،میری طرف سے اور پولیس کے ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے آپکو مبارک دیتا ہوں اور مکمل تعاون کا یقین دلاتا ہوں اس موقع پر حاجی محمد سلیم خان نے کہا ہمارے تارکین وطن کیلئے ڈی آئی جی صاحب اور خالد محمود خالق کی خدمات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں جبکہ دیگر اظہار خیال کرنے والوں میں محمد عظیم،عاطف اکرام،مسعود احمد مغل نے اپنے خیالات کا اظہار کیا،خالد محمود خالق نے ڈی آئی جی کا بریڈ فورڈ آمد اور زم ٹریول کا دورہ کرنے پر دل کی گہرائیوں سے شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ڈی آئی جی صاحب جب میرپور میں ایس پی تھے تو تارکین وطن کیلئے خدمت حاضر تھے اور ڈی آئی جی کے دوران ضلع میرپور میں انکی خدمات کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔