مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
پاکستان پریس کلب یوکے کے سالانہ انتخابات اور تقریب حلف برداری
چیئرمین پی آئی ایچ آرچوہدری عبدالعزیز کوسوک ایوارڈ فار کمیونٹی سروسز سے نواز گیا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
پی ٹی آئی برطانیہ عمران خان کی سوچ و افکار اور نظریات سے ہٹ چکی
لندن(نمائندہ خصوصی) تحریک انصاف برطانیہ اپنے قائد وزیراعظم عمران خان کی سوچ و افکار اور نظریات سے ہٹ گئ ہے اور اسکے اندر ایسی کالی بھیڑیں شامل ہو گئ ہیں جنکے مقاصد کچھ اور ہیں ایسے افراد کا محاسبہ کرنا ہی تحریک انصاف کے وسیع تر مفاد میں ہے وگرنہ پورے عالم میں بدنامی کا لبادہ اوڑھنا پڑے گا پھر پچھتائے کیا ہوت جب چڑیاں چگ گئیں کھیت والی کہاوت بن جائے گی۔ تحریک انصاف لندن برانچ کے سینئر نائب صدر کاشف احسان نے خواتین کارکنان کا سماجی رابطوں کے لیے متحرک میڈیا پر جینا حرام کیا ہوا جو کسی بھی غیرت مند انسان کو زیب نہیں دیتا ایسے شخص کو پارٹی سے نکالنا ہی مفاد میں ہے لیکن برطانیہ میں رہتے ہوئے بھی ہم اقرا پروری ذاتی پسند کی بنیاد پر اس کردار کے مالک انسان کو تحفظ دینے کے لیے اپنے پورے وسائل کو بروئے کار لاتے ہیں۔ سننے دیکھنے اور پرکھنے میں یہ آیا ہےکہ کاشف احسان کو تحریک انصاف برطانیہ کے مرکزی صدر شرجیل ملک کی خاص آشیر باد حاصل ہے جس سے وہ بھرپور فائدہ اٹھاتا ہے۔ تحریک انصاف کی دو خواتین اراکین نے اس کی نازیبا زبان اور حراساں کرنے کے خلاف جماعت کو شکایت بھی کر دی ہے امید ہے سخت تادیبی کاروائی ہو گی تاکہ دوسروں کے لیے نشان عبرت ہو تاکہ تحریک انصاف میں خواتین اپنے آپکو محفوظ سمجھیں اور پی ٹی آئی یو کے کے جنرل سیکرٹری ، یارکشائر کے دو دفعہ صدر رہنے والے اسلم بھٹہ کے خلاف بھی گندی زبان کا استعمال اسکا خاصا رہا ہے لیکن تحریک انصاف برطانیہ کے منتخب مرکزی عہدیداران اسکو بچانے کے لیے سرتوڑ کوشش کر رہے ہیں سب نے یو کے میں اس کے خلاف کمپلینٹ کی ہیں لیکن یو کے کی الکیٹد باڈی اس کو بچانے کے چکر میں ہیں۔ اگر اسکے خلاف سخت تادیبی کاروائی نہ کی گئ تو تحریک انصاف برطانیہ میں خواتین کا کردار محدود ہو جائے گا اور قائد عمران خان کی سوچ و فکر اور نظریات کو سخت دھچکا لگے گا لہذا برائی کو ابتدا میں ہی اسے جڑ سے اکھاڑ باہر پھینکنا چاہیے۔