مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
پاکستان پریس کلب یوکے کے سالانہ انتخابات اور تقریب حلف برداری
چیئرمین پی آئی ایچ آرچوہدری عبدالعزیز کوسوک ایوارڈ فار کمیونٹی سروسز سے نواز گیا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
برطانوی پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر پربحث کیلئے تحریک کشمیریوں کی محنت کا نتیجہ
بریڈ فورڈ(محمد فیاض بشیر) جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹرنیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے برطانوی پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر اور کشمیر میں انسانی حقوق پر بحث کے لئے تحریک پیش کرنے اور بحث کی تاریخ مقرر کرنے کا خیر مقدم کرتے ہوئے اسے سفارتی محاذ پر متحرک کشمیریوں کی مسلسل محنت کا نتیجہ اور کامیابی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ برطانوی پارلیمنٹ میں بحث کے لئے پارلیمنٹری کشمیرگروپ کی چیئرپرسن ایم پی ڈیبی ابراھم نے تحریک پیش کرکے نا صرف گروپ کی چیئرپرسن ہونے کا حق ادا کیا ہے کہ بلکہ مقبوضہ کشمیر کے مظلوم، محکوم اور مجبور کشمیریوں کی آواز بن کر انہوں نے حقیقی معنوں میں کشمیر دوست ہونے کا ثبوت دیا ہے۔ پارلیمنٹری کشمیر گروپ کے ممبران نے جس طرح ہر سطح پر پارلیمنٹ کے اندر اور باہر کشمیریوں کی بہترین انداز میں نمائندگی کی اس پر ہم انہیں پوری کشمیری قوم کی جانب سے خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔ 26مارچ بحث کے لئے تاریخ مقرر ہونا انتہائی خوش آئدن اور مسئلہ کشمیر کے لئے سفارتی سطح پر ایک بڑی پیش رفت ہے۔ یہ تمام برٹش کشمیریوں، متحرک تنظیموں اور شخصیات کی مشترکہ جدو جہد کا نتیجہ ہے کہ ان کی کاوشوں کے نتیجہ میں یہ پیش رفت ممکن ہو رہی ہے۔ آل پارٹیز کشمیر پارلیمنٹری گروپ (APPG) کے وفد نے گذشتہ ماہ پاکستان اور آزاد کشمیر کا ایک ہفتے کا دورہ کیا تھا جہاں انہوں نے نا صرف ایل او سی کے حالات کا جائزہ لیا بلکہ کشمیر کے اُس پار سے آنے والے مہاجرین کے کیمپوں کا دورہ اور ان کے رہنماؤں سے ملاقاتیں کر حالات سے آگاہی حاصل کی تھی۔ پارلیمانی وفد نے اس دورے کے فوری بعد برطانوی پارلیمنٹ میں ”کشمیر کی صورتحال اور کشمیر میں انسانی حقوق“ پر تفصیلی بحث کے لئے تحریک بھی پیش کر دی جس پر پوری کشمیری کمیونٹی گروپ کی چیئرپرسن اور ممبران کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ تحریک حق خود ارادیت کے دیگر عہدیداران سیکرٹری جنرل محمد اعظم، برطانیہ کی چیئرپرسن کونسلر یاسمین ڈار، سرپرست اعلیٰ سردار عبد الرحمن خان نے بھی پارلیمنٹری کشمیر گروپ کے ممبران کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ برطانوی پارلیمنٹ چونکہ دنیا کا ایک بڑا پارلیمانی فورم ہے جس پر کسی بھی ایشو کو زیر بحث لانا مسلسل لابی، سفارتی کوششوں اور مؤثر حکمت عملی کے ساتھ کام کے نتیجے میں ہی ممکن ہو تا ہے اس بھث اور اس سے قبل بھی جتنی ڈیبیٹس، تحریکیں اور سوالات اٹھائے گئے ہیں اس کے پیچھے برٹش کشمیریوں اور کمیونٹی کی مسلسل محنت شامل ہے۔برطانوی پارلیمنٹ میں کشمیر گروپ کا یہ قدم کشمیر کی موجودہ صورتحال پر تازہ ہوا کا جھونکا ہے۔بحث کے لئے تحریک پیش کرنے والے پارلیمنٹری کشمیر گروپ کی چیئرپرسن ایم پی ڈیبی ابراھم اور گروپ کے دیگر ممبران کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتے ہیں۔ یہ جہاں برٹش کشمیریوں کی مسلسل محنت کا نتیجہ ہے وہیں مقبوضہ کشمیر میں جدو جہد کرنے والے بھائیوں اور بہنوں کی قربانیوں کا ثمر بھی ہے کہ آج دنیا کے بڑے فورمز پر کشمیر کے حوالے سے تسلسل کے ساتھ بازگشت سنائی دے رہی ہے۔ پارلیمنٹری کشمیر گروپ (APPG)کے ممبران نے حقیقی معنوں میں پارلیمنٹ کے اندر اور باہر کشمیریوں کی نمائندگی کا حق ادا کیا ہے۔