مقبول خبریں
امیگریشن قوانین میں نرمی سے برطانوی معیشت اور سیاحوں کو فائدہ ہو گا: افضل خان
نواز شریف کیخلاف عوام نے فیصلہ رد کر کے ثابت کیا وہی اصلی لیڈر ہیں:ن لیگ برطانیہ
تارک وطن بزرگوں نے محنت کا جو بیج بویا تھا آج اسکے ثمرات آنا شروع ہوگئے ہیں
وزیر اعظم گھر درست ضرور کریں، لیکن پاکستان کو تماشا نہ بنائیں: چودھری نثار
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی فائرنگ، مزید 2 نوجوان شہید
کونسلر وحید اکبر کا آزاد کشمیر کے جسٹس شیراز کیانی کے ا عزاز میں عشائیے کا اہتمام
برطانیہ کے ساحلی شہر سائوتھ ہیمپٹن میں ملی نغموں کی گونج، ڈپٹی میئر کی خصوصی شرکت
برما میں مسلمانوں کا قتل عام انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے:وہیپ اینڈریو
کرپٹ خان
پکچرگیلری
Advertisement
انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں کی بھارت میں اقلیتوں کیساتھ ناروا سلوک بارے یاداشت پیش
لندن :انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں کے سرکردہ نمائندوں نے بھارت میں اقلیتوں کے ساتھ ہونے والے ناروا سلوک کو اجگر کرنے کیلئے ایک مہم کا آغاز کردیا ہے اس سلسلے میں رہنمائوں نے برطانوی وزیراعظم ٹریسا مے کی سرکاری رہاشی گاہ واقع 10 ڈاوننگ سٹریت جاکرایک یاداشت پیش کی جس میں کہا ہے کہ برطانیہ میں ایک جمہوری حکومت ھے اور برطانیہ اقوام متحدہ کی سیکورٹی کونسل کا مستقل ممبر ملک ھے اس لیے برطانیہ پر زمہ داری عائد ہوتی ہے کہ بین الاقوامی قوانین برائے انسانی حقوق کے بارے اور جینیوا کنونشن 1951 کے تحت اپنی زمہ داریوں سے عہدہ برآ ہونا چاہئے برطانیہ کشمیر کے بارے میں اقوام متحدہ کے منظور شدہ حق خودارادیت پر عملدرآمد کروانے کے اقدامات اپنی خارجہ پالیسی کے تحت کرے تاکہ کشمیریوں کو انکا تسلیم شدہ حق خودارادیت مل سکے ہندوتوا کی آبیاری کرنے والی بھارتی حکومت کشمیر ،بھارتی پنجاب اور دیگر ریاستوں میں ظلم اور بربریت کے پہاڑ توڑ رہی ہے اور کشمیر میں انسانوں کو ہیومین شیلڈ بنا کر انکی نسل کشی کر رہی ہے اس لیے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر بھارتی حکومت کے ہاتھ روکنے ضروری ہیں تاکہ کشمیر اور پنجاب کی عوام کو حق خودارادیت کا حصول ممکن ہو سکے وفد میں چیرمین برطانوی ہاوس اف پارلیمنٹ کے رکن لارڈ قربان حسین، لارڈ نذیر احمد، کشمیر کنسرن کے سرپرست اعلیٰ پروفیسر نزیر احمد شال، پی این ایس ڈی کے سیکٹریری بیرسٹر رنجیت سنگھ سراے جوگا سنگھ، مسٹر سوہتا شامل تھے جبکہ لارڈ نذیر احمد پارلیمنٹرین فار حق خودارادیت کے چیئرمین بھی ہیں