مقبول خبریں
برادری ازم پر یقین رکھتے ہیں اور نہ علاقائی تعصب پر اہلیت کی بنیاد پر ڈاکٹر شاہد کی حمائت کر رہے ہیں
اسلام میں جسطرح خدمت انسانی کی حوصلہ افزائی کی گئی اسکی مثال نہیں ملتی: الصف چیریٹی کی امدادی تقریب
لالچی اور خودغرض ٹور آپریٹرز ں نے اللہ کے مہمانوں سے لوٹ کھسوٹ کا بازار گرم کر رکھا ہے
احتجاج کرنیوالے وزیر اعظم ہائوس آ کر مذاکرات کریں، نواز شریف
کشمیریوں نے بھارت کو بتا دیا وہ جدو جہد آزادی سے پیچھے نہیں ہٹیں گے،علی گیلانی
شیراز خان کی برطانیہ واپسی پر چیئرمین سلطان باہو پیر نیازالحسن سروری قادری کی والدہ کی وفات پر تعزیت
کشمیری اس امر پر متفق ہیں کہ ووٹ انہی کو دیا جائے گا جوحق خود ارادیت کی حمائت کرتے ہیں:کونسلر محبوب بھٹی
برطانیہ میں مقیم کمیونٹی پاکستان سے بے پناہ محبت کرتی ہے، . لارڈ میئر بریڈفورڈکا چھچھ ایسوسی ایشن تقریب سے خطاب
حکومت پنجاب کا اوورسیز کمشنر آفس
پکچرگیلری
Advertisement
منکرین ختم نبوتؐ کے بارے مسلمانوں باالخصوص علماء کرام کو نہایت چوکنارہنے کی ضرورت ہے
مانچسٹر ... عقیدۃ تحفظ ختم نبوتؐ کے مسئلہ پر تمام مسلمان ایک ہیں۔ مسلمانوں کی صفوں میں منکرین ختم نبوتؐ اور منکرین حدیث گُھس کر ایسی شرمناک کارروائیاں کررہے ہیں جس سے اسلام اور مسلمانوں پر دھبہ لگتا ہے اور بدنامی ہوتی ہے ۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ ہمیں اپنے ارد گرد نظر رکھنی ہوگی۔ مسلمانوں کی صفوں میں شامل ایسی کالی بھیڑوں کو نکال باہر پھینکنا ہوگا، جو عقیدہ ختم نبوتؐ اور احادیث نبویہؐ کے حوالے سے امت مسلمہ کے اجماعی عقیدہ کے خلاف نظریات رکھ کر اسلام کے بارے میں اپنے مخصوص نظریات و خیالات کو پھیلا رہے ہیں، کچھ لوگ بڑی بے شرمی سے مسلمانوں کی شناخت کو چوری کرکے خود کو مسلمان اور اسلام کا خیرخواہ تصور کروا کر سادہ لوح مسلمانوں کے ایمانوں کو خراب کررہے ہیں۔ ایسے حالات میں علماء کرام اور کمیونٹی لیڈروں کی مذہبی ذمے داریاں بڑھ جاتی ہیں، کچھ لوگ مسلمانوں کے درمیان مخصوص فروعی مسائل کو ہوا دیکر بھی اپنے مذموم عزائم کو آگے بڑھاتے ہیں۔ ایسے وقت میں تمام مکاتب فکر کے مسلمانوں باالخصوص علماء کرام کو نہایت چوکنارہنے کی ضرورت ہے۔ تاکہ منکرین ختم نبوتؐ و منکرین حدیث اور دیگر باطل نظریات کے حامل لوگ، مسلمانوں کو تقسیم در تقسیم کرنے میں کامیاب نہ ہوسکیں۔ ان خیالات کے اظہارمتحدہ مجلس تحفظ ختم نبوتؐ کی اپیل پر مختلف شہروں میں خطابات کرتے ہوئے۔ علما کرام ڈاکٹر علامہ خالد محمود، مولانا عبدالرشید ربانی، مولنا عبدالرحمن باوا، مولانا قاری تصور الحق، مولانا قاری عبدالرشید، مولانا سہیل باوا، مفتی عبدالوہاب، مولنا محمد اکرم، مولانا اسلام علی شاہ، مولانا جمال بادشاہ مولنا شفیق الرحمن ، مولناا محمد احسن اور دیگر نے کیا۔