مقبول خبریں
برطانوی پارلیمنٹ میں3گھنٹے کی بحث ڈیوڈ نٹال کا سیاسی کارنامہ ہے: تحریک حق خود ارادیت یورپ
پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامرخان کی مخرب الاخلاق ویڈیو انٹرنیٹ پر وائرل
19جنوری برطانوی پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر پر بحث برٹش کشمیریوں کا تاریخی کارنامہ :راجہ نجابت
سی پیک منصوبے میں شامل ہونا برطانیہ کے لیے باعث خوشی ہوگا:برطانوی ہائی کمشنر تھامس ڈریو
سی پیک منصوبہ ملکی ترقی کا ضامن ہے ، سردار مسعود خان کا بلوچستان کے تاجروں سے خطاب
سیدحسین شہیدسرور کا ڈی آئی جی موٹرویزاسلام آباد راجہ شہریارسکندرکے اعزازمیں ظہرانہ
چوہدری پرویز کاوزیر حکومت آزاد کشمیر چوہدری محمد سعید کے اعزاز میں استقبالیہ
پینڈل فرینڈز لیگ اور بلڈنگ بریجزکے ز یر اہتمام پناہ گزینوں کے اعزاز میں ظہرانہ
بریڈ فورڈ کی ڈائری
پکچرگیلری
Advertisement
تحریک کشمیر برطانیہ کے زیر اہتمام برمنگھم میں نیشنل کونسلرز کنونشن کا انعقاد
برمنگھم: مسئلہ کشمیر کی عالمی سطح پر ایک متنازعہ حیثیت اور سنگین انسانی مسئلہ ہے بھارت کی مسلسل ہٹ دھرمی کے نتیجے میں مسئلہ التوا میں پڑا ہے لاکھوں کشمیری اپنے حق خودارادیت کے لیے جانوں اور عصمتوں کی قربانیاں پیش کر چکے ہیں کشمیری عوام عالمی معائدوں کی پاسداری کے لیے جدو جہد کر رہئے ہیں اقوام متحدہ کے ذمہ داری ہے کہ وہ خطے میں پائی جانے والی کشیدگی کو ختم کرانے کے لیے بھارت کو مذاکرات کے لیے مجبور کرے کہ وہ اپنے وعدوں اقوام متحد کی گی قراردادوں پر عمل درآمد کرائے کشمیری عوام مسئلہ کشمیر کے اصل فریق ہیں ان کی خواہشات کو مد نظر رکھتے ہوئے انہیں اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے حق دیا جائے اور برطانوی حکومت مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کشمیریوں کی نسل کشی کو بند کرانے کے لیے اپنا کردار ادا کرئے ان خیالات کا اظہار مہمان خصوصی امیر جماعت اسلامی ،آل پارٹیز کشمیر رابطہ کونسل آزاد کشمیر کے چئیرمین اور ممبر آزاد کشمیر اسمبلی عبد ا لرشید ترابی، شیڈو منسٹر اور ممبر آف پالیمنٹ عمران حسین، شیڈو منسٹر ممبر آف پارلیمنٹ مرزا خالد محمدد، ممبر آف پارلیمنٹ شبانہ محمود، لارڈ میر آف اکسفورڈ کونسلر افتاب خان ، لیڈر آف ہائی ویکمب کونسلر محبوب بھٹی اور ایک کثیر تعداد میں کونسلروں اورکشمیری ، پاکستانی رہنمائوں نے تحریک کشمیر برطانیہ کے زیر اہتمام برمنگھم میںمنعقدہ نیشنل کونسلرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ برطانیہ میں آباد کشمیری اور پاکستانی کمیونٹی نے مسئلہ کشمیر کو اجار کرنے میں نمایا ںکردار ادا کر رہی ہے ممبران پارلیمٹ کونسلرز اور کمیونٹی کے سرکردہ رہنما اور تنظیمیں مشترکہ طور پر مقبوضہ کشمیر کے مظلوم عوام کی آواز کو برطانوی حکومت اور عالمی برادری کے سامنے پیش کریں کشمیریوں کا مطالبہ حق اور انصاف پر مبنی ہے خطے کا امن مسئلہ کشمیر سے وابستہ ہے گذشتہ تین ماہ سے مسلسل کرفیو نافذ انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں ، میڈیا اور ریلیف کی ایجنسیوں پر مکمل پابندی عائد ہے بھارتی نے ظلم اور بربریت کی تارئخ رقم کی ہے عالمی امن کے علمبرداروں کی خاموشی لعمہ فکریہ ہے ان حالات میں عالم برادری کو مداخلت کرنی چاہئے تاکہ انسانی جانوں کو بچایا جاسکے دنیا نے اگر کوئی بروقت قدم نہ آٹھایا تو تاریخ کا ایک بہت بڑا سانحہ رونما ہو سکتا ہے اور اس کی ذمداری اقوام متحدہ پر ہوگی جس کا وجود دنیا میںامن قائم کرنے مظلوم اور محکوم قوموں کو انصاف دلانا تھا جو بُری ظرح ناکام ہوا ہے۔ کنونشن میں برطانیہ کے مختلف شہروں لندن سے گلاسگو تک مختلف پارٹیوں سے تعلق رکھنے والے کونسلروں نے شرکت کی اور انہوں نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے تحریک کشمیر برطانیہ نے ملک بھر سے کونسلروں کو جمع کرکے اہم اقدم آٹھایا اورمشکل ترین حالات میں مقبوضہ کشمیر کے عوام کو بھرپور یقین دلاتے ہیں کہ آزادی کی جد و جہد میں وہ تنہا نہیں ہیں انہوں نے کہ کہ برطانیہ میں مسلہ کشمیر کے حوالے سے بھرپور لابنگ کرنے ضرورت ہے کونسلز میں قراردادیں منظور کی جائیں پارلیمنٹ کے فلور سے مسئلہ کشمیر کی اہمیت کو اجاگر کیا جائیگابرطانوی حکومت کو مقبوضہ کشمیر کے حالات کے حوالے سے اپنی تشویش سے آگاہ کیا جائے کہ برطانیہ سلامتی کونسل کا مستقل ممبر ہونے کی حثیت سے قراردادوں پر عمل درآمد کرنے کے اپنا کلیدی کردار ادا کرئے۔ کنونشن سے تحریک کشمیر برطانیہ کے صدر راجہ فہیم کیانی، تحریک کشمیر یو رپ کے صدر محمد غالب، مقبوضہ کشمیر کے رہنمانذیر احمد قریشی، پروفیسر نذیر شال، کل جماعتی کشمیر رابطہ کمیٹی کے صدر مفتی فضل احمد قادری، چوہدری بشیر رٹوی، مفتی عبد المجید ندیم، حافظ محمد آزاد، چوہدری غفارت شاہد، ظفر قریشی، مزمل ایوب ٹھاکر اور دیگر رہنمائوں نے بھی خطاب کیا اور نیشنل کونسلرز کنونشن کو تاریخی کارنامہ قرار دیا۔ کنونشن کے آخری سیشن میں ایک اعلامیہ بھی جاری کیا گیا۔