مقبول خبریں
سیاسی ،سماجی کمیونٹی شخصیت بابو لالہ علی اصغر کا مقبوضہ کشمیر کی صورتحال بارے میٹنگ کا انعقاد
بھارتی ظلم و جبر؛ برطانیہ کے بعد امریکی اخبارات میں بھی مسئلہ کشمیر شہہ سرخیوں میں نظر آنے لگا
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز اورسیمینارز منعقد کریگی : راجہ نجابت
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت کا کشمیر پٹیشن پر دستخطی مہم کا آغاز ،10ستمبر کو پیش کی جائیگی
کافر کو جو مل جائے وہ کشمیر نہیں ہے!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کا دورہ برطانیہ، اعلیٰ سول، فوجی قیادت کیساتھ ملاقاتیں
لندن:پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے برطانیہ کے تین روزہ سرکاری دورہ کے دوران برطانیہ کی اعلیٰ سول اور فوجی قیادت کے ساتھ ملاقاتوں کا سلسلہ شروع کر دیا ہے،جنرل قمر جاوید باجوہ نے پیر کو برطانوی وزارت دفاع کا دورہ کیا،وزارت دفاع پہنچنے پر برطانوی جی ایس سرنک کارٹر نے ان کا استقبال کیا،بعد ازاں پاکستانی آرمی چیف کو ہارس گارڈز سکوائر پر گارڈ آف آنر پیش کیا گیا،جنرل قمر جاوید باجوہ نے یوکے چیف آف ڈیفنس سٹاف ’’سی ڈی ایس ‘‘ ایئر چیف مارشل سر سٹیووٹ پیچ،خصوصی نمائندہ برائے افغانستان و پاکستان مسٹر اوون جینکنس کے علاوہ امریکی ریسولوٹ سپورٹ مشن ’’آر ایس ایم ‘‘ کمانڈر جنرل جان نکولسن سے علیحدہ علیحدہ ملاقاتیں کیں،ان ملاقاتوں میں باہمی امور،علاقائی جیو پولیٹیکل صورتحال خصوصاً افغانستان کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا،برطانوی لیڈر شپ اور آر ایس ایم کمانڈر نے امن و استحکام کے قیام میں پاکستان اور پاک آرمی کے کردار کا اعتراف کیا اور اسے سراہا،پاکستان کے آرمی چیف نے کہا کہ پاکستان امن پسند ملک ہے اور وہ علاقے میں دیر پا امن و استحکام کیلئے اپنا مثبت کردار ادا کرتا رہے گا،آرمی چیف نے زور دیا کہ افغانستان میں امن کا قیام مشترکہ مفاد میں ہے اور پاکستان اس سلسلے میں اپنا مثبت کردار ادا کرتا رہے گا اور وہ افغانستان کے ساتھ قریبی کام کرنے کیلئے تیار ہے،انہوں نے کہا کہ پاک افغان باہمی بارڈر سیکورٹی میکنزم انتہائی اہمیت کا حامل ہے اور دونوں ملکوں کیلئے اسے ترجیح دینے کی ضرورت ہے،اس موقع پر انہوں نے پاکستان کی جانب کئے گئے متعدد بارڈر کنٹرول مینجمنٹ اقدامات شیئر کئے اور زور دیا کہ دوسری جانب سے بھی ایسے اقدامات کی ضرورت ہے تاکہ مشترکہ دشمن کو شکست دی جا سکے،چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ سی پیک کو اقتصادی نظر سے دیکھا جانا چاہئے،اس کا مقصد ریجن اور اس سے باہر بہترین مفاد میں انکلو سیو ترقی کو فروغ دینا ہے آرمی چیف نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں برطانوی قیادت کی سپورٹ کا بھی شکریہ ادا کیا،پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے برطانیہ کے تین روزہ سرکاری دورے کا پہلا روز انتہائی مصروف گزارا۔