مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
مسئلہ کشمیر پربحث کیلئے ڈیبی ابراھم کیطرف سے برطانوی پارلیمنٹ میں تحریک پیش
پاکستانی نژاد پیشہ ورانہ ماہرین اور طلبہ جہاں بھی ہوں اقدار کی پاسداری کریں: نفیس زکریا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
لالہ بابو علی اصغر کی جانب سے5فروری یوم سیاہ کشمیر کےحوالہ سےتقریب کا انعقاد
راچڈیل(محمد فیاض بشیر) آل جموں و کشمیر مسلم کانفرنس تحریک کشمیر بورڈ برطانیہ و یورپ کے چیئرمین چوہدری بشیر رٹوی اورمسلم کانفرنس راچڈیل برانچ کے صدر لالا علی اصغر نے کہا ہے کہ مسلم کانفرنس تحریک آزادی کشمیر میں صف اول پر رہیگی۔ 5 فروری یوم یکجہتی کشمیر پر ہم نے یہ عہد کرنا ہے کہ سردار عتیق احمد خان کی قیادت میں کشمیری عوام کی آزادی کے لئے جدوجہد جاری رکھیں گے کیونکہ جس طرح افواج پاکستان کی سرحدوں کی امین ہے اسی طرح مسلم کانفرنس جغرافیائی اور نظریاتی سرحدوں کی امین ہے۔ آزادی کشمیر کی تحریک میں مسلم کانفرنس نے اہم کردار ادا کیا۔ کشمیریوں کے حوصلے کشمیر کی آزادی کے لئے جواں ہیں۔ان خیالات کا اظہار اُنھوں نے یوم یکجہتی کشمیر کے حوالہ سے راچڈیل برانچ مسلم کانفرنس کے زیر اہتمام ہونے والے اجلاس میں کیا۔اُنھوں نے کہا ہے کہ اہل پاکستان ہر سال 5فروری کو اپنے مظلوم کشمیری بھائیوں سے بھرپور اظہارِ یکجہتی کرتے ہیں جس سے پوری دنیا پر عیاں ہو جاتا ہے کہ اہل کشمیر غاصب بھارت کے خلاف جدوجہد آزادی میں اکیلے نہیں بلکہ اسلامیان پاکستان کا ہر پیرو جوان، مرد و زن اور بچہ بچہ ان کے ساتھ ہے۔ اہل پاکستان کا اصل رشتہ کشمیری بھائیوں کے ساتھ اسلام کا رشتہ ہے اور یہی وہ واحد مشترکہ چیز ہے جو کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہماری یکجہتی کی اصل بنیاد ہے۔ خود پاکستان اسی بنیاد پر قائم ہوا اور یوں اس کے دنیا بھر کے اہل اسلام سے اخوت و یگانگت کے اٹوٹ رشتے بھی خود بخود قائم ہوگئے اور یہ پاکستان کی خارجہ پالیسی کا بنیادی نکتہ بنا کہ جہاں بھی اہل اسلام کو اہل پاکستان کی مدد کی ضرورت ہوگی، اہل پاکستان لا الہ الا اللہ کے رشتے کی صدا پر لبیک کہتے ہوئے ان کی ہر طرح سے مدد کرنے کے پابند ہوں گے۔ چنانچہ اس بنیاد پر پاکستان، فلسطین سے لے کر کشمیر تک ہر جگہ اہل اسلام کی جدوجہد آزادی کے حق میں آواز بلند کرتا آیا ہے۔ پاکستان کے اسی بنیادی نظریہ کی پاسداری کرتے ہوئے بانی پاکستان محمد علی جناح بھی کشمیر و فلسطین سمیت ہر جگہ مسلمانانِ عالم کی جدوجہد آزادی اور حقوق کے لیے دلیرانہ آواز بلند کرتے رہے۔ اجلاس میں دیگر کشمیری رہنماؤں نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔