مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
نشتےرین اور آل پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن برطانیہ کے مشترکہ تعاون سےمیڈیکل کانفرنس
اولڈہم(محمد فیاض بشیر)نشتر میڈیکل کالج ملتان سے فارغ التحصیل ڈاکٹرز کی بین الاقوامی سطح پر قائم تنظیم نشتےرین اور آل پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن برطانیہ کے مشترکہ تعاون سے اولڈہم میں سالانہ میڈیکل کانفرنس کا انعقاد ہوا جس میں پاکستان سمیت دنیا بھر سے نامور ڈاکٹر حضرات نے شرکت کی اور میڈیکل کے میدان میں اپنی تحقیق اور تجربات سے جونئیر ڈاکٹرز کو مفید معلومات دی۔ کانفرنس میں میڈیکل کے میدان میں استمعال ہونے والی جدید ٹیکنالوجی بارے بھی معلومات دی گئ تاکہ وہ برطانیہ کے ساتھ پاکستان میں بھی میڈیکل کے شعبہ میں اس سے استفادہ حاصل کر سکیں۔ اس موقع پر بین الاقوامی نشتےرین آرگنائزیشن کے چئیرمن ڈاکٹر اقبال عادل کا کہنا تھا کہ دنیا بھر کے مختلف ممالک کے ساتھ پاکستان سے نشتر میڈیکل کالج ملتان سے فارغ التحصیل ماہر ڈاکٹروں نے اس سیمنیار میں شرکت کی اور انہوں نے اپنے شعبہ میں تحقیقاتی کام اور تجربات سے آگاہی دی ۔ان کا مذید کہنا تھا کہ سیمینار کا بنیادی مقصد نوجوان نسل کو میڈیکل کی تعلیم سے آگاہ کرنا اور فروغ دینے کے ساتھ اپنے علم و تجربے کو ان تک پہنچانا تھا۔ انہوں نے سیمینار میں دور دراز سے شرکت کرنے والے ڈاکٹر حضرات کا دل کی گہرائیوں سے شکریہ ادا کیا۔ آرگنائزیشن کے جنرل سیکرٹری ڈاکٹر چشتی کا کہنا تھا کہ سیمنیار کا مقصد میڈیکل کے طالبعلموں اور نئے ڈاکٹرز کو جدید سائنسی تعلیم سے آگاہ کرنا تھا۔ ان کا مذید کہنا تھا کہ بین الاقوامی کانفرنس میں ماہر کنسلٹنٹ، سرجنز، اور فیملی ڈاکٹرز نے شرکت کی اور معاشرے میں اپنے کردار اور پیشہ ورانہ خدمات بارے ہمیں بتایا جو جونئیر ڈاکٹرز کے لیے انتہائی مفید ہے۔ ڈاکٹر ارشد ملک کا کہنا تھا کہ پاکستان سے آئے جونئیر ڈاکٹرز کو جدید سائنسی تعلیم اور تکینک بارے معلومات فراہم کرنا تھی تاکہ وہ پاکستان واپس جا کر ملک وقوم کی خدمت کر سکیں۔ ڈاکٹر عنصر حیات اور دیگر ڈاکٹر حضرات نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے اس سیمینار کو انتہائی مؤثر قرار دیا۔ سیمینار کے بعد مقامی ریسٹورنٹ ہال میں سیمینار میں شرکت کرنے والے ڈاکٹروں کے اعزاز میں ایک پر تکلف عشائیہ بھی دیا گیا جس میں کمیونٹی کی سرکردہ شخصیات نے شرکت کی۔