مقبول خبریں
ایسٹرن پویلین ہال اولڈہم میں آزادکشمیر میں قائم اسلام ویلفیئر ٹرسٹ کے سالانہ چیرٹی ڈنر کا انعقاد
مسئلہ کشمیر بارےیورپی پارلیمنٹ انتخابات پر برطانیہ و یورپ میں بھرپور لابی مہم چلائینگے،راجہ نجابت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
سرچ آپریشن
پکچرگیلری
Advertisement
شیڈو وزیر افضل خان کا برطانوی پارلیمنٹ میں نیوزی لینڈ سانحہ کے شہداء کو خراج عقیدت
لندن (خصوصی رپورٹ: اکرم عابد)پاکستانی نژاد برطانوی پارلیمنٹ کے ممبر و شیڈو وزیر افضل خان نے برطانوی پارلیمنٹ کے اندر کہا کہ آج پارلیمنٹ نے نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ کی مسجد کے شہداء کو خراج عقیدت پیش کیا اور اسکی سانحہ کی آڑ میں برطانیہ کے شہر برمنگھم اور نیوکاسل میں شر پسند عناصر نے مساجد پر حملہ کیا۔ کچھ عرصہ پہلے حکمران جماعت کنزرویٹو کے پچاس کونسلرز کو نسلی امتیاز اور اسلاموفوبیا کی وجہ سے معطل کر کے دوبارہ رکنیت بحال کر دی ہے اور کنزرویٹو پارٹی کے چیئرمین اسلاموفوبیا کے تلفظ کی ادائیگی صحیح طور پر نہیں کر سکتے وہ کیسے اپنی جماعت کے ممبران کی انکوائری کریں گے۔ انہوں نے وزیراعظم ٹریسا مے کی توجہ دوبارہ اس طرف بھی دلائی کہ برمنگھم اور نیوکاسل میں بھی مساجد پر حملے کیے گئے ۔اس کے جواب میں وزیراعظم ٹریسا مے کا کہنا تھا کہ کنزرویٹو پارٹی کے کسی بھی منتخب نمائندے کے خلاف اسلاموفوبیا یا پھر کوئی اور الزام ہو اسکی تحقیقات کی جاتی ۔برمنگھم اور نیوکاسل مساجد میں ہونے والے حملے کی بھرپور مذمت کرتی ہوں ۔ان کا مذید کہنا تھا کہ مساجد ہوں یا پھر کوئی اور عبادت گاہ ایسے نہیں ہونا چاہیئے اور وزارت داخلہ نے مساجد کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے خصوصی فنڈنگ کر دی جاتی ہے ہمارے معاشرے میں شرپسند عناصر کی کوئی جگہ نہیں ہے۔ یاد رہے کہ کنزرویٹو پارٹی کے پچاس لوکل کونسلرز کی جماعت سے معطلی اور بحالی بارے افضل خان کے سوال کو وزیر اعظم ٹریسا مے نے پھر گول مول جواب دیا جس پر افضل خان پارلیمنٹ میں سر ہلاتے رہے۔