مقبول خبریں
سیاسی ،سماجی کمیونٹی شخصیت بابو لالہ علی اصغر کا مقبوضہ کشمیر کی صورتحال بارے میٹنگ کا انعقاد
بھارتی ظلم و جبر؛ برطانیہ کے بعد امریکی اخبارات میں بھی مسئلہ کشمیر شہہ سرخیوں میں نظر آنے لگا
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز اورسیمینارز منعقد کریگی : راجہ نجابت
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت کا کشمیر پٹیشن پر دستخطی مہم کا آغاز ،10ستمبر کو پیش کی جائیگی
کافر کو جو مل جائے وہ کشمیر نہیں ہے!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
برٹش ہائی کمیشن اسلام آباد کے زیراہتمام منعقدہ تصویری مقابلہ یاسر محمود نے جیت لیا
لندن:پاک برطانیہ تعلقات کے 70 سال کی خوشی میں برٹش ہائی کمیشن اسلام آباد کے زیراہتمام منعقدہ تصویری مقابلہ یاسر محمود نے جیت لیا۔ فروری میں شروع ہونے والے اس مقابلے میں بے پناہ دلچسپی دیکھنے میں آئی اور برطانیہ اور پاکستان دونوں ممالک سے ایمیچور، سیمی پروفیشنل اور پروفیشنل فوٹوگرافروں سے 400 اعلیٰ معیار کی انٹریز موصول ہوئیں۔ یاسر محمود کو ان کی تصویر Let s Celebrate 70 years of relationship پر انعام کے طور پر فوٹوگرافی کے آلات دئیے جائیں گے۔ ججوں کے پینل میں کنٹری ڈائریکٹر برٹش کونسل پاکستان روزمیری ہل ہورسٹ، سینئر فوٹوگرافر اور اسسٹنٹ کنٹرولر کریئیٹو (آئی ٹی) پاکستان اظہر حفیظ اور فوٹو جرنلسٹ سارا فرید شامل تھے۔ برٹش ہائی کمشنر تھامس ڈریو سی ایم جی نے اس موقع پر مقابلے کے لئے تصویریں بھیجنے والے تمام افراد کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ معیار کافی بلند تھا اور یہ طے کرنا مشکل تھا کہ کس تصویر نے ہمارے موضوع Shared History and Shared Future کا بہترین انداز میں احاطہ کیا۔ انہوں نے بتایا کہ دوطرفہ تعلقات کے ستر سال کی خوشی میں ہم پورا سال مزید تقریبات اور مقابلوں کا اہتمام کریں گے۔ تصویری مقابلہ جیتنے والے یاسر محمود کا کہنا تھا کہ یہ مقابلہ جیتنے پر مجھے بہت خوشی ہوئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ میں نے اپنی تصویر میں نوجوان طلبہ کو لیا جو پاکستان کا مستقبل ہیں اور ہمارے تعلیمی نظام کے لئے برطانیہ کی معاونت سے بھی مستفید ہو رہے ہیں۔ یہ تصویر آئندہ ہفتے پاکستان میں ملکہ برطانیہ کی سالگرہ کے سلسلے میں ہونے والی تقریبات میں پیش کی جائے گی اور بعد ازاں پاکستان اور برطانیہ میں ہونے والی تصویری نمائشوں میں اسے شامل کیا جائے گا۔ یہ تصویر برطانیہ اور پاکستان کے درمیان ستر سالہ تعلقات کے سلسلے میں تیار کی جانے والی خصوصی تصویری کتاب میں بھی شائع کی جائے گی۔