مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
مسئلہ کشمیر پربحث کیلئے ڈیبی ابراھم کیطرف سے برطانوی پارلیمنٹ میں تحریک پیش
پاکستانی نژاد پیشہ ورانہ ماہرین اور طلبہ جہاں بھی ہوں اقدار کی پاسداری کریں: نفیس زکریا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
یورپین پارلیمنٹ کشمیر کی صورتحال کو نظر انداز نہ کرے:راجہ نجابت حسین
بریڈ فورڈ:یورپی پارلیمنٹ میں فرینڈز آف کشمیر گروپ کے شریک چیئرپرسن ایم ای پی مسٹررچرڈ کوربٹ اور گروپ کی شریک چیئر پرسن ایم ای پی انتھیا میکناٹائر نے یورپی پارلیمنٹ میں فارن افیئرز کمیٹی کے چیئر پرسن مسٹر ڈیوڈ ایم ای پی اور انسانی حقوق کمیٹی کی چیئرپرسن ماریہ ارینا کے نام اپنے ایک خط میں لکھا ہے کہ پارلیمنٹ کشمیر کی صورتحال کو نظر انداز نہ کرے،پیشرفتوں پر نظر رکھے اور رپورٹروں،قراردادوں اور سوالات کے ذریعہ مناسب معاملات اٹھائے،گزشتہ ہفتے یورپی پارلیمنٹ گروپ آف کشمیر کا آخری اجلاس منعقد ہوا جس میں جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹرنیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین کی ہدایت پر تحریک کے ایک وفد نے برطانیہ کی چیئرپرسن کونسلر یاسمین ڈار کی قیادت میں شرکت کی تھی،اس اجلاس میں ہونےوالے فیصلوں کی روشنی میں ایم ای پی مسٹر رچرڈ کوربٹ اور ایم ای پی اینتھیا میکناٹائر نے یورپین پارلیمنٹ کی امور خارجہ اور انسانی حقوق کمیٹیوں کے چیئرپرسنز کو اپنے خط میں لکھا ہے کہ افسوس کی بات ہے کہ ہم اس مہینے کے آخر میں یورپی پارلیمنٹ چھوڑ رہے ہیں ہمیں امید ہے کہ آپ اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ یہ کشمیر فرینڈز گروپ،سول سوسائٹی اور کشمیری عوام کے نمائندوں کے ساتھ ساتھ اور خطے میں انسانی حقوق کے امور کے بارے میں شعور اجاگر کرنے کیلئے بات ایک اہم فورم کے طور پر کام کرتا رہے گا،انہوں نےخط میں کشمیر کی سنگین صورتحال کا ذکر کرتے ہوئے لکھا کہ جیسا کہ آپ کو معلوم ہے کہ کشمیرایک متناذعہ اور تقسیم شدہ علاقہ ہے جس میں جموں و کشمیر اور لداخ کے ہندوستان کے زیر انتظام علاقوں،آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے پاکستانی زیر انتظام علاقوں اور اکساچن کے چینی زیر انتظام علاقے شامل ہیں،کشمیری عوام اب تک اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی متعدد قراردادوں پرعمل درآمد کے منتظر ہیں جو انہیں رائے شماری کے ذریعے اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کا حق دیتی ہیں،انہوں نے تحریر کیا کہ گزشتہ موسم گرما میں کشمیر کی صورتحال یکسر خراب ہو گئی کیونکہ ہندوستان نے یکطرفہ طور پر اپنے زیر انتظام کشمیر کے حصے کی آئینی حیثیت کو تبدیل کرتے ہوئے اس کی خود مختاری کا خاتمہ کیا،اس علاقے میں اضافی فوجی بھیجے،سیکڑوں مقامی سیاستدانوں کو گرفتار کیا اور میڈیا بلیک آئوٹ کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی ہیومن رائٹس2018کی رپورٹ نے پہلے ہی یہ بات اجاگر کی ہے کہ کشمیر میں ہندوستانی فوج وہاں کے لوگوں پر قابو پانے کے لئے پیلٹ گنوں کو استعمال کرتی ہے اور رپورٹ میں ہندوستانی فوج پر تشدد،اغوا اور صحافیوں پر حملوں کے الزامات عائد کئے گئے تھے،انہوں نے کہا کہ یہ ضروی ہے کہ یورپی پارلیمنٹ اور خاص طور پر آپ کی کمیٹیاں اس معاملے پر چوکنا اور متحرک رہیں،جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے ایک بیان میں ایم ای پی مسٹررچرڈ کوربٹ اورایم ای پی انتھیا میکناٹائرکی طرف سے لکھے جانے والے اس خط کا خیر مقدم کرتے ہوئے اسے ایک مثبت پیش رفت قرار دیا ہے اور اس توقع کا اظہار کیا ہے کہ یورپی پارلیمنٹ میں کشمیریوں کی آواز کو پہلے سے زیادہ موثر انداز میں اجاگر کیا جائے گا۔