مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
پاکستان پریس کلب یوکے کے سالانہ انتخابات اور تقریب حلف برداری
چیئرمین پی آئی ایچ آرچوہدری عبدالعزیز کوسوک ایوارڈ فار کمیونٹی سروسز سے نواز گیا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
ڈیبی ابراھم کیساتھ ناروا سلوک سے بھارت کا نام نہاد جمہوری چہرہ بے نقاب
مانچسٹر( محمد فیاض بشیر)جموں و کشمیرتحریک حق خودرادیت انٹر نیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین، لیبر پارٹی برطانیہ کی کونسلر یاسمین ڈار چیئرپرسن تحریک حق خود ارادیت برطانیہ، عبدالحمید لون انٹر نیشنل کوآرڈینیٹر تحریک حق خود ارادیت، عروج رضا سیامی چیئرپرسن اسلام آباد چیپٹرنے نیشنل پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ برطانوی پارلیمنٹری کشمیر گروپ کی چیئرپرسن ایم پی ڈیبی ابراہم کو بھارت نے دہلی ائیر پورٹ سے واپس بھیج کر ثابت کر دیا ہے کہ بھارت ایک جمہوری نہیں بلکہ غاصب ملک بن چکا ہے، بھارت میں اس وقت فاشسٹ حکومت اور انتہاء پسندوں کا قبضہ ہے۔ہم کشمیر گروپ کی چیئرپرسن ایم پی ڈیبی ابراھم کو دہلی ائیر پورٹ سے واپس بھیجے جانے کی شدیدمذمت کرتے ہیں۔ بھارت کا نام نہاد جمہوری چہرہ بے نقاب ہوگیا ہے۔ ایم پی ڈیبی ابراھم کا دورہ ذاتی تھانہ کہ کشمیر کے حوالے سے لیکن بھارت نے انتہاء پسندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے راستہ روک کر ثابت کر دیا ہے کہ بھارت کشمیر میں جو سفاکیت اور ظلم و ستم کا کھیل کھیل رہا ہے اس کو دنیا سے اوجھل رکھ کر دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونک رہا ہے۔ ہم ایم پی ڈیبی ابراھم کی قیادت میں آج سے پاکستان کا دورہ کرنے والے آل پارٹیز کشمیر پارلیمنٹری گروپ برطانیہ کے ممبران پارلیمنٹ کو پاکستان آمد پر خوش آمدید کہتے ہیں۔ایم پی ڈیبی ابراھم کی قیادت میں برطانیہ سے 13رکنی وفد پاکستان کا دورہ کررہا ہے۔ہم برطانوی پارلیمنٹری وفد کا پاکستان اور آزاد کشمیر کا دورہ کرنے پر ان کو خوش آمدید کہتے اور ان کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ 05اگست 2019ء کے غیر آئینی قانونی اقدامات اور موجودہ صورتحال کے پیش نظر مودی نے دو قومی نظریہ کو تسلیم کر لیا ہے۔بھارت نے 5اگست کا مذمو م قدم اٹھا کر ثابت کر دیا ہے کہ بھارت تمام تربین الاقوامی معاہدوں، قوانین کا احترام کرنے کی بجائے ان کی دھجیاں بکھیر رہا ہے۔ ہم نے نہ پہلے بھارتی اقدامات ک وتسلیم کیا ہے اور نہ 5اگست کے بعد اس کے فیصلوں کو تسلیم کرتے ہیں۔ جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل نے برطانیہ میں 5اگست سے قبل بھی اور 5اگست کے بعد بھی برطانیہ، یورپ اور دیگر ممالک میں بھرپور، مؤثر اور جاندار طریقہ سے لابی مہم چلائی، سیاسی پارٹیوں کے سالانہ اجلاسوں میں تحریکیں اور قراردادوں کی منظوری، برطانوی ممبران پارلیمنٹ، کونسلرز، کمیونٹی رہنماؤں کے لئے تقریبات، سیمینارز، کانفرنسز کا اہتمام کر کے جس طرح سفارتی سطح پر بھارت اور مودی کے عزائم کو بے نقاب کیا ہے۔ ہم اس پوری مہم میں برٹش ممبران پارلیمنٹ، برٹش کشمیری و پاکستانی کمیونٹی سمیت پاکستان و آزاد کشمیر کی سیاسی لیڈرشپ کابھی شکریہ ادا کرتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار جموں و کشمیر تحریک حق خودرادیت انٹر نیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے لیبر پارٹی برطانیہ کی کونسلر یاسمین ڈار چیئرپرسن تحریک حق خود ارادیت برطانیہ، عبدالحمید لون انٹر نیشنل کوآرڈینیٹر تحریک حق خود ارادیت، عروج رضا سیامی چیئرپرسن اسلام آباد چیپٹرکے ہمراہ نیشنل پریس کلب اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو پوری دنیا میں اکیلا دیکھنے کی خواہش میں بھارت پوری دنیا میں خود اپنے بدترین اقدامات کی وجہ سے اکیلا اور بوکھلاہٹ کا شکار ہو کر رہ گیا ہے۔برطانیہ اور یورپ کے ممبران پارلیمنٹ نے مقبوضہ کشمیر کے عوام کے لیے ہمیشہ آواز بلند کی ہے اور ہم امید کرتے ہیں کہ وہ آئندہ بھی اپنی حمایت جاری رکھیں گے۔آل پارٹیز کشمیر پارلیمنٹری گروپ کے وفد کو پاکستان آمد پر خوش آمد یدکہتے ہیں۔ بھارت کے جانب سے گذشتہ روز برطانوی پارلیمنٹ کی اہم رکن اور پارلیمنٹری کشمیر گروپ کی چیئرپرسن ایم پی ڈیبی ابراھم کو بھارت سے واپس بھیجنے کی شدیدمذمت کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ برٹش کشمیری برطانیہ و یورپ سمیت سفارتی سطح پر گزشتہ 40سال سے تحریک آزادی کو اجاگر کررہے ہیں۔برطانیہ اور یورپ میں سیمینار، کانفرنسز، مذاکرے، گول میز مباحثے اور انتخابات میں کے موقع پر بھرپور لابی مہم چلائی گئی جس کے پارلیمنٹ کے اندر اور باہر بھرپور نتائج دیکھنے کو ملے۔ آج سے برطانیہ سے ممبران پارلیمنٹ کا 13رکنی وفد پاکستان کا دورہ کررہا ہے جس کی قیادت برطانوی پارلیمنٹ میں کشمیر پارلیمنٹری گروپ کی چیئرپرسن ایم پی ڈیبی ابراھم کر رہی ہیں۔ ہم برطانوی پارلیمنٹری وفد کو پاکستان و آزاد کشمیر کا دورہ کرنے پر خوش آمدید بھی کہتے ہیں اور ان کا شکریہ ادا کرتے ہیں کہ وہ کشمیر کی صارتحال کا جائزہ لینے کے لئے تشریف لائے ہیں۔برطانیہ کا پارلیمنٹری گروپ کشمیریوں کی آواز کو بلند کرنے کے لیے اپنا کردار ادا کررہے ہیں۔بھارت کی جانب سے 5اگست 2019کو مقبوضہ کشمیر میں غیر قانونی اقدامات کو برطانیہ اور یورپ میں بے نقا ب کیا۔ تحریک ھق خود ارادیت کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے کہا ہے کہ برطانیہ پوری دنیا میں واحد ملک ہے جس نے برطانیہ اور یورپ میں کشمیر کے لیے آواز اٹھانے والوں کو ہر ممکن تعاون فراہم کیا۔برطانیہ اور یورپ کے ممبران پارلیمنٹ مقبوضہ کشمیر کے مظلوم کشمیریوں کی آواز کو ہمیشہ بلند کر تے رہے ہیں اور اپنی حمایت جاری رکھیں گے۔ ہندوستان کی کوشش تھی کہ پاکستان دنیا میں اکیلا رہ جائے لیکن اپنے متنازعہ اقدامات کے ذریعے اب بھارت خود اکیلا رہ گیا ہے بھارت بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔سیکرٹری جنرل یو این اوانتویو گوتریس نے پاکستان آکر مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی بات کی۔بھارت کو اپنی افواج کا انخلاء کرنا ہو گا۔لیبر پارٹی کی کونسلر و چیئرپرسن تحریک حق خود ارادیت برطانیہ کونسلریاسمین ڈارنے کہا کہ ہم نے لیبر پارٹی کی جانب سے برطانوی پارلیمنٹ میں بھی اور لیبر پارٹی کی سالانہ کانفرنس میں بھی بھارتی مظالم کیخلاف مذمتی قرار داد منظور کرائی ہے۔کونسلر یاسمین ڈارنے کہا ہے کہ مجھے فخر ہے کہ میں مقبوضہ کشمیر کے عوام کے حق میں آواز بلند کرتی ہوں کشمیریوں کی آواز کو انسانی بنیادوں پر بین الاقوامی دنیا کے سامنے اٹھانا چاہیے۔ بھارت کی ہر قسم کی لابنگ کو متحد ہو کر ختم کیا جاسکتا ہے۔، بھارت کی جانب سے برطانیہ میں آزادی کشمیر کے لیے آواز بلند کرنے کی کوششوں کو روکنے کی بھارتی کوشش ناکام بنائیں گے۔ راجہ نجابت نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں غیر قانونی اقدامات کے بعد صرف کشمیر میں ہی حالات خراب نہیں بلکہ مودی کے انتہاء پسنداناہ اقدامات کی وجہ سے پورا بھارت عدم استحکام کا شکار ہو چکا ہے۔ سیکرٹری جنرل یو این اوکو کرتار پور کا دورہ کرانا پوری دنیا میں پاکستان کا مثبت کردارکو اجاگر کیا گیا ہے۔ آج بھارت کے اندر مودی نے دو قومی نظریہ کو تسلیم کرلیا ہے،۔عبدالحمید لون نے کہا کہ حکومت پاکستان کا کشمیر کے لیے کردار قابل تحسین ہے۔ بین الاقوامی برادری کو عملی اقدامات اٹھانے ہونگے۔راجہ نجابت نے کہا کہ آل پارٹیز کشمیر پارلیمنٹری گروپ برطانوی پارلیمنٹ میں کشمیر ر جلد قرار دادبھی پیش کرے گا۔