مقبول خبریں
برادری ازم پر یقین رکھتے ہیں اور نہ علاقائی تعصب پر اہلیت کی بنیاد پر ڈاکٹر شاہد کی حمائت کر رہے ہیں
اسلام میں جسطرح خدمت انسانی کی حوصلہ افزائی کی گئی اسکی مثال نہیں ملتی: الصف چیریٹی کی امدادی تقریب
لالچی اور خودغرض ٹور آپریٹرز ں نے اللہ کے مہمانوں سے لوٹ کھسوٹ کا بازار گرم کر رکھا ہے
احتجاج کرنیوالے وزیر اعظم ہائوس آ کر مذاکرات کریں، نواز شریف
کشمیریوں نے بھارت کو بتا دیا وہ جدو جہد آزادی سے پیچھے نہیں ہٹیں گے،علی گیلانی
شیراز خان کی برطانیہ واپسی پر چیئرمین سلطان باہو پیر نیازالحسن سروری قادری کی والدہ کی وفات پر تعزیت
کشمیری اس امر پر متفق ہیں کہ ووٹ انہی کو دیا جائے گا جوحق خود ارادیت کی حمائت کرتے ہیں:کونسلر محبوب بھٹی
برطانیہ میں مقیم کمیونٹی پاکستان سے بے پناہ محبت کرتی ہے، . لارڈ میئر بریڈفورڈکا چھچھ ایسوسی ایشن تقریب سے خطاب
حکومت پنجاب کا اوورسیز کمشنر آفس
پکچرگیلری
Advertisement
میرے والدین میں علیحدگی سے دونوں کو ہی فائدہ ہوا، میگھنا
ممبئی...بالی ووڈ کے معروف نغمہ نگار اور فلم سازگلزار کو بھارتی سینما کے سب سے باوقار اعزاز دادا صاحب پھالکے ایوارڈ سے نوازا جا رہا ہے ۔اس حوالے سے گلزار کی صاحبزادی اور فلمساز میگھنا گلزارنے کہا کہ انکے والدین کی علیحدگی دونوں کیلئے بہتر تھی۔گلزار اپنی بیٹی میگھنا کو پیار سے ’’بوسکی‘‘ پکارتے ہیں، بوسکی کا مطلب نرم و نازک ہوتا ہے ۔میگھنا نے اپنے والد کے بارے میں کہا کہ پاپا بہت ہی حساس انسان ہیں۔ انکی نزاکت، انکی نرمی انکے ہر کام میں جھلکتی ہے ۔ ان کے گیتوں میں وہی نرمی گنگناتی ہے ۔گلزار نے 60 اور 70 کی دہائی کی مشہور اداکارہ راکھی سے شادی کی تھی لیکن دونوں کے درمیان جلد ہی اختلافات پیدا ہو گئے اور پھر دونوں علیحدہ رہنے لگے ۔میگھنا سے جب اس بارے میں پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ اچھا ہی ہوا کہ دونوں الگ ہو گئے ۔ کیونکہ اختلافات ہونے کے باوجود ساتھ رہنے سے اچھا ہے سکون کے ساتھ الگ الگ رہنا۔ دونوں نے اپنی تنہائی کو کام سے بھر لیا ہے ۔