مقبول خبریں
راجہ طاہر مسعود کو ملکہ برطانیہ کی طرف سے کمیونٹی کی خدمات پر برٹش ایمپائر میڈل سے نوازا گیا
برطانیہ میں پاکستانی ہائی کمشنر کی جانب سے پاکستانی کمیونٹی کیلئے عید الفطر اوپن ہائوس کا اہتمام
مسلم ہینڈز انٹرنیشنل کی جانب سے شامی تارکین وطن کیلئے خوراک کا کانوائے روانہ کر نے کی تقریب
چیئرمین تحریک انصاف عمران خان بھی کروڑوں روپے کے اثاثوں کے مالک
محبوبہ مفتی کی حکومت ختم، صدر رام ناتھ کووند نے گورنر راج نافذ کر دیا
شیر خدا نے نبی پاک کی آواز پر لبیک کہہ کر اسلام سے محبت اور وفا کی عمدہ مثال قائم کی
پیپلزپارٹی ہی آئندہ انتخابات میں چاروں صوبوں میں اکثریت حاصل کریگی:میاں سلیم
پاکستان کشمیر ویلفیئر ایسوسی ایشن کے ڈائریکٹر پروفیسر فیاض رشید و دیگر کا عید ملن پارٹی کا اہتمام
وصال و ہجر کا قصہ بہت پرانا ہے
پکچرگیلری
Advertisement
کشمیری نژاد برطانوی شہری بیرسٹر فیاض افضل نےبحیثیت ڈسٹرکٹ جج عہدے کا حلف اٹھا لیا
ڈربی:قدرت نے انسان کے اندر وہ تمام خوبیاں پیدا کی ہوئی ہیں جن کا بعض اوقات ہم اندازہ نہیں کر سکتے اور جو انسان بھی اس دنیا میں آیا ہے اسےمقصد کیلئے بھیجا گیا ہے ایسی ہی ایک مثال آج ڈربی میں آنکھوں سے معزور ایک نابینا کشمیری نژاد برطانوی شہری بیرسٹر فیاض افضلOBEکی ہے جنہوں نے ڈربی کمبائنڈ کورٹ سنٹر میں بحیثیت ڈسٹرکٹ جج کے اپنے عہدے کا حلف اٹھا لیا ہے،اس موقع پر انہوں نے کہا کہ میرا تعلق ایک ایسے گھرانے سے ہے جن کا کوئی فرد بھی قانون کے پیشے سے وابستہ نہیں ہے میں واحد شخص تھا جس نے یونیورسٹی میں جا کر تعلیم حاصل کی اور اپنے نابینے پن کو کبھی اپنے اعصاب کے اوپر حاوی نہیں ہونے دیا،انہوں نے کہا کہ والدین کی دعائیں اور انکی مدد تعاون ہروقت میرے ساتھ رہا یہی وجہ ہے کہ ترقی کی منزلیں طے کرنے میں کبھی رکاوٹ کا سامنا نہیں کرنا پڑا اگر انسان سخت محنت کو اپنا شعار بنا لے تو جس کام کی بھی ٹھان بے کامیابی قدم چومتی ہے،انہوں نے کہا کہ جب انہیں اس بات پر فخر ہے کہ برطانیہ بھر میں عالباً وہ پہلےفرد ہیں جو نابینا ہونے کے باوجود جج کے عہدے پر فائزہوئے ہیں اس سے کمیونٹی کے اندر خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے،انہوں نے کہا کہ انہیں2008میں ملکہ برطانیہ کی طرف سےOBEکے ایوارڈ سے نواز گیا،2010میں ڈپٹی جج کی حیثیت سے ذمہ داریاں نبھائیں اور2015سے ریکاڈر کی حیثیت سے کام کیا،سماجی و کمیونٹی کی سرگرمیاں میں انکا کردار نمایاں ہے انکے خاندان دوست احباب نے کہا کہ وہ معزور افراد کیلئے ایک رول ماڈل کی حیثیت رکھتے ہیں،انکے ساتھیوں نے انکے عہدہ سنبھالنے کو انتہائی خوش آئند قرار دیا اور کہا کہ وہ ہر لحاظ سے اس کے مستحق تھے،اس سے کمیونٹی کو آپس میں ملانے اور باہمی تعلقات کوفروغ ملے گا،یاد رہے کہ موصوف کا تعلق آزاد کشمیر کے علاقہ راجدھانی سے ہے اور کمیونٹی کے اندر انکا خاندان ایک نمایاں مقام و حیثیت رکھتا ہے۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر