مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
کیئرنگ اینڈ شیئرنگ گروپ کے زیر اہتمام تقریب،مختلف ممالک کی خواتین نے ثقافتی رنگ پیش کئے
راچڈیل (محمد فیاض بشیر)راچڈیل کے مقامی ہال میں بین الثقافتی و مذاہب اور برطانیہ میں رہائش پذیر مختلف ممالک کی خواتین کا ایک رنگا رنگ پروگرام منعقد ہوا۔ اس تقریب کا انعقاد کئیرنگ اینڈ شئیرنگ گروپ نے کیا ۔ مختلف ممالک کی خواتین نے اپنے ثقافتی رنگ پیش کر کے ماحول کو گرما دیا اور کمیونٹی کے اندر اتحاد و اتفاق کی اعلیٰ مثال قائم کی اور اس بات کا اعادہ کیا کہ اس طرح کی مذید تقریبات کا انعقاد کر کے کمیونٹی کو ایک دوسرے کے قریب لایا جائے گا۔ حمیرا حقانی کا کہنا تھا کہ اس قسم کی تقریب کا انعقاد ہماری ضرورت ہے برطانیہ میں مختلف ثقافت رنگ و نسل اور مذاہب کے لوگ مل کر اکٹھے رہتے ہیں اور تقریب اس بات کی عکاسی کرتی ہے ہم متحد ہیں ان کا مذید کہنا تھا کہ مستقبل میں ضروری ہے کہ اس طرح کی تقریبات کا انعقاد ہو تاکہ دنیا میں امن و امان قائم ہو لوگ چین سے رہ سکیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمیں ایک دوسرے کی عزت کرنے اور پیار ومحبت سے رہنے کی ضرورت ہے۔ روس سے تعلق رکھنے والی رخسان کا کہنا تھا میں اپنے ملک کی نمائندگی کرنے کے لیے آئ ہوں اس طرح کی مذید تقریبات ہمیں اور قریب لائیں گی جہاں مختلف ممالک کے لوگ ایک چھت کے سائے تلے جمع ہوں۔ ایران سے تعلق رکھنے والی فرزانہ کا کہنا تھا کہ پروگرام میں خوب ہلا گلا ہو رہا ہے اور پندرہ مختلف ممالک کی خواتین شریک ہیں راچڈیل میں ہم سب امن و سکون محبت کے ساتھ رہتے ہیں اور کمیونٹی کے اندر اتحاد و اتفاق ہے ۔ نائیجیریا کی سانڈرا نے تقریب میں شریک خواتین کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ہم بے شک مختلف ممالک سے تعلق رکھتے ہیں لیکن ثقافتی طور پر ہماری کئ چیزوں میں مماثلت ہے جس کا عملی مظاہرہ اس تقریب میں شریک خواتین نے ایک دوسرے کی ثقافت سے لطف اندوز ہو کر کیا ہے۔ تقریب میں ایشیائی افریقن اور دیگر ممالک کی موسیقی کی دھنوں پر خواتین نے رقص کر کے ماحول کو رنگین بنا دیا اور خوب داد وصول کی ۔