مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
بیرون ملک کشمیر ی تحریک آزادی کشمیر کے حقیقی ترجمان ہیں:محمد رشید چوہدری و دیگر
مانچسٹر:بیرون ملک کشمیر ی تحریک آزادی کشمیر کے حقیقی ترجمان ہیں۔برطانیہ یورپ میں کشمیری عوام کے حق خود ارادیت کے حصول کے کے لئے جدوجہد قابل ستائش ہے۔برطانوی پارلیمنٹ میں دوبار بحث ۔کشمیر ملین مارچ اور یورپی پارلیمنٹ میں متحرک کشمیر گروپ کے قیام کا سارا کریڈٹ اوورسیز کشمیریوں کو جاتا ہے ۔آزاد کشمیر اور پاکستان سے آنے والے تمام مہمان ہمارے لئے قابل احترام ہیں مگر وہ کشمیریوں کو برادریوں گروپوں اور اپنے مفادات کے لئے استعمال کرنے کی بجائے اپنے اثرورسوخ سے لوگوں کو اصل کام کی طرف راغب کریں۔برطانوی انتخابات سے قبل ملک بھر میں ایک منظم مہم کے ذریعے برطانوی سیاستدانوں اور سیاسی جماعتوں کومسئلہ کشمیر کی حمایت کے لئے آمادہ کیا جائے گا جس کے لئے کشمیری مل جل کر جدوجہد کریں۔ان خیالات کا اظہار کشمیری تنظیموں کے قائدین نے یہاں جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت یورپ کے وائس چیئرمین امجد حسین مغل کی طرف سے آزاد کشمیر سے آئے ہوئے وزیر اعظم آزاد کشمیر کے سابق پریس سیکرٹری محمد رشید چوہدری کے اعزاز میں دیئے گئے استقبالیہ کے موقع پر کیا ۔تقریب کی صدارت چیئرمین تحریک راجہ حسین نے کی جبکہ اس موقع پر جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کل یورپ کے صدر عظمت اے خان،مسلم کانفرنس برطانیہ کے صدر چوہدری محمد بشیر رٹوی اور تحریک کے سیکرٹری جنرل محمد اعظم نے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔محمد رشید چوہدری نے کہا کہ 1985 سے لیکر آج تک انہوں نے محکمہ اطلاعات کے ساتھ ساتھ آزاد کشمیر کے تقریباً تمام وزرئاے اظعم کے ہمراہ بحیثیت پریس سیکرٹری کام کیا اور برطانیہ میں بھی1980 سے لیکر آپ کے لیول اور اس بات کو غریب سے دیکھا ہے کہ تارکین وطن کشمیر اپنے ذاتی لا محدود وسائل کے باوجود مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر اجاگر کررہے ہیں۔ اورمقبوضہ کشمیر کے عوام کی حالت زار بیرونی دنیا کو تباہ کر رہے ہیں،انہوں نے کشمیریوں پر زور دیا کہ وہ سیاسی اور نظریاتی اختلافات کو بھلا کر با صلاحیت کشمیریوں کی خدمات سے استفادہ حاصل کریں اور بھارتی عزائم کو عالمی برادری خصوصاً امریکی اور برطانوی سیاستدانوں کو آگاہ کریں اور پاکستان کی پوزیشن بھی واضح کریں جس نے ہر حالت میں کشمیری عوام کا ساتھ دیا ہے مگر اب بیرون ملک اتنے کشمیری با اثر ہو گئے ہیں کہ وہ اپنی کوششوں سے اس مسئلہ کو اقوام متحدہ اور یورپی یونین میں پیش کر سکتے ہیں،اس موقع پر تینوں تنظیموں کے قائدین برطانیہ اور یورپ میںبسنے والے کشمیریوں کو زبر دست الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا جنہوں نے ہر مرحلے پر جہاں ریاستی عوام کی نمائندگی کی وہاں یہاں کے سیاستدانوں کو بھی اپنا ہمنوا بنایا جس کے نتیجے میں آج بھی برطانوی اور یورپی پارلیمنٹ میں کشمیر دوست ارکان کی بڑی تعداد موجود ہے،تینوں رہنمائوں نے برٹش کشمیریوں کے درمیان روابط اور مسلسل ہم آہنگیکی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ بھارت کنٹرول لائن پر مسلسل فائرنگ کر کے دونوں اعطراف کے کشمیریوں کی زندگی اجیرن کر رہا ہے اور حالیہ نام نہاد انتخابات کے ذریعے بھارت کی مرکزی حکومت کشمیریوں کو قومی تشخص کو ختم کرنے کیلئے دفعہ370کے خاتمے کیلئے بھی کوشاں ہیں اس لئے برٹش کشمیریوں کو مل جل کر مسئلہ کشمیر پر ایک واضع پالیسی کے مطابق کرنا ہو گا جس سے ریاست جموں کشمیر کے کشمیریوں کو بھی اپنی تحریک میں شامل کرنا ہو گا تحریک کے سیکرٹری جنرل محمد اعظم نے کہا کہ وہ بہت جلد قوم پرست کشمیریوں کی دیگر تنظیموں سے بھی ملاقاتیں کریں گے تاکہ ایک مشترکہ لائحہ عمل تہہ کیا جا سکے جبکہ کشمیری لیڈر شپ نے شہدائے جموں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے انکے مشن کی تکمیل اور پوری ریاست جموں و کشمیر کی آزادی کیلئے جدو جہد جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا۔بیورو رپورٹ:فیاض بشیر