مقبول خبریں
جموں وکشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل خواتین کے عالمی دن کے حوالے سے تقریبات منعقد کریگی
برطانیہ میں اپنی صلاحیتیں منوانے کے جتنے مواقع ہیں کسی اور ملک میں نہیں: رحمان چشتی و دیگر
پاکستان میں فٹبال کے فروغ کیلئے انٹرنیشنل سوکا فیڈریشن کا قیام، ٹرنک والا فیملی کو خراج تحسین
وزارتِ عظمیٰ کے بعد نواز شریف مسلم لیگ ن کی صدارت سے بھی فارغ
بھارتی ریاستی دہشتگردی کیخلاف مقبوضہ کشمیر میں ہڑتال، تعلیمی ادارے بند
کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی پامالیوں کو رکوانے کے سلسلہ میں پروگرام کا انعقاد
اوورسیز پاکستانیز ویلفیر کونسل کے زیراہتمام یوم یکجہتی کشمیر پر کار ریلی کا انعقاد
راجہ نجابت اور ان کی ٹیم کامسئلہ کشمیرپر متحرک کردار قابل ستائش ہے: سٹوورٹ اینڈریو
عمران خان مارگریٹ اور میں
پکچرگیلری
Advertisement
تحقیقاتی ٹیم ایک طرف، قوم دوسری طرف جا رہی ہے، احتساب نہیں تماشہ ہو رہا ہے:نواز شریف
لندن: سعودی عرب میں عمرے کی ادائیگی کے بعد وزیر اعظم اپنے خاندان سمیت عید منانے اور علاج کی طبی معائنہ کرانے کی غرض سے برطانیہ پہنچ گئے۔ لندن میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم نواز شریف نے ایک بار پھر مخالفین کو آڑے ہاتھوں لیا۔ ان کا کہنا تھا کہ پانامہ کا معاملہ میری سمجھ سے باہر ہے، جے آئی ٹی سے پوچھا تھا کہ کیا کوئی کرپشن یا کمیشن کا کیس ہے؟ پانامہ میں ایسا کچھ نہیں وہ اس کا جواب نہیں دے سکے تھے۔ وزیر اعظم نے مزید کہا کہ میرے سارے دور سب کے سامنے ہیں، 1972ء میں ہماری فیکٹری کا معاوضہ نہیں دیا گیا، سوال تو میرا بنتا ہے مگر اس سے زیادہ اور کیا تماشہ ہو سکتا ہے کہ الٹا میں اور میری نسلیں جواب دے رہی ہیں، یہ تماشہ ہو رہا ہے اور ہم دیکھ رہے ہیں۔ وزیر اعظم نے مزید کہا کہ دھرنے کیوجہ سے چینی صدر کا دورہ لیٹ ہوا، دھاندلی کا الزام لگانے والے الیکشن ہار گئے تھے، جتنے بھی ضمنی انتخابات ہوئے (ن) لیگ نے جیتے مگر ان کو چین نہیں آتا۔وزیر اعظم نے مزید کہا کہ جے آئی ٹی تو 2018ء میں پاکستان کے عوام کی لگے گی، ہمارا کاروبار 80 سال پر محیط ہے، یہ احتساب نہیں مذاق ہے، قوم کا وقت ضائع کیا جا رہا ہے، کرپشن تو دور کی بات کوئی ہماری حکومت پر انگلی بھی نہیں اٹھا سکتا۔ وزیر اعظم بولے، تماشہ صرف ہمارے خاندان کیخلاف ہو رہا ہے، وہ سازش کرکے جال بننا چاہتے ہیں، امپائر کی انگلی اٹھنے کا انتظار کرنے والوں سے پوچھا جائے کہ ان کا مطلب کیا ہے؟ ان کے اندر سازش اور بغض بھرا ہوا ہے، ان کو 2013ء میں شکست ہوئی جسے برداشت نہیں کر سکے ۔وزیر اعظم نے یہ بھی کہا کہ پاکستان ترقی کر رہا ہے، ترقی کے دشمن پاکستان کیخلاف سازش کرتے ہیں، یہ وہ سازشی سیاستدان ہیں جن کو کوئی تجربہ نہیں۔ وزیر اعظم نے دعویٰ کیا کہ لوڈ شیڈنگ جلد ختم ہو گی۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ جے آئی ٹی کی تاریخ سب کے سامنے ہے، جے آئی ٹی کی تاریخ وٹس ایپ کال سے شروع ہوئی تھی، جے آئی ٹی اور طرف اور قوم اور طرف جا رہی ہے۔ وزیر اعظم نے یہ بھی کہا کہ دہشتگردی کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے، توجہ دوسری طرف ہونے سے سٹاک مارکیٹ نیچے آ گئی، فوج کیساتھ ملکر دہشتگردی کا بھرپور مقابلہ کریں گے، دہشتگردی کے ناسور کو جڑ سے ختم کریں گے اور ان سازشوں کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔