مقبول خبریں
روہنگیا مسلمانوں کی مذہب کے نام پر نسل کشی قابل قبول نہیں: افضل خان
اوورسیز پاکستانی کا ایک کروڑ روپے مالیت کا مکان ناجائز قبضہ سے چھڑالیاگیا
ڈاکٹر افضل جاوید ورلڈ سائیکائیٹرک ایسوسی ایشن (WAP) کے صدر منتخب
ہر ادارہ اپنے دائرے میں کام کرے تو ملک ترقی کرے گا: وزیر داخلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جبرکیخلاف مکمل ہڑتال، زبردست احتجاجی مظاہرے
لوٹن ٹائون ہال میں ادبی بیٹھک، لارڈ قربان نے صدارت کی معروف شعرا کرام کی شرکت
برطانیہ کے ساحلی شہر سائوتھ ہیمپٹن میں ملی نغموں کی گونج، ڈپٹی میئر کی خصوصی شرکت
پاکستانی کمیونٹی سنٹر مانچسٹر میں کبوتر پروری کا سالانہ کنونشن، تقسیم انعامات کی تقریب
مودی کی سبکی
پکچرگیلری
Advertisement
دہشت گردی میں جاں بحق ہونیوالوں کی یاد میں میئر لندن کی زیرقیادت باسیوں کا اجتماع
لندن:برطانوی دارالحکومت میں ہفتے کی رات دہشت گردی کی کارروائی میں موت کا شکار ہونے والوں کی یاد میں لندن کے سینکڑوں باسیوں کا اجتماع صادق خان کی زیرقیادت منعقد ہوا۔ لندن کے میئر کے ہمراہ میٹروپولیٹن پولیس کے سینئر افسران کے علاوہ پیرامیڈیکل اور فائر بریگیڈ کا عملہ بھی سٹی ہال کے نزدیک پوٹرز فیلڈ پارک میں منعقد کی گئی اس سروس میں شریک ہوا۔ آرچ بشپ آف کینٹربری بھی اس حملے کا نشانہ بننے والوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے موجود تھے جس میں سات افراد موت کا شکار ہو گئے اور تقریباً پچاس زخمی ہو گئے۔ مختلف ثقافتوں سے تعلق رکھنے والے شرکاء سمیت امبر روڈ اور ڈیانے ایبٹ کے ہمراہ اظہار خیال کرتے ہوئے صادق خان نے کہا کہ لندن دہشت گردی سے ہرگز نہیں ٹوٹے گا اور انتہاپسندی کو شکست ہو کے رہے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنے شہر پر ہونے والے اس وحشیانہ حملے میں جانیں کھونے والوں اور زخمی ہونے والے افراد کی یاد میں آج یہاں ایک ہو کر کھڑے ہیں۔ لندن، ہمارا شہر، ہمارے لوگ، ہماری اقدار اور ہمارا طرززندگی اس بزدلانہ حملے کے خلاف کھڑے ہیں۔ صادق خان نے کہا کہ لندن کے میئر کی حیثیت سے میں بیمار اور شیطان ذہنیت کے حامل اور گھنائونے جرم کے مرتکب انتہاپسندوں کو واضح پیغام دینا چاہتا ہوں کہ ہم تمہیں شکست دے کے رہیں گے اور تم جیت نہیں پائو گے۔ انہوں نے کہا کہ ایک محب وطن برطانوی مسلمان کی حیثیت سے میں یہ کہتا ہوں کہ تم لوگ میرے نام پر یہ بھونڈی کارروائیاں نہیں کر رہے۔ تمہاری بگڑی ہوئی آئیڈیالوجی کا اسلام کی سچی اقدار کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے اور تم ہمارے شہر کو تقسیم کرنے میں کبھی کامیاب نہیں ہو پائو گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہماری تمام تر محبت و عقیدت متاثرین کے اہل خانہ اور زخمیوں کے ساتھ ہے اور ہم اپنی باہمت ایمرجنسی سروسز اور لندن کے ان دلیر باسیوں کے شکرگزار ہیں جنہوں نے اپنی زندگیاں دائو پر لگا دیں۔ تم ہم میں سے بہترین ہو۔ صادق خان نے کہا کہ ہمارا شہر آج کی رات غم وغصے میں ڈوبا ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ پوری طرح پرعزم بھی ہے کیونکہ ہمارا اتحاد اور محبت ہر حال میں انتہاپسندوں کی نفرت سے زیادہ مضبوط ہو گی۔ لندن دہشت گردی سے کبھی نہیں ٹوٹے گا۔ ہم دہشت گردوں کو شکست دے کے رہیں گے۔ سٹی آف لندن پولیس سے کمشنر ایان ڈائسن اور کمانڈر جین گائیفورڈ بھی اس سروس میں شریک تھے۔ گزشتہ چند ماہ کے دوران پوٹرز فیلڈ پارک میں مشعلیں روشن کرنے کا یہ دوسرا واقعہ ہے۔ پہلی بار اس کا اہتمام ویسٹ منسٹر پر دہشت گردی کے حملے کے بعد کیا گیا تھا۔ اس موقع پر ہزاروں راہ گیر اور کارکن لندن برج اور بورو مارکیٹ میں جائے وقوعہ کے نزدیک جمع ہوئے اور وہاں پھول رکھے اور کچھ دیر خاموشی اختیار کی۔ کئی لوگ دوپہر کے کھانے کے وقفے کے دوران اظہار عقیدت کے لئے وہاں آئے جبکہ راہگیر بھی اس جگہ سے گزرتے ہوئے یہاں کچھ دیر کے لئے رکے۔ ایک گلدستے کے ساتھ لگے ایک نوٹ پر لکھا تھا، تمہارا شہر، میرا شہر، ہمارا لندن ۔ کئی دوسری تحریروں میں بھی اسی طرح عزم وعقیدت کے جذبات کا اظہار کیا گیا تھا۔ گزشتہ روز صبح ہزاروں لوگ لندن برج کی طرف واپس آئے البتہ جائے وقوعہ پر مسلح پولیس موجود رہی۔ لندن برج دوبارہ کھولا گیا تو کئی لوگ شدید تعطل کے انتباہ کے باوجود ریل اور ٹیوب ٹرینوں کے ذریعے سنٹرل لندن کی طرف آئے۔ کئی مسافروں کو معمولی تاخیر کا سامنا بھی کرنا پڑا جبکہ علاقے کے آس پاس کافی رش رہا جہاں کئی سڑکیں ابھی تک بند ہیں اور پولیس نے اپنی فورنزک تحقیقات جاری رکھی ہوئی ہیں۔ دوسری جانب ویسٹ منسٹر، لیمبیتھ، اور واٹر لو کے پلوں پر رات کو کنکریٹ اور میٹل کے بیریئر لگا دئیے گئے۔ خیال ہے کہ مستقبل میں اس نوعیت کے واقعات کی رو ک تھام کے لئے شہر بھر کے پلوں پر فزیکل اقدامات کئے جائیں گے۔ ٹیوب سروسز معمول کے مطابق چل رہی ہیں۔ قبل ازیں میٹروپولیٹن پولیس کمشنر نے اس عزم کا اظہار کیا کہ افسران زیادہ تیاری کے ساتھ موجود رہیں گے اور لوگوں کو تسلی دلانے کے لئے مزید مسلح افسران بھی سڑکوں پر آ جائیں گے۔ ہسپتالوں نے سکیورٹی اقدامات بھی بڑھا دئیے ہیں جبکہ لندن برج کے گائیز ہاسپیٹل اور قریبی سینٹ تھامس ہاسپیٹل میں عملہ بڑھا دیا گیا ہے۔