مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
مسئلہ کشمیر پربحث کیلئے ڈیبی ابراھم کیطرف سے برطانوی پارلیمنٹ میں تحریک پیش
پاکستانی نژاد پیشہ ورانہ ماہرین اور طلبہ جہاں بھی ہوں اقدار کی پاسداری کریں: نفیس زکریا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
جموں و کشمیر تحریک حق خود اردیت کا لوٹن میں کشمیر لابی کانفرنس کا انعقاد
لوٹن ( محمد فیاض بشیر)برطانوی انتخابات کے موقع پر جموں و کشمیر تحریک حق خود اردیت کا برطانیہ کے شہر لوٹن میں کشمیر لابی کانفرنس کا انعقاد ، کشمیر لابی کانفرنس میں لوٹن سے لیبر پارٹی کے امیدواروں لوٹن نارتھ سے سارہ اوون اور لوٹن سائوتھ ریچل ہوپکنز کے علاوہ مئیر لوٹن ، لوٹن کونسل اور دیگر شہروں کے کونسلرز کے علاوہ لیبر پارٹی رہنمائوں نے شرکت کی ۔ اس موقع پر کشمیر لابی کانفرنس کی صدارت چیئرمین راجہ نجابت حسین نے کی جبکہ مہمان خصوصی لیبر امیدواران نے تھے ۔ اس موقع پر لابی کانفرنس میں لیبر پارٹی کے دونوں امیدواروںنے تحریک حق خود ارادیت کی کشمیر کے حوالے سے پانچ نکاتی پٹیشن پر بھی دستخط کئے اور اعلان کیا کہ منتخب ہونے کے بعد پارلیمنٹ میں کشمیر پارلیمنٹری گروپ کا حصہ بھی بنیں گے ۔ اس موقع پر دونوں امیدواران سارہ اوون اور ریچل ہوپکنزنے مشترکہ طور پر کہا کہ کشمیر کی صورتحال جہاں کشمیریوں کے لئے اذیت اور تکلیف کا باعث ہے وہیں ہمارے لئے بھی تشویش کا باعث ہے ۔ ہم کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی مکمل حمایت کرتے ہیں ۔ منتخب ہونے کے بعد پارلیمنٹ میں کشمیر گروپ کا حصہ بننے کے ساتھ کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے لئے بھی کام کیا جائے گا ۔ دونوں امیدواروں نے جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت کی مستقبل کی سرگرمیوں میں شرکت کے علاوہ مکمل سپورٹ کی جائے گی ۔ اس موقع پر چیئرمین راجہ نجابت حسین نے خطاب کرتے ہوئے کانفرنس کے شرکاء کو مقبوضہ کشمیر کی تازہ صورتحال پر بارے بریفنگ دی اور کشمیر کے حوالے سے برطانیہ و یورپ میں تحریک حق خود ارادیت کی سرگرمیوں اور پروگرامات بارے آگاہ کیا ۔ راجہ نجابت حسین نے کہا کہ مسئلہ کشمیر جہاں جنوبی ایشیاء میں امن کے لئے ایک بڑا خطرہ ہے وہیں یہ عالمی اداروں اور بین الاقوامی برداری کے کردار پر بھی ایک سوالیہ نشان ہے ۔ بھارت نے کشمیر میں چار ماہ سے کرفیو، لاک ڈائون کر کے کشمیر کو ایک مکمل جیل میں تبدیل کر دیا ہے ۔خواتین ، بچوں ، بوڑھوں پر تشدد اور جوانوں کو چن چن کر شہید کیا جا رہا ہے ۔معصوم نوجوانوں اور بچوں کو گھروں سے اٹھا کر غائب کیا جا رہا ہے ۔ ہزاروں کی تعداد میں شہریوں کو گرفتار کر کے جیلوں میں بند کیا گیا ہے ۔ کشمیری اپنے بنیادی حق خود ارادیت کا مطالبہ کر رہے ہیں ۔ اس موقع پر کشمیر لابی کانفرنس میں تحریک کے سرپرست اعلیٰ سردار عبدا لرحمن خان ،میئر لوٹن کونسلر طاہر ملک ، سیکرٹری جنرل محمد اعظم ، برطانیہ کی چیئرپرسن کونسلر یاسمین ڈار ، یوتھ کے چیئرمین ذیشان عارف ، نائلہ خان ، راجہ اعظم خان، کونسلر سمیرا شاہد ، کونسلر نوید خان ، کونسلر آصف مسعود ، کونسلر خدیجہ ملک ، مسلم کانفرنسی رہنماء محمد شبیر ملک ، راجہ شاہد خان اور دیگر رہنمائوں نے بھی خطاب کیا ۔ اس موقع پر تحریک حق خود ارادیت نے پانچ نکاتی پٹیشن بھی پیش کی جس پر برطانیہ بھر سے امیدواروں سے دستخط کرائے جا رہے ہیں ۔ پٹیشن میں امیدواروں سے مطالبہ کیا جا رہا ہے کہ کشمیریوں کے بنیادی ، جمہوری حق رائے دہی کی حمایت کے ساتھ کشمیر کے حق میں اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عملدرآمد کے علاوہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی روک تھام کی جائے اور کشمیر کی آئینی و خصوصی حیثیت کو تبدیل کرنے اور کشمیریوں کے حق کو غصب کرنے کے خلاف آواز بلند کی جائے ۔ اس پٹیشن پر متعدد امیدواروں سے دستخط کے لئے تحریک حق خود ارادیت کی لابی مہم جاری ہے ۔