مقبول خبریں
مئیر کونسلر جاوید اقبال نےرضاکارانہ خدمات پرتنظیم وائی فائی کو تعریفی سرٹیفکیٹ اور شیلڈ سے نوازا
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان کے آئیندہ وزیر اعظم عمران خان، حکمرانوں کو پائی پائی کا حساب دینا ہوگا: فوزیہ قصوری
ریڈنگ ... عمران خان مملکت خداداد پاکستان کے روشن مستقبل کی واحد ضمانت ہیں، انہیں ناصرف ملک بھر کے پی ٹی آئی کارکنان بلکہ عوام کی اکثریت بھی حاصل ہے، انکی جدوجہد ملک و قوم کیلئے ہے جس میں ہم سب تن من دھن سے انکے ساتھ ہیں۔ ان خیالات کا اظہار پی ٹی آئی کی مرکزی رہنما فوزیہ قصوری نے اپنے اعزاز میں پی ٹی آئی برطانیہ کے رہنما رومی ملک کی جانب سے منعقدہ ایک استقبالیہ میں کیا۔ پی ٹی آئی یوکے و یورپ افیئرز کے انچارج صاحبزادہ جہانگیر بھی انکے ہمراہ تھے۔ فوزیہ قصوری نے مزید کہا کہ تیس اکتوبر کو دارالحکومت اسلام آباد میں عوام کا ٹھاٹھیں مارتا سمندر پاکستان کے کرپٹ ترین حکمرانوں کے سوئے ضمیر کو جگانے اور بند آنکھوں کو کھولنے کیلئے کافی ہوگا لیکن انہوں نے اگر پھر بھی عوامی رٹ نہ مانی اور خود کو احتساب کیلئے پیش نہ کیا تو پھر اپنا انکا گریبان پکڑنے میں حق بجانب ہونگے۔ صاحبزادہ جہانگیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا موجودہ پاکستانی حکمران اتنے ڈھیٹ ہیں جسکا تصور بھی ممکن نہیں، پانامہ جیسے اسکینڈل کو جھٹلانے کے درپے ہیں لیکن ایسا ممکن نہیں انہیں ملک و قوم کی لوٹی ہوئی پائی پائی کا حساب دینا ہوگا۔ تقریب سے پارٹی کی یوتھ رہنما سونیا عرفان نے بھی خطاب کیا اور کہا کہ وہ دن اب دور نہیں جب ملک میں پی ٹی آئی کی حکومت ہوگی اور عوام عمران خان کے وژن کی وجہ سے خوشحال و کامران زندگی کا سپنا پورا کررہے ہونگے۔ تقریب کے مزبان رومی ملک نے آخر میں تمام شرکا کا شکریہ ادا کیا۔