مقبول خبریں
سیاسی ،سماجی کمیونٹی شخصیت بابو لالہ علی اصغر کا مقبوضہ کشمیر کی صورتحال بارے میٹنگ کا انعقاد
بھارتی ظلم و جبر؛ برطانیہ کے بعد امریکی اخبارات میں بھی مسئلہ کشمیر شہہ سرخیوں میں نظر آنے لگا
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز اورسیمینارز منعقد کریگی : راجہ نجابت
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت کا کشمیر پٹیشن پر دستخطی مہم کا آغاز ،10ستمبر کو پیش کی جائیگی
کافر کو جو مل جائے وہ کشمیر نہیں ہے!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ماضی کی تلخ تجربات کو بھلا کرپاکستان کےمستقبل کو تابناک بنانے پرمتوجہ ہونا چاہئے:راجہ جاوید اخلاص
آکسفورڈ:گوجر خان سے مسلم لیگی ایم این اے راجہ جاوید اخلاص کا کہنا ہے کہ ملک کھینچا تانی کی سیاست کا متحمل نہیں ہے اب ماضی کی تلخ تجربات کو بھلا کر آگے بڑھنے اور مستقبل کو تابناک بنانے پر متوجہ ہونا چاہئے وہ گزشتہ روز آکسفورڈ کی کاروباری شخصیت چوہدری افتخار احمد کی جانب سے منعقدہ یوم پاکستان کی تقریب میں مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کر رہے تھے اس موقع پر گوجر خان کے ایم پی اے راجہ شوکت عزیز بھٹی،چوہدری افتخار احمد،کونسلر الطاف خان،پروفیسر منظور حسین،میاں مبشر محمود،چوہدری محمد ضمیر،چوہدری خادم حسین،چوہدری محمد علی،چوہدری محمد شبیر،ناظم گجر،چوہدری سیف اللہ،خواجہ عبدالقیوم اور دیگر نے اظہار خیال کیا،مقررین نے مسلم لیگ ن کی حکومت پر اظہار اطمینان کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حکومت اپنے وسائل کے اندر رہتے ہوئے ملکی ترقی اور استحکام کیلئے سر توڑ کوششیں کر رہی ہیں جبکہ عوامی خوشحالی اور معیار زندگی کی بہتری کیلئے بھی میاں برادران معروف مصروف عمل ہیں ان رہنمائوں کا کہنا تھا کہ وہ وقت دور نہیں جب ایٹمی طاقت کی خالق جماعت کی قیادت میں پاکستان معاشی طور پر دنیا کے ترقی یافتہ ممالک کی صف میں کھڑا ہو گا اس موقع پر شرکاء تقریب نے تارکین وطن کو قومی ایئر لائن،ایئر پورٹ پر ناروا سلوک،زمینوں پر ناجائز قبضے اور تارکین کو ووٹ کا حق دیئے جانے کے متعلق اپنے مسائل سے بھی آگاہ کیا جنہیں پارلیمانی ممبران نے ترجیحی بنیادوں پر حل کروانے کی یقین دہانی کروائی۔