مقبول خبریں
پاکستانی و کشمیری برطانوی شہریوں کا تمام شعبہ جات میں نمایاں مقام باعث فخر ہے:افضل خان
عمران خان خود اپنی پارٹی کیلئے باعثِ شرمندگی ہے : ڈاکٹر اشرف ،ملک ریاض،شاکرقریشی
پاکستان میں فٹبال کے فروغ کیلئے انٹرنیشنل سوکا فیڈریشن کا قیام، ٹرنک والا فیملی کو خراج تحسین
وزارتِ عظمیٰ کے بعد نواز شریف مسلم لیگ ن کی صدارت سے بھی فارغ
بھارتی ریاستی دہشتگردی کیخلاف مقبوضہ کشمیر میں ہڑتال، تعلیمی ادارے بند
کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی پامالیوں کو رکوانے کے سلسلہ میں پروگرام کا انعقاد
اوورسیز پاکستانیز ویلفیر کونسل کے زیراہتمام یوم یکجہتی کشمیر پر کار ریلی کا انعقاد
راجہ نجابت اور ان کی ٹیم کامسئلہ کشمیرپر متحرک کردار قابل ستائش ہے: سٹوورٹ اینڈریو
عمران خان مارگریٹ اور میں
پکچرگیلری
Advertisement
نواز شریف کی کشمیر کو غیر فوجی علاقہ قرار دینے کی تجویز پر لبریشن لیگ برطانیہ کاخیر مقدم
برنلے:اقوام متحدہ کی کشمیر پر منظور شدہ قراردادیں فرسودہ ہو چکی ہیں،کشمیر کی موجودہ صورتحال نئی قرارداد کا تقاضہ کرتی ہے،وزیر اعظم نواز شریف کی کشمیر کو غیر فوجی علاقہ قرار دینے کی تجویز کا لبریشن لیگ برطانیہ خیر مقدم کرتی ہے ان خیالات کا اظہار صدر جموں کشمیر لبریشن لیگ برطانیہ ڈاکٹر مسفر حسن نے کیا، انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان کا اقوام متحدہ سے اس بات کا مطالبہ کرنا کہ کشمیر کی قراردادوں پر عملدرآمد کروایا جائے،کشمیری قوم کی قربانیوں کی نفی کرنے کے برابر ہے،انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی کشمیر پر قراردادیں صرف ایڈوائزری ہیں جو کہ عمل درآمد کی راہ میں رکاوٹ ہیں یہی وجہ ہے کہ مسئلہ کشمیر گزشتہ70سال میں حل نہیں ہو سکا،انہوں نے کہا کشمیر کی صورتحال تقاضا کرتی ہے حکومت پاکستان سیکورٹی کونسل میں ایک نئی قرارداد پیش کرے اور اقوام متحدہ سے مطالبہ کرے کہ اس قرارداد کو عملدرآمد کی طاقت کے ساتھ منظور کرے جیسے دیگر قراردادیں ہیں،محض جذباتی انداز میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرنے سے کشمیر کے مسئلے کو کوئی فائدہ حاصل ہونے کا کوئی امکان نہیں،انہوں نے وزیر اعظم کے اس اعلان کو کہ دونوں ملک کشمیر سے اپنی افواج نکالیں کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر سے فوجوں کے انخلا سے امن کی بحالی کے امکانات بہتر ہوں گے،انہوں نے کہا کہ پاکستان کی مذہبی انتہا پسند تنظیموں کی کشمیر میں مداخلت بھی امن کی راہ میں رکاوٹ ہے جس پر حکومت پاکستان اور اس کے اداروں کو ایسی تنظمیوں کی کارروائیوں پر کڑی نظر رکھنے کی ضرورت ہے،ان تنظیموں کی کارروائیوں کی وجہ سے کشمیریوں کی تحریک اور پاکستان حکومت کو بین الاقوامی سطح پر مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور ساری دنیا میں بدنامی کا باعث بنتی ہیں۔بیورو رپورٹ:فیاض بشیر