مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سابق صدر پی ٹی آئی یارکشائر اینڈ ہمبر ریجن طاہر ایوب خواجہ کا اپنی رہائش گاہ پر محفل کا انعقاد
بریڈفورڈ ( نمائندہ خصوصی) سابق صدر پاکستان تحریک انصاف یارکشائر اینڈ ہمبر ریجن طاہر ایوب خواجہ نے اپنی رہائش گاہ ڈیوزبری برطانیہ میں ایک خوبصورت محفل ضیافت سجائی جس میں سابق ایڈمنسٹریٹر میونسپل کارپوریشن میرپور غلام رسول عوامی اور پاکستان سے اور دبئی سے کرکٹ ورلڈ کپ کی کوریج کے لئے آئے معروف سپورٹس رپوٹرز عبدالرحمان رضا اور شاکر عباسی صاحب مہمانان خصوصی تھے ۔صدر پاکستان پریس کلب برطانیہ یارکشائر ریجن شکیل انجم راجپوت اور فرینڈز آف پاکستان پریس کلب برطانیہ یارکشائر ریجن کے چئیرمین زاہد مغل سابق فنانس سیکریٹری پی پی سی یوکے یارکشائر ریجن اور نمائندہ جیو رجاسب مغل چوہدری مظہر حسین غلام فرید عوامی اور خواجہ صاحب کی فیملی کے بزرگوں نے محفل کی رونق کو دوبالا کیا اور گذرے وقت کی یادیں اور حال کے سیاپوں سمیت کافی سیر حاصل گفتگو ھوئی اور محفل میں سب سے عمر رسیدہ بزرگ تھے ان کی اس محفل میں اپنے وطن کے ساتھ محبت دیکھی وہ عمر میں بھی میرپور آزاد کشمیر سے اکالگڑھ سے جوڑنے والے زیر تعمیر پل کے لئے شدید فکر مند تھے کہتے ہیں ڈیم میں ناصرف لوگ ڈوبے ہیں بلکہ جو بچ گئے ہیں ان کے اور بڑے ضلعی شہر کے درمیان پانی نے فاصلہ بڑھا دیا ھے اور جو ہملٹ تیار کرنے کا وعدہ 1962 میں کیا تھا وہ بھی تعمیر نہیں ھوئے لیکن لوگوں نے دوسری دفعہ قربانی دی اور اب ھم چاہتے ہیں اس پل کے ذریعے ھم ایک بار جیتے جی فاصلوں اور محرومیوں کو ختم ھوتا دیکھنا چاہتے ہیں بابا جی کی بات سن کر دلی خوشی ھوئی کہ بابا جی سارئ زندگی برطانیہ میں رہ کر بھی سوچتے ہر وقت اپنے دیس کے لیئے ہیں وہ کہتے ہیں سوتا برطانیہ میں ھوں اور آج بھی خواب اپنے وطن اپنے گاوں کے دیکھتا ھوں ۔