مقبول خبریں
اکیڈمی آف سائنس،ٹیکنالوجی اینڈ مینجمنٹ اولڈہم کی سالانہ تقسیم اسناد تقریب کا انعقاد
کشمیر یوم سیاہ کے حوالے سے پاکستان ہائی کمیشن لندن میں سیمینار، بھارتی مظالم کی پرزور مذمت
دعوت اسلامی برمنگھم کے زیر اہتمام خراب موسم کے باوجودجشن عید میلاد النبیؐ کا جلوس
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میلاد النبی کی تقریبات منعقد کر کے اللہ کریم کے شکر گزار ہیں کہ اس نے مومنوں پر احسان فرمایا
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
یاسمین ڈار کا لیبر پارٹی لیڈر جیریمی کوربن کے ساتھ مل کر انتخابی مہم کا آغاز
یہ رنگ جو مہکے تو ہوا پھول بنے گی!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
تحریک حق خود اردایت کے وفد کی انتخابات کے حوالے سے کنزرویٹیو رہنمائوں سے اہم ملاقات
کیگلی (محمد فیاض بشیر )جموں و کشمیر تحریک حق خود اردایت انٹر نیشنل کے وفد کی برطانوی وزیر اینڈریو اسٹیفنسن اور کیگلی سے کنزروٹیو پارٹی کے امیدوار روبی مور سے ملاقات، وفد نے برطانوی وزیر اور کنزرویٹو امیدوار سے برطانیہ کے انتخابات، مقامی سیاسی صورتحال اور مسئلہ کشمیر کے حوالے سے تفصیلی گفتگو کی اور کشمیر کی موجودہ صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔تحریک حق خود ارادیت کے وفد نے برطانوی وزیر سے مسئلہ کشمیر کے حوالے سے برطانیہ کے اہم کردار اور حل کے لئے اقدامات اٹھانے پر زور دیا۔وفد نے اپیل کی کشمیر میں گذشتہ چار ماہ سے مسلسل کرفیو اور لاک ڈاؤن، انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں روکنے اور کشمیریوں کو حق خود ارادیت دلانے کے لئے عملا کردار ادا کرے۔اس موقع پر برطانوی وزیر اینڈریو اور کنزرویٹو امیدوار روبی مور نے کہا کہ مسئلہ کشمیر ایک دیرینہ مسئلہ ہے جسے حل ہونا چاہئے۔ حق خود ارادیت کشمیریوں کا حق ہے۔ بھارت اور پاکستان کو چاہئے کہ وہ کشمیریوں کو حق خود ارادیت اور ان کی خواہشات کے مطابق مسئلہ کے حل کرنے کے لئے اقدام اٹھائیں گے۔ انتخابات میں کشمیری کمیونٹی کنزرویٹو پارٹی کے امیدواروں کو سپورٹ کرے۔ مسئلہ کشمیر کے لئے پارٹی قیادت کے سامنے کشمیریوں کا مؤقف اٹھائیں گے۔ اس موقع پر بانی چیئرمین تحریک حق خود ارادیت راجہ نجابت حسین، تحریک کے سرپرست اعلیٰ سردار عبد الرحمن خان نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 5اگست کو بھارت نے کشمیر کی خصوصی حیثیت کو تبدیل کرنے کا مذموم قدم اٹھایا اور کشمیر میں مزید فوج تعینات کر کے کرفیو لگا کر کشمیر کا مکمل لاک ڈاؤن کر دیا ہے۔ کشمیری گذشتہ چار ماہ سے کرفیو اور لاک ڈاؤن میں ہیں۔ تحریک آزادی کے لئے آواز بلند کرنے والے حریت قائدین، سیاسی لیڈران اور متحرک کارکنان کو گرفتار کر کے جیلوں میں بند کر دیا گیا ہے جبکہ بھارتی فوج گھروں میں گھس کر خواتین اور بچوں کو تشدد کا نشانہ بنا رہی ہے۔ نوجوانوں کو چن چن کر گرفتار اور مزاحمت کرنے والوں کو شہید کیا جا رہا ہے۔ بھارت ہر طرح کے بین الاقوامی معاہدوں، قوانین اور چارٹرز کو جوتے کی نوک پر رکھ انہیں سبوتاژ کر چکا ہے۔ برطانیہ نا صرف مسئلہ کشمیر کے حوالے سے ایک بنیادی کردار رہا بلکہ دنیا کا ایک برا ملک ہے جسے جنوبی ایشیاء میں امن کے لئے عملی قدم اٹھاتے ہوئے مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا کلیدی کردار ادا کرنا چاہئے۔ کشمیریوں کا ایک ہی دیرینہ مطالبہ ہے کہ وہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کا حل چاہتے ہیں اور حق خود ارادیت کا مطالبہ کرتے ہیں۔ اس موقع پر کیگلی میں کنزرویٹو امیدوار کے لئے انتخابی مہم کے سلسلہ میں ایک مقامی ریسٹورنٹ میں تقریب منعقد کی گئی جس میں بھی رہنماؤں نے خطاب کیا۔ اس موقع پر چوہدری محمد آصف ڈی سی، کونسلر محمد ناظم،چوہدری شاہد رسول اور دیگر نے بھی اظہار خیال کیا۔