مقبول خبریں
روٹری کلب کے راہنما ڈاکٹر سہیل قریشی کے اعزاز میں سماجی کمیونٹی شخصیت چوہدری محمود کا استقبالیہ
پاکستان سے آئے وکلا کے اعزاز میں ورلڈ وائیڈ سالیسٹرز کے ڈائیریکٹر محمد اشفاق کا استقبالیہ
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجابت حسین کا کنزرویٹو پارٹی لیڈر شپ کیلئے وزیرخارجہ جیریمی ہنٹ کی حمایت کا اعلان
بے نظیر بھٹو: چراغ بجھ گیا لیکن روشنی زندہ ہے
پکچرگیلری
Advertisement
بھارتی لابی نے کشمیر کانفرنس کوانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کیے: شاہ محمود قریشی
لندن:پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے برطانوی پارلیمنٹ کے کمیٹی روم میں منعقد ہونے والی انٹرنیشنل کشمیر کانفرنس کے بعد پاکستان ہائی کمیشن میں فارن آفس کے ترجمان ڈاکٹر فیصل اور برطانیہ میں پاکستانی سفیر نفیس زکریا کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارتی لابی نے کشمیر کانفرنس کو رکوانے اور انکی شرکت کی راہ میں روڑنے اٹکانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے استمال کیے ہیں ان سے کہا گیا کہ برطانوی سیکرٹری خارجہ آپ کو باقاعدہ برطانیہ میں ویلکم کرنا چاہتے ہیں اور باقاعدہ طور پر مارچ یا اپریل میں برطانیہ آٰئیں لیکن انہوں نے جواب دیا کہ ان تاریخوں کو وہ پھر دوبارہ آجائیں گے لیکن کشمیر کانفرنس میں انہیں بہرصورت شرکت کرنی ہے وزیرخارجہ نے انکشاف کیا کہ وہ حریت کانفرنس کی قیادت کو کشمیر کانفرنس میں شرکت کے لئے وہ لانا چاہتے تھے لیکن انہیں ویزہ ہی نہیں دیا گیا جبکہ جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین یاسین ملک کی اہلیہ مثال ملک کو اسلام آباد برطانوی ہائی کمیشن نے ویزہ نہیں دیا شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کشمیر کانفرنس میں پاکستان کی سب جماعتوں کی بھرپور نمائندگی موجود تھی ہم نے ثابت کیا کہ اگرچہ ہمارے آپس میں پاکستان کے اندر سیاسی اختلافات ہیں لیکن کشمیر پر ہم من حیث القوم متحد ہیں بھارت کو پاکستان نے کشمیر پر واضح دو ٹوک مزاکرات کی دعوت دی ہے لیکن بھارت مذاکرات سے اس لئے راہ فرار اختیار کررہا ہے کہ چونکہ عالمی سطح پر بھارت کشمیر پر اپنی حمایت کھو رہا ہے جبکہ دوسری جانب بھارت مقبوضہ کشمیر میں فوجی تسلط، دبائو اور متشددانہ پالیسیوں کی وجہ سے کشمیری عوام میں تحریک مزاحمت کو نہیں روک سکا نہتے کشمیری اپنی جانوں کے نزرانے دے کر ثابت کر رہے ہیں کہ وہ بھارتی جبر کا مقابلہ کریں گے لیکن آزادی کے حق سے دستبردار نہیں ہوں گے بھارتی وزیراعظم نریندرمودی کے حالیہ دورہ سرینگر سے اس بات کی تصدیق ہوئی ہے چونکہ مودی کے دورے کے دوران وادی میں مکمل شٹرڈاون رہا شاہ محمود قریشی نے برطانوی ممبران اف پارلیمنٹ کو خراج تحسین پیش کیا جنھوں نے کشمیر کانفرنس کو کامیاب بنانے میں اہم کردار ادا کیا صحافی کے اس سوال پر کہ لارڈ نزیر احمد نے پارلیمنٹ میں موجود ہونے کے باوجود کشمیر کانفرنس میں شرکت نہیں کی شاہ محمود قریشی نے کہا کہ لارڈ نذیر احمد کی پاکستان اور کشمیر کے لئے خدمات کو ناقابلِ فراموش ہیں اور کہا کہ وہ ان سے بزات خود رابطہ کریں گے ایک اور سوال کے جواب میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ اقوام متحدہ کی جون 2018 میں کشمیر سے متعلق رپورٹ کا فالو اپ دیگر ممالک میں بھی کیا جائے گا برسلز یورپین یونین کے ہیڈ کوارٹر میں فروری کے آخر میں ایک پبلک ہیرنگ کانفرنس منعقد ہو گئی شاہ محمود قریشی نے لارڈ قربان حسین کو زبردست خراج تحسین پیش کیا جنھوں نے کشمیر کانفرنس کے اختتام پر ایک قرار داد منظور کروائی صحافی کے اس سوال پر کہ ماضی میں خود ایک جماعت کے خلاف نعرے لگوائے گئے کہ موددی کا جو یار ہے غدار ہے غدار ہے کشمیر کی تحریک کو نقصان پہنچایا گیا شاہ محمود قریشی نے جواب دیا کہ صحافی کے سوال میں وزن شاید ہوگا لیکن خداراہ یوم اظہارِ یکجہتی کے دن پر قوم کو اکٹھا ہونے دیں پاکستان ہائی کمیشن نے جب بھی پریس کانفرنس ہوتی ہے تو پریس اتاشی سٹیچ سیکرٹری کا رول ادا کرتے ہیں لیکن اس دفعہ روایت سے ہٹ کر فارن آفس کے ترجمان ڈاکٹر فیصل نے سوالات لئے، پریس کانفرنس کے دوران ہال صحافیوں سے کچھا کھچ بھرا ہوا تھا ایک ایک میڈیا ہاوس کے پانچ پانچ چھ چھ نمائیندے تھے رش اور بھیڑ کی وجہ سے کئی ورکنگ جرنلسٹ سوال پوچھنے سے محروم رہے جن میں اوصاف لندن کے ایڈیٹر اعجاز اقبال، دی نیشن کے ایڈیٹر انچیف محمد سرور بھی شامل تھے بعض میڈیا نمایندگان کی کوشش ہوتی ہے کہ وہ اگلی کرسی پر ہرصورت براجمان ہوں اس دفعہ دیر سے پہنچنے پر وہ کرسیاں پکڑ کر راستے میں بیٹھ گئے شاہ محمود قریشی جب جانے لگے تو راستہ تنگ ہونے کی وجہ سے منہ کے بل گرتے گرتے بچ گئے اور کسی کے ساتھ تصویر نہیں بنوائی جب سے تحریک انصاف کی جب سے حکومت آئی ہے کل پہلی بار کھانا پاکستان ہائی کمیشن میں تقسیم ہوا۔