مقبول خبریں
بار سلونا میں دہشت گردی کے واقعہ پر سیاسی،سماجی،مذہبی و کمیونٹی رہنمائوں کی مذمت
علامہ سید ظفر اللہ شاہ کی قیات میں محبان وطن کی مرحوم چوہدری رحمت علی کی قبر پر حاضری
کشمیری مسئلہ کشمیر کے پُرامن حل کے لیے عالمی برادری کے کردار کے خواہش مند ہیں
فوج کے تمام سربراہوں سے اختلاف کا تاثر درست نہیں، کئی سے اچھی بنی: نواز شریف
بھارت کا یوم آزادی،دنیا بھر میں کشمیریوں نے یوم سیاہ منایا، مودی کے پتلے نذرآتش
کونسلر وحید اکبر کا آزاد کشمیر کے جسٹس شیراز کیانی کے ا عزاز میں عشائیے کا اہتمام
عمران خان نے تمام بڑے چوروں کو عوامی عدالتوں میں لا کھڑا کیا ہے:بابر اعوان
راجہ عبدالرحمن کی فیملی کی طرف سے سابق چیف جسٹس آزادکشمیر کے اعزاز میں استقبالیہ
کرپٹ خان
پکچرگیلری
Advertisement
بھارتی فوج کےمقبوضہ کشمیر میں ظلم و تشدد کیخلاف یورپین کشمیریوں کا زبردست احتجاجی مظاہرہ
لوٹن :بھارتی سیکورٹی فورسز کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیوں اور بڑے پیمانے پر ظلم و تشدد اور قتل و غارت گری کے خلاف یورپین کشمیریوں نے اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے عالمی ادارے کے ہیڈ کوارٹر واقع جنیوا کے باہر زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا ہے۔ مظاہرین تقریباً دو گھنٹے تک شدید نعرے بازی کرتے رہے اور بھارتی سیکورٹی فورسز کے مظالم اور بھارت کے خلاف سراپا احتجاج بنے رہے۔ مظاہرے کی قیادت آزاد کشمیر اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور پیپلزپارٹی کے رہنما چوہدری یاسین کر رہے تھے جنہوں نے اقوام متحدہ کے نام ایک پٹیشن بھی پیش کی اس پٹیشن میں کہا گیا کہ اقوام متحدہ نے کشمیریوں کے ساتھ حق خودارادیت کا وعدہ کر رکھا ہے اور دو درجن اسی تناظر میں قراردادیں بھی عملدرآمد کی منتظر ہیں کشمیری اپنا حق خودارادیت مانگتے ہیں اور انسانی حقوق کے تحفظ کے لئے قائم یہ ادارہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لے۔ چوہدری یاسین اور دیگر نے خطاب میں کہا کہ صرف 8 جولائی 2016ء کے بعد برہان مظفر وانی کی شہادت کے بعد سینکڑوں افراد کو بھارتی سیکورٹی فورسز نے نوجوانوں کو قتل کیا ہے عورتوں اور بچوں اور بوڑھوں تک کو نہیں بخشا گیا اور انہیں بھی نشانہ بنایا گیا جب پیلٹ گن کا استعمال بھی کیا گیا اور ہزاروں افراد کی بیناء چھینی گئی اور اقوام متحدہ کا انسانی حقوق کا ادارہ مقبوضہ کشمیر میں مظالم بند کروانے پر خاموش رہا۔ انہوں کہا کہ یورپ میں آباد بڑی تعداد میں مقیم کشمیری نہتے کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کا اظہار کرتے ہیں اور یہ تجدید عہد کرتے ہیں کہ ان کو ان کی آزادی کی تحریک میں اکیلا نہیں چھوڑا جائے گا۔ اس مظاہرے میں برطانیہ سے چوہدری یاسین کے مہتمد خاص اور سابق کونسلر چوہدری محمود فضل، پاکستان ہیومن رائٹس آرگنائزیشن یو کے چیئرمین چوہدری عبدالعزیز، راجہ لیاقت حسین، ملک طاہر اقبال، ملک شوکت، ملک جاوید، فرینکفرٹ سے مشتاق وانی نے کہا کہ اقوام عالم کی خاموشی نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال کو اور خراب کردیا۔ فرینکفرٹ سے چوہدری رحمت نے کہا کہ یہ بڑی کامیابی ہے کہ کشمیریوں کی آواز ہر پلیٹ فارم پر بلند ہو رہی ہے۔ حریت کانفرنس کی رہنما شمیم شال نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے لوگوں پر مظالم ڈھائے جارہے ہیں حریت کانفرنس جرمنی کے رہنما رحمت اللہ نے کہا کہ پوری کشمیر دھرتی کشمیری شہداء کا قبرستان ہے، سردار یوسف، آل پارٹیز کے رہنما اشتیاق، شفیق جرال، میر واعظ کے نمائندے فیض نقشبندی، چوہدری شاہنواز، چوہدری کبیر حسین، چوہدری محمد عارف، حاجی عباس حسین، چوہدری محمد منیر، راجہ اکرم، حاجی ایوب، حاجی طالب اور دیگر نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔