مقبول خبریں
پاک سر زمین پارٹی کے زیر اہتمام پاکستان کے 70ویں یوم آزادی کے موقع پر رنگا رنگ تقریب
شیڈو چانسلر جان مکڈونل کی ایم پی تھرک لیبر پارٹی کی دعوت پر گریز آمد
کشمیری مسئلہ کشمیر کے پُرامن حل کے لیے عالمی برادری کے کردار کے خواہش مند ہیں
اسحاق ڈار کے خلاف ریفرنس، نیب نے ایس ای سی پی حکام کو طلب کر لیا
بھارت کا یوم آزادی،دنیا بھر میں کشمیریوں نے یوم سیاہ منایا، مودی کے پتلے نذرآتش
حسین شہید سرور کا سجادہ نشین بساہاں شریف پیر سید علی رضابخاری کے اعزاز میں استقبالیہ
عمران خان نے تمام بڑے چوروں کو عوامی عدالتوں میں لا کھڑا کیا ہے:بابر اعوان
خالد محمود خالق سے ’’ ڈی آئی جی ‘‘مظفر آباد ہیڈ کوارٹرز آزاد کشمیر پولیس کی ملاقات
کرپٹ خان
پکچرگیلری
Advertisement
نواز شریف کے کاروباری فوائد، بھارت کیخلاف آواز نہیں اٹھائیں گے:چوہدری بشیر رٹوی
مانچسٹر:پاکستان کی موجودہ حکومت کو مسئلہ کشمیر اور مقبوضہ کشمیر میں نہتے لوگوں پر بھارتی سکیورٹی اداروں کی جانب سے ڈھائے جانے والے انسانیت سوز وحشیانہ مظالم کو نہ ہی سنجیدگی سے لے رہے ہیں نہ ہی دلچسپی ہے،وزیر اعظم میاں نواز شریف وفود لیکر سعودی عرب امت مسلمہ کے اندر پائی جانے والی کشیدگی بارے تو فکر مند ہیں لیکن کشمیریوں پر ہونے والے ظلم و ستم بارے محض بیان بازی کے عملی طور پر ایسے اقدامات اٹھانے سے قاصر ہیں،اس کی وجہ بالکل عیاں ہے کہ جہاں انکے ذاتی و کاروباری فوائد ہیں وہ کبھی بھی بھارت کے خلاف آواز نہیں اٹھائیں گے یہ انتہائی افسوسناک بات ہے کہ مقبوضہ کشمیر کے اندر اتنے سنگین اور گھمبیر مسائل ہیں کہ اگر خلوص نیت سے انہیں بین الاقوامی سطح پر اٹھایا جائے اور جب وزیر اعظم مشرق وسطیٰ کے سرکاری دوروں پر وفود لیکر جاتے ہیں تو وہاں جا کر اگر یہ لب کشائی بھی کر دیں کہ وہ بھارت پر سفارتی و تجارتی دبائو ڈالیں کہ وہ کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے مظالم بند کر کے انکو پیدائشی حق حق خود ارادیت دے تو کوئی وجہ نہیں عالمی و مشرقی وسطیٰ کی تجارتی منڈی میں بھارت معیشت کا نقصان ہونے کی وجہ سے مسئلہ کشمیر کے حل بارے سنجیدگی اختیار نہ کرے،ان خیالات کا اظہار مسلم کانفرنس برطانیہ کے صدر چوہدری بشیر احمد رٹوی نے میڈیا سے گفتگو کے دوران انتہائی افسوس کے ساتھ کیا،انہوں نے مزید کہا کہ آج کے مادی طور پر ذاتی مفادات کو قومی پر ترجیح دی جاتی ہے یہی وجہ ہے جس سے تحریک آزادی کشمیر پایہ تکمیل کونہیں پہنچ پائی،وقت آ گیا ہے کہ اب کشمیریوں کو اپنی صفوں میں مکمل اتحاد و اتفاق کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک نکاتی ایجنڈے کے تحت مسئلہ کشمیر کو حل کروانے کیلئے کردار ادا کرنا ہو گا۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر