مقبول خبریں
امیگریشن قوانین میں نرمی سے برطانوی معیشت اور سیاحوں کو فائدہ ہو گا: افضل خان
نواز شریف کیخلاف عوام نے فیصلہ رد کر کے ثابت کیا وہی اصلی لیڈر ہیں:ن لیگ برطانیہ
تارک وطن بزرگوں نے محنت کا جو بیج بویا تھا آج اسکے ثمرات آنا شروع ہوگئے ہیں
وزیر اعظم گھر درست ضرور کریں، لیکن پاکستان کو تماشا نہ بنائیں: چودھری نثار
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی فائرنگ، مزید 2 نوجوان شہید
کونسلر وحید اکبر کا آزاد کشمیر کے جسٹس شیراز کیانی کے ا عزاز میں عشائیے کا اہتمام
برطانیہ کے ساحلی شہر سائوتھ ہیمپٹن میں ملی نغموں کی گونج، ڈپٹی میئر کی خصوصی شرکت
برما میں مسلمانوں کا قتل عام انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے:وہیپ اینڈریو
کرپٹ خان
پکچرگیلری
Advertisement
تحقیقاتی ٹیم ایک طرف، قوم دوسری طرف جا رہی ہے، احتساب نہیں تماشہ ہو رہا ہے:نواز شریف
لندن: سعودی عرب میں عمرے کی ادائیگی کے بعد وزیر اعظم اپنے خاندان سمیت عید منانے اور علاج کی طبی معائنہ کرانے کی غرض سے برطانیہ پہنچ گئے۔ لندن میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم نواز شریف نے ایک بار پھر مخالفین کو آڑے ہاتھوں لیا۔ ان کا کہنا تھا کہ پانامہ کا معاملہ میری سمجھ سے باہر ہے، جے آئی ٹی سے پوچھا تھا کہ کیا کوئی کرپشن یا کمیشن کا کیس ہے؟ پانامہ میں ایسا کچھ نہیں وہ اس کا جواب نہیں دے سکے تھے۔ وزیر اعظم نے مزید کہا کہ میرے سارے دور سب کے سامنے ہیں، 1972ء میں ہماری فیکٹری کا معاوضہ نہیں دیا گیا، سوال تو میرا بنتا ہے مگر اس سے زیادہ اور کیا تماشہ ہو سکتا ہے کہ الٹا میں اور میری نسلیں جواب دے رہی ہیں، یہ تماشہ ہو رہا ہے اور ہم دیکھ رہے ہیں۔ وزیر اعظم نے مزید کہا کہ دھرنے کیوجہ سے چینی صدر کا دورہ لیٹ ہوا، دھاندلی کا الزام لگانے والے الیکشن ہار گئے تھے، جتنے بھی ضمنی انتخابات ہوئے (ن) لیگ نے جیتے مگر ان کو چین نہیں آتا۔وزیر اعظم نے مزید کہا کہ جے آئی ٹی تو 2018ء میں پاکستان کے عوام کی لگے گی، ہمارا کاروبار 80 سال پر محیط ہے، یہ احتساب نہیں مذاق ہے، قوم کا وقت ضائع کیا جا رہا ہے، کرپشن تو دور کی بات کوئی ہماری حکومت پر انگلی بھی نہیں اٹھا سکتا۔ وزیر اعظم بولے، تماشہ صرف ہمارے خاندان کیخلاف ہو رہا ہے، وہ سازش کرکے جال بننا چاہتے ہیں، امپائر کی انگلی اٹھنے کا انتظار کرنے والوں سے پوچھا جائے کہ ان کا مطلب کیا ہے؟ ان کے اندر سازش اور بغض بھرا ہوا ہے، ان کو 2013ء میں شکست ہوئی جسے برداشت نہیں کر سکے ۔وزیر اعظم نے یہ بھی کہا کہ پاکستان ترقی کر رہا ہے، ترقی کے دشمن پاکستان کیخلاف سازش کرتے ہیں، یہ وہ سازشی سیاستدان ہیں جن کو کوئی تجربہ نہیں۔ وزیر اعظم نے دعویٰ کیا کہ لوڈ شیڈنگ جلد ختم ہو گی۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ جے آئی ٹی کی تاریخ سب کے سامنے ہے، جے آئی ٹی کی تاریخ وٹس ایپ کال سے شروع ہوئی تھی، جے آئی ٹی اور طرف اور قوم اور طرف جا رہی ہے۔ وزیر اعظم نے یہ بھی کہا کہ دہشتگردی کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے، توجہ دوسری طرف ہونے سے سٹاک مارکیٹ نیچے آ گئی، فوج کیساتھ ملکر دہشتگردی کا بھرپور مقابلہ کریں گے، دہشتگردی کے ناسور کو جڑ سے ختم کریں گے اور ان سازشوں کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔