مقبول خبریں
مسرت چوہدری اور اختر چوہدری کا لارڈ مئیر عابد چوہان کے اعزاز میں ظہرانہ
پاکستان پریس کلب یوکے کے سالانہ انتخابات اور تقریب حلف برداری
چیئرمین پی آئی ایچ آرچوہدری عبدالعزیز کوسوک ایوارڈ فار کمیونٹی سروسز سے نواز گیا
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
اسرار احمد راجہ کی کتاب کی تقریب رونمائی ،مئیر آف لوٹن کونسلر طاہر ملک ودیگرافراد کی شرکت
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
ہر انسان کو اس کے مذہب کے مطابق تدفین کی اجازت ملنی چاہئے: سعیدہ وارثی و دیگر
Corona virus
پکچرگیلری
Advertisement
وزیراعظم پاکستان کے مسئلہ کشمیر پر موقف سے کشمیریوں کے حوصلے بلند ہوئے:چوہدری بشیر رٹوی
مانچسٹر (محمد فیاض بشیر) آل جموں و کشمیر مسلم کانفرنس تحریک کشمیر بورڈ برطانیہ و یورپ کے چیئرمین‘چوہدری بشیر رٹوی نے کہا کہ سردار عبد القیوم خان نظریہ الحاق پاکستان کے زبردست حامی اور محافظ تھے اور تا دم زیست اسی نظریے کے علمبردار رہے۔ پاکستان کی حکومت اور عوام کشمیریوں کی سیاسی، سفارتی اور اخلاقی مدد کر رہے ہیں۔ وزیراعظم پاکستان کے مسئلہ کشمیر پر دو ٹوک موقف سے کشمیریوں کے حوصلے بلند ہوئے ہیں۔ پاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور الحاق پاکستان کی عظیم جدوجہد جاری رکھیں گے۔کشمیری عوام نے پاکستان کے ساتھ الحاق کا فیصلہ کسی لالچ یا غرض کی بنیاد پر نہیں کیا بلکہ یہ فیصلہ کلمہ کی بنیاد پر کیا گیا اور آج بھی سارے کشمیریوں کے دل اہل پاکستان کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔ ریاست جموں و کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے اور کشمیری عوام الحاق پاکستان پر پختہ یقین رکھتے ہیں اسی غیر متزلزل یقین کی بنا پر ستر سال سے قربانیوں کا سلسلہ بغیر تعطل کے جاری ہے۔اُنھوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی آزادی اور پاکستان کے ساتھ الحاق ہماری منزل ہے۔الحاق پاکستان کشمیریوں کا بہترین مستقبل ہے۔مجاہد اول سردار عبدالقیوم مرحوم نے الحاق پاکستان کا علم بلند رکھا۔ اب تک لاکھوں کشمیری الحاق پاکستان کے لیے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر چکے ہیں۔ کشمیری عوام کے حوصلے بلند ہیں وہ اپنی آزادی کی تحریک اسی تسلسل سے جاری رکھے ہوئے ہیں۔مجاہد اول سردار عبدالقیوم مرحوم کے تاریخ ساز فیصلے نے جدوجہد آزادی کا رخ جس منزل کی طرف موڑا تھا اسی عظیم مقصد کے حصول کے لیے آج مقبوضہ کشمیر میں نہتے کشمیری بھارت کی آٹھ لاکھ سے زائد فوج کے آگے سینہ سپر ہیں۔ ریاست کا پاکستان کے ساتھ الحاق ہمارے سیاسی ایمان کا حصہ ہے۔ اُنھوں نے کہا کہ بھارت ریاست جموں و کشمیر میں نہتے عوام کو ظلم کا نشانہ بنا رہا ہے۔ اُنھوں نے کہا کہ پچھلے چند ہفتوں سے مقبوضہ کشمیر میں کرفیو نافذ ہے اور کشمیریوں کو شہید کیا جا رہا ہے۔ لیکن کشمیری عوام کے حوصلے بلند ہیں وہ اپنی آزادی کی تحریک اسی تسلسل سے جاری رکھے ہوئے ہیں۔ جس کیلئے کشمیری ایک صدی سے زائد عرصہ سے قربانیاں دے رہے ہیں اور یہ مسلمہ حقیقت ہے کہ ریاست جموں و کشمیر میں جاری تحریک کو کچلنے کے لیے ظلم و جبر کا ہر حربہ ناکام ہو چکا ہے اور کشمیری اس مشن کی تکمیل ضرور کریں گے۔